ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : کانگریس نے ریاست کو فوج کے حوالے کرنے کا کیا مطالبہ، دی یہ بڑی دلیل

مدھیہ پردیش کانگریس کے سینئر لیڈر و سابق وزیر پی سی شرما کہتے ہیں کہ شیوارج سنگھ حکومت کورونا قہر میں مسلسل جھوٹ بول کر عوام کو گمراہ کر رہی ہے ۔ اسپتالوں میں بیڈ نہیں ، آکسیجن کی کمی اور ریمڈیسور انجیکشن کی کالا بازاری سب کے سامنے ہے ۔ ریاستی حکومت ہیلتھ بلیٹن میں یومیہ طور پر کورونا سے جتنی اموات کو درج کررہی ہے ، اس سے زیادہ اموات صرف بھوپال میں ہو رہی ہیں ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : کانگریس نے ریاست کو فوج کے حوالے کرنے کا کیا مطالبہ، دی یہ بڑی دلیل
مدھیہ پردیش : کانگریس نے ریاست کو فوج کے حوالے کرنے کا کیا مطالبہ، دی یہ بڑی دلیل

بھوپال : مدھیہ پردیش میں حکومت ، انتظامیہ اور سماجی تنظیموں کی تمام کوششوں کے باوجود کورونا کا قہر جاری ہے۔ ریاست میں کورونا کے ایکٹو معاملات کی تعداد بانوے ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔ یومیہ طور پر کورونا کے نئے معاملوں کی تعداد بارہ ہزار سے زیادہ ہے ۔ اسپتالوں میں طبی سہولیات کے فقدان ،آکسیجن اور ریمڈیسور انجیکشن کی قلت ،دواؤں کی کالا بازاری کو دیکھتے ہوئے کانگریس نے مدھیہ پردیش کے نظام کو فوج کے حوالے کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ وہیں مدھیہ پردیش حکومت کا کہنا ہے کہ کورونا سے شفایابی کی شرح میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے اور ہم سبھی کی کوششوں سے بہت جلد حالات پر قابو پالیں گے ۔


مدھیہ پردیش کانگریس کے سینئر لیڈر و سابق وزیر پی سی شرما کہتے ہیں کہ شیوارج سنگھ حکومت کورونا قہر میں مسلسل جھوٹ بول کر عوام کو گمراہ کر رہی ہے ۔ اسپتالوں میں بیڈ نہیں ، آکسیجن کی کمی اور ریمڈیسور انجیکشن کی کالا بازاری سب کے سامنے ہے ۔ ریاستی حکومت ہیلتھ بلیٹن میں یومیہ طور پر کورونا سے جتنی اموات کو درج کررہی ہے ، اس سے زیادہ اموات صرف بھوپال میں ہو رہی ہیں ۔ یہ ہم نہیں کہہ رہے ہیں بلکہ بھوپال کے شمشان گھاٹ اور قبرستان میں کووڈ پرٹوکال کے تحت جن لوگوں کی آخری رسومات ادا کی جا رہی ہیں ، ان کے اعداد و شمار دیکھے جا سکتے ہیں ۔ حکومت دو دن سے کہہ رہی ہے کہ کورونا ریکوری ریٹ میں اضافہ ہو رہا ہے ، جبکہ سچ یہ نہیں ہے بلکہ سچ یہ ہے کہ حکومت نے ٹیسٹنگ کو کم کردیا ہے ۔ ہمارا تو مطالبہ ہے کہ مدھیہ پردیش کے نظام کو فوج کے حوالے کر دیا جائے نہیں تو یہ لوگ جھوٹ بول بول کر سبھی کا خاتمہ کردیں گے ۔


وہیں مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ کانگریس کے لوگوں کے پاس گھرمیں بیٹھ کر ٹویٹ کرنے اور بیان جاری کرنے کے علاوہ کوئی کام نہیں ہے ۔ میدان میں سرکار اور عوام کام کر رہے ہیں ۔ ان کے لیڈر راہل گاندھی، سونیا گاندھی سے لے کر مدھیہ پردیش کے سبھی لیڈروں کو آپ لیجئے یہ کورونا قہر میں کہیں نظر آتے ہیں ۔ آپ نے کسی اسپتال میں ، کسی کووڈ سینٹر میں ان کو کام کرتے دیکھا ہے ۔ آپ نہیں دیکھیں گے ، ان کا سیوا دل کیا میوہ کھانے کے لئے ہے ۔ کانگریس کو ملک کی عوام کبھی معاف نہیں کریں گے ۔


حکومت کی کوشش اور کورونا کرفیو کا اثر ہے کہ اب مدھیہ پردیش میں ریکوری ریٹ میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ کل نئے کیس تیرہ ہزاردوسو بیالیس آئے تھے ، مگر اسپتال سے ڈسچارج ہو کر گھر جانے والوں کی تعداد چودہ ہزار ایک سو انہتر تھی ۔ اسی طرح آج بھی کورونا کے نئے معاملات بارہ ہزار چھ سو اڑسٹھ آئے ہیں جبکہ تیرہ ہزار پانچ سو پچھہتر لوگ مختلف اسپتالوں سے ڈسچارج ہوکر اپنے گھر کو گئے ہیں ۔

انہوں نے کہا اسپتالوں کو آکسیجن اور ریمڈیسیور انجیکشن فراہم کرنے کا کام جنگی پیمانے پر جاری ہے اور بہت جلد ہم حالات پر قابو پالیں گے ۔ کورونا کی چین ٹوٹے گی اور حالات بہتر ہوں گے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 29, 2021 10:57 PM IST