உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بھوپال کے منصور فاروقی کے پاس تیس زبانوں میں ساڑھے پانچ ہزار نغموں کا کلیکشن موجود، وجہ ہے انتہائی خاص

    بھوپال کے منصور فاروقی کے پاس تیس زبانوں میں ساڑھے پانچ ہزار نغموں کا کلیکشن موجود، وجہ ہے انتہائی خاص

    منصور فاروقی میکنک کا کام کرتے ہیں اور انہیں محمد رفیع کے نغموں سے اس حد تک عشق ہے کہ وہ بھوکے رہتے ہیں ، مگر محمد رفیع کے نغموں کا کلیکش جمع کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتے ہیں ۔

    • Share this:
    بھوپال : انسان کا شوق جنون میں تبدیل ہوجائے تو اسے منزل ضرور ملتی ہے ۔ بھوپال کے منصور احمد فاروقی کو ممتاز گلو کار محمد رفیع سے جنون کی حد تک عشق ہے۔ منصور فاروقی کو اسی کی دہائی تک محمد رفیع کے ہندی فلموں میں گائے گیت کا ہی علم تھا ، مگر انیس سو پچاسی میں جب انہوں نے انگریزی زبان میں محمد رفیع کے گائے ہوئے نغمہ کو سنا تو ان کی حیرت کی انتہا نہیں رہی ۔ یہیں سے منصور فاروقی نے محمد رفیع کے گائے ہوئے نغموں کو جمع کرنے کا سلسلہ شروع کیا اور آج  ان کے پاس تیس زبانوں میں گائے ہوئے محمد رفیع کے پانچ ہزار چار سو پچاس نغموں کا کلکشن موجود ہے ۔

    منصور فاروقی میکنک کا کام کرتے ہیں اور انہیں محمد رفیع کے نغموں سے اس حد تک عشق ہے کہ وہ بھوکے رہتے ہیں ، مگر محمد رفیع کے نغموں کا کلیکش جمع کرنے کا کوئی موقع ہاتھ سے جانے نہیں دیتے ہیں ۔ انہوں نے فارسی زبان میں گائے ہوئے محمد رفیع کے ایک نغمے کو خریدنے کے لئے پانچ ہزار روپے صرف کیا تھا۔ منصور فاروقی نے اپنے بیٹے اور گھر کا نام بھی محمد رفیع کے نام سے ہی رکھا ہے۔

    منصور فاورقی کہتے ہیں کہ بھوپال کو محمد رفیع کے قدم بوسی کی سعادت حاصل ہے ۔ محمد رفیع نے بھوپال کے باب اعلی نے نہ صرف اپنا لائیو کنسرٹ پروگرام پیش کیا تھا بلکہ اپنے دونوں کی بارات بھی وہ بھوپال سے لے کر خان ڈیرا گئے تھے۔ میرے کلیکشن میں محمد رفیع کے گائے ہوئے تیس زبانوں کے نغمے موجود ہیں ۔ فارسی زبان میں محمد رفیع کے گائے ہوئے نغمے کو خریدنے کے لئے مجھے آج سے پندرہ سال پہلے پانچ ہزار روپے صرف کرنا پڑا تھا اور اس کے لئے مجھے کئی بار بھوکا بھی رہنا پڑا تھا ۔ میں نے اپنے گھر کا نام اور بیٹے کا نام بھی محمد رفیع کے نام سے ہی منسوب کیا ہے ۔ بس یہی خواہش کہ حکومت ہند بعد از مرگ محمد رفیع کو بھارت رتن کے اعزاز سے سرفراز کرے ۔

    منصور فاروقی کے دوست سید عارف کو بھی محمد رفیع سے انتہا کی حد تک عشق ہے ۔ سید عارف بصارت سے محروم ہیں ، لیکن انہیں محمد رفیع کے گائے ہوئے ہزار سے زیادہ نغمے یاد ہیں ۔ منصور فاروقی اور عارف اکتیس جولائی کو محمد رفیع کی برسی پر محمد رفیع کے نغموں کے کلیکشن کی نمائش لگانا چاہتے تھے ، مگر کورونا کی وبا اور حکومت کی پابندیوں کے سبب انہیں نمائش کی اجازت نہیں مل سکی ۔ پھر بھی انہوں نے اپنے گھر کے کمرے میں ہی محمد رفیع کے کلیکشن کی نمائش لگائی ۔ تاکہ شائقین محمد رفیع سوشل ڈسٹنس کے ساتھ ان کی رہائش گاہ پر آکر محمد رفیع کے نغموں کا کلیکشن دیکھ سکیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: