உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مدھیہ پردیش : کانگریس نے کمل ناتھ کی قیادت میں کیا اسمبلی کا گھیراؤ

    مدھیہ پردیش : کانگریس نے کمل ناتھ کی قیادت میں کیا اسمبلی کا گھیراؤ

    مدھیہ پردیش : کانگریس نے کمل ناتھ کی قیادت میں کیا اسمبلی کا گھیراؤ

    مدھیہ پردیش اسمبلی مانسون اجلاس کا پہلا دن ہنگاموں کی نذر ہوگیا ۔ اسمبلی اجلاس کے پہلے دن حکومت اور اپوزیشن کے درمیان اس قدر تیکھی بحث ہوئی کہ مرحوم ممبران اسمبلی کو ہنگاموں کے بیچ ہی خراج عقیدت پیش کیا گیا۔

    • Share this:
    بھوپال : مدھیہ پردیش اسمبلی مانسون اجلاس کا پہلا دن ہنگاموں کی نذر ہوگیا ۔ اسمبلی اجلاس کے پہلے دن حکومت اور اپوزیشن کے درمیان اس قدر تیکھی بحث ہوئی کہ مرحوم ممبران اسمبلی کو ہنگاموں کے بیچ ہی خراج عقیدت پیش کیا گیا۔ کانگریس نے حکومت پر عوامی مسائل سے چشم پوشی ، آدیواسیوں پر مظالم اور نو اگست کو یوم آدیواسی کے موقع سرکاری تعطیل کا اعلان نہیں کئے جانے کو لیکر جہاں اسمبلی کا گھیراؤ کیا تو وہیں حکومت نے کانگریس پر آدیواسیوں کو گمراہ کرنے اور خود کو آدیواسیوں کا سب سے بڑا ہمدرد بتایا۔

    مدھیہ پردیش اسمبلی کا مانسون اجلاس صرف چار روز کے لئے منعقد کیا گیا ہے ۔ اسمبلی اجلاس نو اگست کو شروع ہوا ہے اور بارہ اگست کو ختم ہو جائے گا۔ چار روزہ اسمبلی اجلاس میں گیارہ سو چوراسی سوال ممبران اسمبلی کی  جانب سے لگائے گئے ہیں ۔ اسمبلی اجلاس کے دن میں توسیع کو لیکر کانگریس کی جانب سے مطالبہ کیا گیا تھا ، مگر اسپیکر کی جانب سےاجلاس کے دن میں توسیع نہیں کی گئی ۔ اسمبلی اجلاس کے ہنگامہ خیز ہونے کے آثار پہلے سے ہی تھے ۔

    کانگریس  نے نواگست کا دن  یوم آدیواسی اوربھارت چھوڑوآندولن کی سالگرہ کی یادگار کے طور پر منایا۔ یوم آدایواسی کے موقع پر سرکاری تعطیل نہیں کئے جانے سے ناراض کانگریس نے ریاست میں آدیواسیوں کے مسائل کو لیکر اسمبلی گھیرنے کا خاکہ تیار کیا۔ خاکہ کے مطابق پی سی سی کانگریس کارکنان نے ریلی نکالی لیکن ریلی کو دوسو میٹر چلنے کے بعد پولیس نے روک دیا۔ اس بیچ اسمبلی جانے کی ضد پر اڑے کانگریس کارکنان اور پولیس کے بیچ جم کر جھڑپ ہوئی ۔ پولیس جھڑپ میں کانگریس کے کئی کارکنان زحمی بھی ہوئے ، جن کا بھوپال کے اسپتال میں علاج جاری ہے۔

    ایم پی پی سی سی چیف و مدھیہ پردیش کے سابق سی ایم کمل ناتھ کہتے ہیں کہ شیوراج حکومت میں امن و قانون نام کی کوئی چیز نہیں بچی ہے۔ سابق سی ایم کمل ناتھ کہتے ہیں کہ کانگریس نے ستائیس لاکھ کسانوں کا قرض معاف کیا ہے ، لیکن شیوراج سنگھ حکومت کسانوں کے ساتھ ظلم پر آمادہ ہے ۔ ہم نے مافیا کے خلاف مہم چلائی تھی مگر اب مدھیہ پردیش کی پہچان مافیا اور ملاوٹ خوری ہے ۔ جب جرائم ہے تو ایسے میں مدھیہ پردیش میں سرمایہ کون کرے گا۔ جب سرمایہ کاری ہوگی تبھی لوگوں کو ترقی کے مواقع فراہم ہوں گے ۔

    انہوں نے کہا کہ جب ہم کورونا کی بات کرتے تھے تب یہی شیوراج کہتے تھے کہ کورونا نہیں ڈراؤنا ہے ۔ حکومت نے کورونا میں کیا آپ کے سامنے ہے ۔ آکسیجن کا انتظام نہیں کیا گیا ۔انجیکشن کے نام پر کالا بازاری کی گئی ۔ آج نو اگست کو اگر آپ نے عہد لے لیا کہ آج سے دو سال تک دولوگوں کو حکومت کی سچائی سمجھائیں گے تو آنے والے دو سال بعد کانگریس کی حکومت کو کوئی نہیں روک سکتا ۔

    وہیں سی ایم شیوراج سنگھ نے کمل ناتھ اور کانگریس پر طنز کرتے ہوئے کہا کہ آدیواسیوں کے لئے جتنا کام بی جے پی نے کیا ہے اتنا کبھی ہوا ہی نہیں ہے ۔ کانگریس نے آدیواسیوں سے ووٹ لینے کا کام کیا ہے ، مگر بی جے پی نے  انہیں مان سمان اور ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کا کام کیا ہے ۔ اسمبلی میں مرحوم ممبران اسمبلی کو خراج عقیدت پیش کرنے کے دوران کانگریس کے ذریعہ جس طرح روکاوٹیں پیدا کی گئی ہیں وہ شرمناک ہیں ۔ مرحوم ممبران اسمبلی کو خراج عقیدت پیش کی جا رہی ہے اور یہ لوگ پرامن ماحول میں خراج عقیدت پیش کرنے نہیں دے رہے ہیں ۔ کون کس کو گمراہ کر رہا ہے یہ عوام جانتی ہے ۔

    انہوںے کہا کہ مدھیہ پردیش کی عوام نے پندرہ مہینے کی کمل ناتھ  حکومت کو بھی دیکھا ہے اور اب بھی  دیکھ رہی ہے کہ بی جے پی حکومت کتنی حساس ہے اور عوامی مسائل کو لے کر کتنی سنجیدہ ہے ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: