ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : کورونا قہر میں روز گار شروع کرنے کیلئے مالی مدد ، ایسوسی ایشن آف انڈین مسلمس نے اٹھایا بڑا قدم

ایسوسی ایشن آف انڈین مسلمس کے صدر اویس عرب کہتے ہیں کہ کورونا قہر میں ہم نے سبھی کی مشکلات کو بہت قریب سے دیکھا ہے ۔ سوسائٹی اور شہر کے مخیر حضرات کے ساتھ میٹنگ کرکے یہ طے کیا گیا کہ ایسے لوگ جن کا کاروبار مالی مشکلات سے بند ہوگیا ہے اور ان کی مدد کرنے سے کاروبار دوبارہ شروع ہو سکتا ہے تو ان کی مدد کی جائے ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : کورونا قہر میں روز گار  شروع کرنے کیلئے مالی مدد ، ایسوسی ایشن آف انڈین مسلمس نے اٹھایا بڑا قدم
مدھیہ پردیش : کورونا قہر میں روز گار شروع کرنے کیلئے مالی مدد ، ایسوسی ایشن آف انڈین مسلمس نے اٹھایا بڑا قدم

بھوپال : کورونا قہر میں مالی مشکلات کے سبب کاروبار بند کرنے والوں کی ایک بڑی تعداد موجود ہے ۔ ایسے لوگوں کسی ایک ریاست میں نہیں بلکہ ملک کی سبھی ریاستوں میں موجود ہیں ، لیکن ایسے لوگوں کو کاروبار شروع کرنے کے لئے مالی مدد فراہم کرنے کیلئے کوئی تیارنہیں ہے ۔ ایسوسی ایشن آف انڈین مسلمس نے بھوپال میں ایک بڑا قدم اٹھاتے ہوئے ان لوگوں کو مالی مدد فراہم کرنے کا سلسلہ شروع کیا ہے ، جن کے کاروبار کورونا قہر میں بند ہوگئے ہیں اور مالی مشکلات ان سے اس طرح دامن  گیر ہوگئی ہے کہ اپنے بھی ان سے دامن بچا کر گزرتے ہیں ۔


ایسوسی ایشن آف انڈین مسلمس کے صدر اویس عرب کہتے ہیں کہ کورونا قہر میں ہم نے سبھی کی مشکلات کو بہت قریب سے دیکھا ہے ۔ سوسائٹی اور شہر کے مخیر حضرات کے ساتھ میٹنگ کرکے یہ طے کیا گیا کہ ایسے لوگ جن کا کاروبار مالی مشکلات سے بند ہوگیا ہے اور ان کی مدد کرنے سے کاروبار دوبارہ شروع ہو سکتا ہے تو ان کی مدد کی جائے ۔ خدا کا شکرہے کہ ڈھائی سو لوگوں کے ذریعہ سابقہ مہینے میں جو فنڈ جمع ہوا تھا اس کو تقسیم کیا گیا اور اس ماہ میں بھی جو فنڈ جمع ہوا تھا اس سے اب تک سترہ لوگوں کی مدد کی گئی ہے ۔ تاکہ وہ کسی کے سامنے ضروریات زندگی کے لئے ہاتھ نہ پھیلائیں ، بلکہ خودکفیل بنیں اور پھر دورسروں کی بھی اس طرح مدد کریں۔ یہ سلسلہ آگے بھی جاری رہے گا ۔ ہماری کوئی حیثیت نہیں ہے ، اللہ ہم سے کام لے رہا ہے اور ہم کام کر رہے ہیں ۔


سید محمد علی کہتے ہیں کہ کورونا سے قبل چھوٹا موٹا کاروبارکرکے اپنا اور اپنے گھر والوں کی کفالت کرتا تھا ، مگر کورونا قہر میں سب برباد ہوگیا ۔ سوسائٹی نے کارباور شروع کرنے کے لئے چیک دیا ہے ۔ ان شا اللہ میں اس مدد سے اپنا کاروبار دوبارہ شروع کر سکوں گا ۔ کورونا قہر میں جہاں اپنے خاص اور رشتے والوں نے ہماری مالی تنگی کو دیکھتے ہوئے منھ پھیر لیا تھا تو وہیں سوسائٹی نے بڑا قدام اٹھایا اور مجھے بلا کر مدد کی ہے ۔


محمد عمران عثمانی کہتے ہیں کہ کورونا قہر میں جہاں ساری امیدیں ختم ہو چکی تھیں ، وہیں انجانے لوگوں کے ذریعہ ایسی بھی مدد آئے گی اس کا تو کبھی تصور بھی نہیں کیا تھا۔ اب میں اپنا پھلوں کا کاربار دوبارہ شروع کر سکوں گا اور کوشش کروں گا کہ جس طرح سے سوسائٹی نے میری مدد کی ہے میری دوسرے بھائیوں کی مدد کرسکوں ۔

پروگرام میں بطور مہمان خصوصی شرکت کرنے آئے بھوپال شہر قاضی سید مشتاق علی ندوی کہتے ہیں کہ حلال رزق میں اللہ نے بڑی برکت رکھی ہے ۔ یہاں ہم لوگ اس لئے جمع ہوئے ہیں تاکہ مشکل وقت میں ایک دوسرے کے معاون بنیں ۔ ہم ہاتھ پھیلانے والے نہیں بلکہ مدد کرنے والے بنیں ۔ لوگوں کو خود کفیل بنانے کا سلسلہ  جوشروع کیا گیا ہے وہ قابل ستائش ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 22, 2021 09:24 PM IST