உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    MP News: اقبال میدان کے تحفظ کو لے کر مدھیہ پردیش جمعیت علما نے کھولا مورچہ

    MP News: اقبال میدان کے تحفظ کو لے کر مدھیہ پردیش جمعیت علما نے کھولا مورچہ

    MP News: اقبال میدان کے تحفظ کو لے کر مدھیہ پردیش جمعیت علما نے کھولا مورچہ

    Bhopal Iqbal Maidan Controversy : بھوپال کے تاریخی اقبال میدان کا نام بدلنے کا تنازع روز بروز مزید شدت اختیار کرتا جا رہا ہے ۔ بی جے پی لیڈر سریندر شرما کے ذریعہ اقبال میدان کا نام بدلنے کو لیکر سی ایم کو خط لکھے جانے کے بعد یہ تنازع مزید طول پکڑتا جا رہا ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Madhya Pradesh | Bhopal | Bhopal
    • Share this:
    بھوپال : بھوپال کے تاریخی اقبال میدان کا نام بدلنے کا تنازع روز بروز مزید شدت اختیار کرتا جا رہا ہے ۔ بی جے پی لیڈر سریندر شرما کے ذریعہ اقبال میدان کا نام بدلنے کو لیکر سی ایم کو خط لکھے جانے کے بعد یہ تنازع مزید طول پکڑتا جا رہا ہے ۔ ادبی انجمنوں کے بعد اب مدھیہ پردیش جمیعت علما نے اس معاملہ میں اپنے سخت موقف کا اظہار کرتے ہوئے حکومت سے اقبال میدان کا نام بدلنے کا مطالبہ کرنے والوں کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ جمعیت علما کا ماننا ہے کہ اقبال کا کلام نہ صرف حب الوطنی کا آئینہ دار ہے، بلکہ انہوں نے بھگوان رام، بھرتری ہری، گرونانک جی پر جو تاریخی نظمیں لکھیں، وہ اقبال کی حب الوطنی کا ہر قدم پر ثبوت دیتی ہیں ۔ جمیعت علما کے ذریعہ نہ صرف اقبال میدان کے تحفظ کے لئے تحریک چلائی جائے گی بلکہ اقبال پر بھوپال میں قومی سمینار کا انعقاد بھی کیا جائے گا ۔ تاکہ جن لوگوں کو ان کی حب الوطنی پر شک وشبہات ہیں وہ دور ہوسکیں۔

     

    یہ بھی پڑھئے: صرف 9 روپے میں کریں انٹرنیشنل ہوائی سفر! Vietjet دے رہی دھماکہ آفر


    نیوز 18 اردو سے بات کرتے ہوئے مدھیہ پردیش جمیعت علما نے کہا کہ اقبال جیسا جہاں دیدہ شاعر بڑی مشکل سے پیدا ہوتا ہے۔ اقبال اور ان کے کلام کو سرحد کے دائرے میں رکھ کر نہیں دیکھا جا سکتا ہے ۔ انہوں نے بھگوام رام کو امام الہند کہا ہے ۔ یہ کوئی چھوٹی بات نہیں ہے ۔ سارے جہاں سے اچھا ہندستاں ہمارا کا گیت اقبال نے ہی لکھا ہے جسے گاتے ہوئے ہر ہندستانی کا سینا فحر سے اونچا ہوجاتا ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے: یو اے ای کی شہزادی نےغزہ پٹی پر اسرائیلی فضائی حملوں کے خلاف اٹھائی آواز!


    جو لوگ اقبال پر الزام تراشی کر رہے ہیں وہ نہ تو اقبال کے کلام سے واقف ہیں اور نہ ہی انہوں نے کلام اقبال کا مطالعہ کیا ہے ۔ ہم تو حکومت سے مانگ کرتے ہیں کہ ایسے عناصر جو ملک اور سماج میں منافرت پیدا کر رہے ہیں ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ۔ اقبال بھوپال میں رہے ہیں اور انہوں نے بھوپال میں رہ کر تاریخی اہمیت کی چودہ نظمیں بھی لکھی ہیں۔ خود مدھیہ پردیش حکومت کا اقبال مرکزاور اقبال ایوارڈ ہے ۔

    ہم نہ صرف بی جے پی لیڈر کے اس قدم کی مذمت کرتے ہیں، بلکہ اقبال میدان کے تحفظ کو لیکر تحریک بھی چلائیں گے ۔ ساتھ ہی بہت جلد اقبال کی حب الوطنی پر قومی سمینار کا انعقاد بھی کریں گے ۔ تاکہ لوگوں کے سامنے سچائی آسکے اور جو کچھ لوگوں میں شک و شبہات ہیں وہ دور ہوسکیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: