ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش اسمبلی کا سرمائی اجلاس ملتوی ، کورونا قہر کے سبب کل جماعتی میٹنگ میں لیا گیا فیصلہ

کل جماعتی میٹنگ میں اسمبلی سیشن کو ملتوی کئے جانے کے بعد بی جے پی اور کانگریس دونوں پارٹیوں نے اپنے اپنے ممبران اسمبلی کے ساتھ میٹنگ کی اور آئندہ کی سیاسی حکمت عملی کو طے کیا ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش اسمبلی کا سرمائی اجلاس ملتوی ، کورونا قہر کے سبب کل جماعتی میٹنگ میں لیا گیا فیصلہ
مدھیہ پردیش اسمبلی کا سرمائی اجلاس ملتوی ، کورونا کے سبب کل جماعتی میٹنگ میں لیا گیا فیصلہ

کورونا قہر کے سبب کل سے شروع ہونے والے مدھیہ پردیش اسمبلی کے سرمائی اجلاس کو ملتوی کردیا گیا ہے۔ سرمائی اجلاس سے پہلے اسمبلی اسپیکر رامیشور شرما کے ذریعہ کل جماعتی میٹنگ اسمبلی میں بلائی گئی تھی ۔ کل جماعتی میٹنگ میں اتفاق رائے سے اسمبلی کے سہ روزہ سرمائی اجلاس کو اتفاق رائے سے ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ واضح رہے کہ مدھیہ پردیش اسمبلی کے سرمائی اجلاس کا اعلان حکومت کے ذریعہ ایک ماہ قبل کیا گیا تھا۔ کورونا قہر میں ہونے والے اسمبلی کے سرمائی اجلاس میں ممبران اسمبلی کے بیٹھنے اور میٹنگ کو لیکر بہت محتاط انداز میں حکومت کے ذریعہ تیار کی جارہی تھی ، مگر عین اسمبلی اجلاس سے دو روزہ قبل اسمبلی سکریٹرٹ کے 77 ملازمین میں سے 59 ملازمین کی رپورٹ کورونا پازیٹبو آنے کے بعد سبھی کے ہوش اڑ گئے ۔ یہی نہیں گزشتہ دو دونوں میں بی جے پی اور کانگریس کے دس ممبران اسمبلی کی کورونا رپورٹ بھی پازیٹبو آنے کے بعد کل جماعتی میٹنگ میں اتفاق رائے سے اسمبلی سیشن کو ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ۔


مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ دس ممبران اسمبلی کورونا پازیٹبو ہوچکے ہیں ۔ اسمبلی سکریٹریٹ کے ملازمین بھی بڑی تعداد میں کورونا پازیٹبو ہوئے ہیں ۔ اس لئے کل جماعتی میٹنگ میں اتفاق رائے سے اسمبلی سیشن کو ملتوی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ اب سیدھے اسمبلی کے بجٹ سیشن کا انعقاد ہوگا ۔ سرکار اسمبلی سیشن میں لو جہاد قانون کا بل پیش کرنا چاہتی تھی مگر اسمبلی سیشن ملتوی ہونے کے سبب اب یہ تو ممکن نہیں ہے ، مگر سرکار اپنے وعدے پر قائم ہے اور اب لوجہاد کو روکنے کے لئے سرکار آرڈیننس لائے گی ۔


وہیں ایم پی پی سی چف کمل ناتھ کا کہنا ہے کہ ضابطے کے ذریعہ نظم و نسق بنانے پر اپوزیشن راضی ہے ۔ اسمبلی کی کمیٹیوں کو بنانے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔ اپوزیشن کی آواز کو دبانے کی کوشش ہوگی تو اسے کسی  بھی صورت برداشت نہیں کیا جا سکتا ہے ۔


کل جماعتی میٹنگ میں اسمبلی سیشن کو ملتوی کئے جانے کے بعد بی جے پی اور کانگریس دونوں پارٹیوں نے اپنے اپنے ممبران اسمبلی کے ساتھ میٹنگ کی اور آئندہ کی سیاسی حکمت عملی کو طے کیا ۔ پی سی سی چیف کمل ناتھ نے کانگریس ممبران اسمبلی کو کل جماعتی میٹنگ کے فیصلہ سے روشناس کرایا ۔ وہیں کل ہونے والے کانگریس کے احتجاج کو بھی جاری رکھنے کا بھی اعلان کیا گیا ۔

مدھیہ پردیش میں کسان آندولن کے روح رواں سینئر کانگریس لیڈر وسابق ایم پی پی سی سی چیف ارون یادو کا کہنا ہے کہ کانگریس اور کسانوں کے احتجاج سے خوفزدہ ہوکر حکومت نے اسمبلی کا سرمائی اجلاس ملتوی  کیا ہے ۔ زرعی قانون اور کسانوں کے حقوق کو لیکر کانگریس کا احتجاج ہوگا ۔ حکومت احتجاج کے ملتوی کرنے کو لیکر سازش کر رہی ہے ۔ میری مدھیہ پردیش کے سبھی لوگوں سے اپیل ہے کہ وہ  زرعی قانون اور کسانوں کی حمایت میں کل اپنے ٹریکٹر اور بیل گاڑی کے ساتھ بھوپال پہنچیں ۔ ہمارا احتجاج تب تک جاری رہے گا ، جب تک حکومت سیاہ زرعی قانون کو واپس نہیں لیتی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Dec 27, 2020 10:42 PM IST