ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : اردو اساتذہ کی تقرری کیلئے روسٹر میں تبدیلی کا مطالبہ ، جانئے کیا ہے معاملہ

حکومت کے ذریعہ اردو اساتذہ کی تقرری کو لے کر جاری کئے گئے نوٹیفکیشن میں محض دو درجن اردو اساتذہ کی تقرری کو اردو کے فروغ کے لئے کام کرنے والی سماجی تنظیموں نے اونٹ کے منھ میں زیرہ کے مترادف قرار دیا ہے ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : اردو اساتذہ کی تقرری کیلئے روسٹر میں تبدیلی کا مطالبہ ، جانئے کیا ہے معاملہ
مدھیہ پردیش : اردو اساتذہ کی تقرری کیلئے روسٹر میں تبدیلی کا مطالبہ ، جانئے کیا ہے معاملہ

بھوپال : مدھیہ پردیش میں برسوں کے مطالبہ کے بعد اردو اساتذہ کی تقرری کے لئے قدم تو اٹھایا گیا ، لیکن حکومت کے ذریعہ اردو اساتذہ کی تقرری کو لے کر جاری کئے گئے نوٹیفکیشن میں محض دو درجن اردو اساتذہ کی تقرری کو اردو کے فروغ کے لئے کام کرنے والی سماجی تنظیموں نے اونٹ کے منھ میں زیرہ کے مترادف قرار دیا ہے ۔ مولانا برکت اللہ بھوپالی ایجوکیشن سوسائٹی کے زیر اہتمام بھوپال میں منعقدہ میٹنگ میں جہاں اردو اساتذہ کو ریاست گیر سطح پر تقرری کئے جانے کا مطالبہ کیا گیا وہیں اردو اساتذہ کی تقرری میں نافذ کئے ریزرویشن میں روسٹر سسٹم کو تبدیل کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا۔


مدھیہ پردیش مولانا برکت اللہ بھوپالی ایجوکیشن سوسائٹی کے صدر حاجی محمد ہارون کہتے ہیں کہ مدھیہ پردیش میں اردو کے اساتذہ کی تقرری کا کام دو ہزار تین کے بعد سے نہیں کیا گیا ہے۔ اردو اساتذہ کی تقرری پرائمری، مڈل ، ہائی اسکول ، ہائر سیکنڈری اسکول اور کالج و یونیورسٹی کی سطح پر کیا جانا ہے ۔ حالیہ دنوں حکومت نے اسکول کی سطح پر محض دو درجن اسامیوں کا نوٹیکفیشن جاری کیا ہے ، جو ضرورت سے نہ صرف بہت کم ہے بلکہ حکومت کو ریاست گیر سطح پر اردو اساتذہ کی تقرری کا قدم اٹھانا چاہئے ۔ تاکہ ہندستان میں پیدا ہونے والی عالمی زبان کو اس کا حق ملے سکے ۔ یہی نہیں حکومت کے ذریعہ اردو اساتذہ کی تقرری میں بھی ریزرویشن کا نفاذ کردیا گیا ہے۔


اردو اساتذۃ کے لئے ایس سی ، ایس ٹی کا ریزرویشن کئے جانے سے برسوں سے تقرری نہیں ہو سکی ہے ۔ ضابطہ کے مطابق ریزرویشن کی کسی سیٹ کے لئے تین بار اشتہار جاری کیا جانا چاہئے اور جب متعلقہ اسامی کے لئے ریزرویشن کیٹگری سے کوئی نہیں آتا ہے ، تو ضابطہ کے مطابق روسٹر کو تبدیل کر تے ہوئے اس پوسٹ کو جنرل کیٹگری میں اشتہار دے کر پر کیا جانا چاہئے ، لیکن حیرت ہے کہ گزشتہ سترہ اٹھارہ سالوں سے ایس سی ایس ٹی کے لوگوں کے ریزرویشن کو لیکر اردو اساتدہ کی پوسٹ کا اشتہار جاری کیا جاتا ہے اور نہیں ملنے کے بعد روسٹر کو تبدیل نہیں کیا جا رہا ہے ۔ ہماری وزیر اسکولی تعلیم سے مانگ ہے کہ اردو کے وسیع مفاد میں روسٹر کو تبدیل کیا جائے ۔ تاکہ اردو اساتذۃ اور اردو طلبہ کو ان کا حق مل سکے ۔


وہیں مدھیہ پردیش کے وزیر برائے اسکول تعلیم اندر سنگھ پرمار کہتے ہیں کہ یہ حکومت سب کو ساتھ لے کر چلنے میں یقین رکھتی ہے ۔ جہاں پر جس چیز کی جتنی ضرورت ہے ، اس کو پر کیا جا رہا ہے اور جہاں تک روسٹر میں تبدیلی کا سوال ہے تو اس میں دیکھتے ہیں قانون کیا کہتا ہے ۔ قانون کے مطابق جو ہوگا ، وہ کیا جائے گا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 06, 2021 10:30 PM IST