ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

نیوز 18 اردو کی تحریک لائی رنگ ، شیوراج سنگھ کابینہ نے گیس متاثرہ بیوہ خواتین کی پینشن کو کیا جاری

نیوز 18 اردو کی خبر کے بعد شیوراج سنگھ حکومت نہ صرف بیدار ہوئی بلکہ اس نے کابینہ میٹنگ میں ساڑھے چارہزار گیس متاثرہ بیوہ خواتین کی تاحیات پینشن جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

  • Share this:
نیوز 18 اردو کی تحریک لائی رنگ ، شیوراج سنگھ کابینہ نے گیس متاثرہ بیوہ خواتین کی پینشن کو کیا جاری
نیوز 18 اردو کی تحریک لائی رنگ ، شیوراج سنگھ کابینہ نے گیس متاثرہ بیوہ خواتین کی پینشن کو کیا جاری

بھوپال : شیوراج سنگھ کابینہ نے نیوز 18 اردو کی خبر پر مہر لگادی ہے ۔ نیوز 18 اردو نے دس جولائی کو بھوپال گیس سانحہ متاثرہ بیوہ خواتین کے مسائل اور ان کی پینشن کو لیکر تفصیلی رپورٹ پیش کی تھی ۔ نیوز 18 اردو کی خبر کے بعد شیوراج سنگھ حکومت نہ صرف بیدار ہوئی بلکہ اس نے کابینہ میٹنگ میں ساڑھے چارہزار گیس متاثرہ بیوہ خواتین کی تاحیات پینشن جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔


واضح رہے کہ بھوپال میں دو اور تین دسمبر 1984 کی درمیانی رات کو گیس سانحہ پیش آیاتھا۔ بھوپال گیس سانحہ میں اس رات 15 ہزار 273 لوگوں کی موت ہوئی تھی جبکہ پانچ لاکھ تیہتر ہزار دو سو چوہتر لوگ زخمی ہوئے تھے۔ گیس سانحہ میں بہت سی ایسی خواتین بھی تھی جن کا سب کچھ حادثہ میں برباد ہوگیا تھا۔ گیس سانحہ کی بیوہ خواتین کے لئے کانگریس حکومت میں پنشن جاری کی گئی تھی جسے اپریل دوہزار سولہ میں شیوراج سنگھ حکومت نے بند کردیا تھا۔ گیس متاثرہ بیوہ خواتین نے اپنے حقوق کو لیکر مسلسل احتجاج کیا اور آخر کار بیس ماہ بعد شیوراج سنگھ حکومت نے دوبارہ پیشن جاری کی۔


تاہم یہ پینشن زیادہ دن جاری نہیں رہ سکی ۔ حکومت کی دوہزار اٹھارہ میں تبدیلی ہوئی اور دوہزار انیس میں کمل ناتھ حکومت نے پھر گیس متاثرہ بیوہ خواتین کی پینشن کو بند کردیا ۔ بیوہ خواتین نے تین دسمبر دوہزار بیس کو گیس سانحہ کی چھتیسویں برسی پر جب وزیر اعلی شیوراج سنگھ سے ملاقات کی تو انہوں نے پینشن کو دوبارہ جاری کرنے کا اعلان تو کیا ، لیکن حکومت اپنے اعلان کو ہی بھول گئی ۔ نیوز 18 اردو کے ذریعہ اس معاملہ پر دس جولائی کو جب تفصیلی رپورٹ پیش کی گئی تو حکومت پھر بیدار ہوئی اور آج بھوپال منترالیہ میں منعقدہ میٹنگ میں گیس متاثرہ ساڑھے چار ہزار بیوہ خواتین کو تاحیات پینشن جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔


وزیر داخلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ حکومت نے گیس متاثرہ بیوہ خواتین کو تاحیات ایک ہزار روپے ماہانہ پینشن جاری کرنے کا  تاریخی فیصلہ کیا ہے ۔ حالانکہ محکمہ مالیات نے گیس متاثرہ بیوہ خواتین کی  پینشن پر روک لگائی تھی اس کے باوجود وزیر اعلی شیوراج سنگھ نے اپنے اعلان پر عمل کرتے ہوئے تاحیات پینشن جاری کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔

وہیں حکومت کے فیصلہ کو گیس متاثرین ادھورے فیصلہ سے تعبیر کرتے ہیں ۔ گیس متاثرین کے لئے کام کرنے والی سماجی تنظیم بھوپال گروپ فار ایکشن اینڈ انفارمیشن کی سکریٹری رچنا ڈھینگرا کہتی ہیں کہ اس فیصلہ میں حکومت نے جو بندشیں لگائی ہیں ، اس سے صرف ساڑھے چار ہزار خواتین کو ہی فائدہ ملے گا اور وہ بھی اپریل دوہزار اکیس کے بعد ۔ کورونا قہر میں گیس متاثرہ بیوہ خواتین کیسے زندگی گزاری ہے ، حکومت کو اس کی فکر نہیں ہے اور بیس ماہ سے جو پینشن رکی ہوئی تھی اس کا ایریر بھی نہیں دیا جائے گا۔ حکومت کو چاہئے کہ اپنے فیصلہ پر نطر ثانی کرنے اور سبھی بیوہ خواتین کو اس زمرے میں شامل کرے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 13, 2021 08:59 PM IST