உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مدھیہ پردیش میں نہیں رک رہے ہجومی تشدد، لو جہاد کے شک میں لڑکی اور لڑکے ساتھ شرمناک حرکت

    Youtube Video

    پولیس نے تین لوگوں کے خلاف نامزد معاملے درج کیا ہے ۔ابتک دو لوگوں کی گرفتاری عمل میں آچکی ہے ہجومی تشدد کاشکار ساجد ،ان کے گھر والے اور بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود کچھ اس طرح اپنے خیالات کااظہار کرتے ہیں ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
      مدھیہ پردیش میں شرپسند عناصر بے لگام ہوتے جا رہے ہیں ۔ نیمچ، دیواس، اندور،ٹپا سکولیا،ریوا کے بعدراج گڑھ میں ہجومی تشدد کا معاملہ سامنے آیا ہے۔ بلوٹ پورا،نرسنگھ ضلع راج گڑھ کے ساجد کے گزشتہ شب بھی ہجومی تشدد کا واقعہ اس وقت پیش آیا جب وہ ہائی وے سے گزر رہے تھے۔ ساجد کو علاج کے لئے بھوپال ریفر کیاگیا ہے جہاں ایک مقامی اسپتال میں ساجد کا علاج جاری ہے۔ وہیں بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود نے ریاست میں بڑھتے ہجومی تشدد کے لئے حکومت کے وزیروں کے بے تکے بیان کو ذمہ دار ٹھہراتے ہوئے شر پسند عناصر کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔ پولیس نے تین لوگوں کے خلاف نامزد معاملے درج کیا ہے ۔ابتک دو لوگوں کی گرفتاری عمل میں آچکی ہے ہجومی تشدد کاشکار ساجد ،ان کے گھر والے اور بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود کچھ اس طرح اپنے خیالات کااظہار کرتے ہیں ۔

      مدھیہ پردیش میں ان دنوں ہجومی تشدد کے واقعات میں مستقل اضافہ دیکھا جارہاہے۔وہیں فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو بھی کاری ضرب لگ رہی ہے۔ الگ الگ مقامات پر شرپسند عناصر کے حوصلے بلند نظر آ رہے ہیں۔جنہیں قانو ن کاکوئی خوف نہیں ہے۔ اجین ،اندور، دیواس نیمچ اور ریوا میں انسانیت شرمسارہوئی۔ریوامیں ایک شخص کو چوری کے الزام میں بری طرح سے پیٹا گیا ہے۔

      اس ویڈیو کو مدھیہ پردیش کے سابق وزیراعلیٰ کمل ناتھ اور دگ وجے سنگھ نے اپنے ٹیوٹر ہینڈل پر شیئر کیاہے۔اس سے پہلے نیمچ میں ایک آدی واسی شخص کوٹرک سے باندھ کر گھسیٹا گیا۔ جس کی وجہ سے اس کی اب موت واقع ہو گئی۔وہیں اجین کے مہت پور میں کچھ شرپسند عناصردیکھے گئے جو ایک کباڑی والےکو جے شری رام کے نعرے لگوانے پر مجبور کررہے تھے۔ تینوں معاملات میں مقدمات درج کیے گیے ہیں۔نیمچ میں پانچ گرفتاریاں توریوامیں تین ملزمین کو گرفتار کیاگیا ہے جبکہ اجین معاملے میں مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

      مدھیہ پردیش کے مالوہ میں ماب لنچنگ کے بڑھتے واقعات اور حکومت کے ساتھ پولیس انتظامیہ پر جانب داری کا الزام لگاتے ہوئے کانگریس کارکنان نے اندور میں اپنی طاقت کا مظاہرہ کیا۔ کانگریس کارکنان اندور راج واڑہ سے خاموش طریقے سے پیدل مارچ کرتے ہوئے کلکٹریٹ جانا چاہتے تھے مگر پولیس نے انہیں بیچ راستے میں ہی روک لیا۔ پولیس کے ذریعہ کانگریس کارکنان نے پیدل مارچ کو روکنے کو لیکر کانگریس کارکنان اور پولیس کے بیچ جھوما جھٹکی بھی ہوئی ۔ بھیڑ کو کنٹرول کرنے کے لئے پولیس نے واٹر کینن کا بھی استمعمال کیا ۔ کانگریس نے پرامن پیدل مارچ کو پولیس کے ذریعہ روکنے جانے اور واٹر کینن کے استعمال کو حکومت کے اشارے پر کئے گئے پولیس جبر سے تعبیر کیا جبکہ بی جے پی نے اسے فوکٹ کی سیاست کا حصہ بتایا ہے ۔
      وہیں اب اندور تھانہ بان گنگا کے گووند نگر علاقہ میں چوڑی فروش تسلیم کی چند لوگوں کے ذریعہ کی جانے والی پیٹائی سبھی کو یاد ہوگی لیکن اب اس معاملے میں مدھیہ پردیش حکومت نے ایک نئے انکشاف کا اعلان کیا ہے ۔ وزیر داخلہ ڈاکٹر نروتم مشرا کا کہنا ہے کہ جن لوگوں نے چوڑی والا کی پیٹائی کو لیکر اندور کے تھانہ بان گنگا کا رات میں گھیراؤ کیا تھا ان میں سےجن چار لوگوں کو گرفتار کیاگیا ہے وہ نہ صرف اندور میں بڑی واردات کرنے والے تھے بلکہ ان کے کنکشن پاکستان سے جڑے ہوئے ہیں ۔ وزیر داخلہ نے گرفتار کئے گئے لوگوں کے تار پاکستان سے جڑنے کے ساتھ اسد الدین اویسی کی پارٹی سے جوڑے ہونے کا بھی انکشاف کیا ہے۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: