உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    MP News: تعلیم اور تربیت سے مسلم کمیونٹی میں پیدا کیا جا سکتا ہے انقلاب

    MP News: تعلیم اور تربیت سے مسلم کمیونٹی میں پیدا کیا جا سکتا ہے انقلاب

    MP News: تعلیم اور تربیت سے مسلم کمیونٹی میں پیدا کیا جا سکتا ہے انقلاب

    Bhopal News: مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں سماجی تنظیم بی بی ایم اور ایس بی ایم کے زیر اہتمام گرمیوں کی چھٹی میں اقلیتی طلبا کی پرسنالٹی ڈیولپمنٹ اور اسپوکن انگلش کے لئے چلائی گئی مفت کوچنگ کلاس کے بہترین نتائج سامنے آئے رہے ہیں ۔

    • Share this:
    بھوپال : مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں سماجی تنظیم بی بی ایم اور ایس بی ایم کے زیر اہتمام گرمیوں کی چھٹی میں اقلیتی طلبا کی پرسنالٹی ڈیولپمنٹ اور اسپوکن انگلش کے لئے چلائی گئی مفت کوچنگ کلاس کے بہترین نتائج سامنے آئے رہے ہیں ۔ سوسائٹی کے زیر اہتمام ابتدائی طور پر سو طلبا کے لئے پرسنالٹی ڈیولپمنٹ اور اسپوکن انگلش پروگرام کو شروع کیا گیا تھا۔ ابتداء میں تو لوگوں نے اس کی جانب رجحان نہیں کیا لیکن جب اس کی افادیت سے لوگ واقت ہوئے تو گرمیوں کی چھٹی میں چلائی گئی مفت کوچنگ میں تعلیم حاصل کرنے والوں کی ایک بھیڑ جمع ہوگئی ۔ سو سائٹی کے ذریعہ ماہرین تعلیم کے ذریعہ اقلیتی طلبا کو اسپوکن انگلش کے ساتھ پرسنالٹی ڈیولپمنٹ کی تربیت دی گئی جسے طلبا مسلم سماج کے لئے بیک بون سے تعبیر کیا ۔

    واضح رہے کہ برادر ہڈ بائی مائناریٹیز اور سسٹر ہڈ بائی مائناریٹیز کا قیام سابقہ سالوں میں اس لئے عمل میں آیاتھا تاکہ مسلم مرد و خواین میں یکساں طور پر تعلیمی بیداری پیدا کی جا سکے ۔کورونا قہر میں بھی سوسائٹی کے ذریعہ سماجی خدمت کا مثالی کارنامہ انجام دیا گیا ۔ بی بی ایم کے کنوینر شعیب ہاشمی کا کہنا ہے کہ سماج کی تعلیمی اور سماجی ترقی کے لئے نوجوانوں کی ایک پوری ٹیم ہے جو باہمی اتفاق کے ساتھ کام کرتی ہے ۔عام طور پر گرمیوں کی چھٹی میں مسلم طلبا کے پاس کوئی کام نہیں ہوتا ہے اور پوری چھٹیاں یوں ہی گھومنے میں برباد ہوجاتی ہیں ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: ادب کے میدان میں پرواز کیلئے ملا نیا آسمان، تلاش جوہر پروگرام کے تحت ادبی سلسلہ شروع


    ایسے میں سو سائٹی نے فیصلہ کیا کہ کووڈ قہر میں جہاں لوگ نفسیاتی طور پر دباؤ  کا شکا ہے ان کی کونسلنگ کے ساتھ اقلیتی طلبا کی پرسنالٹی ڈیولپمنٹ اور اسپوکن انگلش کی مفت کوچنگ کی جائے تاکہ گرمی کی چھٹیوں کا صحیح استعمال بھی ہو سکے ۔ہمیں خوشی ہے کہ سوسائٹی نے ہم پر اعتبار کیا اور ہمارے ذریعہ شروع کی گئی کلاس میں نہ صرف طلبا و طالبات آئے بلکہ وہ خواتین بھی آئیں جن کے بچے ہیں ۔ ہمیں بتاتے ہوئے خوشی ہو رہی ہے کہ مسلم معاشرے میں تعلیم کے حصول کو لیکر رجحان بدل رہا ہے ۔ اور یہ بہترین علامت ہے ۔

    وہیں پروگرام کے مہمان خصوصی یاسر عرفات نے پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلام میں روز اول سے اقرا کے ذریعہ تعلیم کی اہمیت وافادیت بتا دی گئی ہے ۔ ہمیں خوشی ہے کہ بی بی ایم کے ذریعہ ایک مثالی قدم اٹھایا گیا اور اس کی جتنی بھی ستائیش کی جائے کم ہے۔

    وہیں پروگرام میں مہمان اعزازی کے طور پر شریک ماہر تعلیم نیرج تیواری نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ جس سماج میں خواتین تعلیم کے حصول کے لئے آگے نکل پڑتی ہیں اس سماج کو ترقی کی راہ پر جانے سے کوئی روک نہیں سکتا ہے ۔ بہت سی ایسی خواتین نے بھی کوچنگ میں شرکت کی اور اسپوکن انگلش کو سیکھا  تاکہ وہ اپنےبچوں کو بہتر ڈھنگ میں پڑھا سکیں ۔ مسلم سماج کی تعلیم کے لئے یہ اسپرٹ قابل تقلید ہے ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: تعلیم حاصل کرنے بھوپال جا رہے مدرسہ کے 10 بچوں کو چائلڈ ویلفیئر سینٹر بھیج دیا گیا


    یہاں یہ بات قابل ذکر ہے کہ بی بی ایم اور ایس بی ایم کے ذریعہ گرمیوں کی چھٹی میں پرسنالٹی ڈیولپمنٹ کو لیکر جو مفت کوچنگ شروع کی گئی اور اس میں جن طلبا نے مقابلہ میں بہترین فن کا مظاہرہ کیا انہیں سرٹیفکیٹ سے نوازہ گیا ۔طالبہ صالحہ نور کہتی ہیں کہ ہم نے مہینے بھر کی مفت کوچنگ میں پرسنالٹی ڈیولپمنٹ کو لیکر جو کچھ سیکھا ہے اور اسپوکن انگلش میں جس طرح سے روانی پیدا ہوئی ہے اس سے پہلے کبھی نہیں تھی ۔ہماری تو خواہش ہے کہ یہ سلسلہ یوں ہی چلتا رہے اور طلبا اس سے استفادہ کرتے رہیں ۔طالبہ بشری خان کہتی ہیں کہ اقلیتی طلبا میں صلاحیت کی کمی نہیں ہے بس انہیں صحیح رہنمائی کی ضرورت ہے ۔

    اسی طرح سے قوم کے لوگ تعلیمی بیداری کے لئے قدم اٹھاتے رہیں تو قوم سے وہ گوہر نایاب پیدا ہونگے جن پر ملک اور قوم دونوں کو فخر ہوگا۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: