உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Bhopal News : ممتاز ادیب نعیم کوثر اور دیوی سرن کو با وقار شکھر سمان سے کیا گیا سرفراز

    Bhopal News : ممتاز ادیب نعیم کوثر اور دیوی سرن کو با وقار شکھر سمان سے کیا گیا سرفراز

    Bhopal News : ممتاز ادیب نعیم کوثر اور دیوی سرن کو با وقار شکھر سمان سے کیا گیا سرفراز

    Madhya Pradesh News : مدھیہ پردیش محکمہ ثقافت کے زیر اہتمام بھوپال بھارت بھون میں منعقدہ تقریب میں اردو زبان و ادب کے ساتھ ہندی ، سنسکرت، ڈرامہ ، آرٹ وموسیقی کے میدان میں نمایاں کام کرنے والی ممتاز شخصیات کو با وقار شکھر سمان سے سرفراز کیا گیا۔

    • Share this:
    بھوپال : مدھیہ پردیش محکمہ ثقافت کے زیر اہتمام بھوپال بھارت بھون میں  منعقدہ تقریب میں اردو زبان و ادب کے ساتھ ہندی ، سنسکرت، ڈرامہ ، آرٹ وموسیقی کے میدان میں نمایاں کام کرنے والی ممتاز شخصیات کو با وقار شکھر سمان سے سرفراز کیا گیا۔ اردو زبان و ادب میں نمایاں خدمات کے لئے دوہزار انیس کے شکھر سمان سے نعیم کوثر کو اور دوہزار بیس کے شکھر سمان سے دیوی سرن کو سرفراز کیا گیا۔ اسی طرح ہندی ادب میں نمایاں خدمات کے لئے شیوال ستیارتھی گوالیار ہری جوشی بھوپال کو  شکھرسمان سے سرفراز کیا گیا۔ سنسکرت ادب میں نمایاں خدمات کے لئے رامیشور پرساد گپت اور پروفیسر رہس بہاری دیویدی کو شکھر سمان سے سرفراز کیا گیا۔ شاستری سنگیت میں نمایاں خدمات کے لئے پربھاکر لکشمن اور سجن لال برہم بھٹ ، روپانکر کلاؤں میں نمایاں خدمات کے لئے دیوی لال پاٹیدار اور منیش پشکلے کو، ویشالی گپتا اور کے جی ترویدی کو ناٹک کے میدان میں، جن جاتیہ لوک کلاؤں میں نمایاں خدمات کے لئے اگنیش کیرکٹا اورپورنیما چترویدی کو، نایاب سازوں کی موسیقی کے لئے بابو لال بھولا اورڈاکٹر ورشا اگروال کو شکھر سمان سے سرفراز کیا گیا۔

    ممتاز ادیب نعیم کوثر کہتے ہیں کہ یہ اعزاز صرف میرا ہی نہیں بلکہ میرے ان تمام  ریڈرس کے نام ہے ، جو ساٹھ سال سے مجھے پڑھتے آرہے ہیں ۔ اور یہ میرے لئے باعث فخر ہے کہ میری تحریروں کو تسلیم کیا گیا ہے اور یہ بات بھی میرے لئے باعث فخر ہے کہ میرے والد  کوثر چاند پوری ساٹھ  افسانوی کتابوں کے مصنف ہیں لیکن انہیں بھی اس طرح کا اعزاز نہیں ملا ہے ۔ میرے یہ بہت فخر کی بات ہے اور حکومت نے ہندی سنسکرت کے ساتھ اردو زبان و ادب کے خدمت کرنے والوں کو بھی اسی انداز میں سرفراز کیا ہے ۔

    ممتاز دیوی سرن کہتے ہیں کہ میں نے اپنی تحریروں میں بھوپال کے ان لوگوں کا ذکر کیا ہے ، جنہوں نے اپنی تحریروں کے ایک نشان چھوڑے ہیں جن پر ہم بھوپال کے لوگوں نے چل کر ادب کی زمین کو ہموار کیا ہے ۔ میری تحریروں کو حکومت کی سطح پر ریکگنائز کیا گیا ہے ، اس کے لئے میں حکومت اور محکمہ ثقافت کا شکریہ ادا کرتا ہوں ۔ میرے تعلیم بھوپال میں ہوئی اور ریاستی عہد میں اردو اور فارسی کی تعلیم سے میں نے اپنے تعلیمی سفر کا آغاز کیا تھا ۔ اردو کے لئے اسی فضا کو سازگار کرنے کی پھر ضرورت ہے ۔

    مدھیہ پردیش محکمہ ثقافت کی وزیر اوشا ٹھاکر نے پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے شکھر سمان اور کالیداس سمان سے سرفراز کئے گئے سبھی ممتاز شخصیات کو مبارک باد پیش کی ۔ ہمارے لئے فخر کی بات ہے کہ حکومت کے باوقار اعزاز کو قلم اور کلا کے سپاہیوں نے تسلیم کیا ہے اور اس سے مدھیہ پردیش کے وقار میں اضافہ کیا ہے ۔ مدھیہ پردیش حکومت نے ہمیشہ زبان ، ادب ، ثقفت ، ڈرامہ ، آرٹ ، موسیقی کا ہمیشہ تحفظ کیا ہے ۔ یہ بھارت بھون کی چالیسویں سالگرہ ہے اور میں آپ سب کو یقین دلانا چاہتی ہوں کہ ہم شلپ گرام کا آغاز بہت جلد کریں گے اور رنگ منڈل کو دوبارہ شروع کریں گے اس کی بھی میں دہانی کراتی ہوں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: