உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مدھیہ پردیش : محکمہ اقلیتی فلاح و بہبود نے نہیں جاری کیا گرانٹ، آئمہ و موذنین اپریل سے تنخواہ سے محروم

    مدھیہ پردیش : محکمہ اقلیتی فلاح و بہبود نے نہیں جاری کیا گرانٹ، آئمہ و موذنین اپریل سے تنخواہ سے محروم

    مدھیہ پردیش : محکمہ اقلیتی فلاح و بہبود نے نہیں جاری کیا گرانٹ، آئمہ و موذنین اپریل سے تنخواہ سے محروم

    مساجد کمیٹی کے مہتمم یاسر عرفات کہتے ہیں کہ سابقہ مالی سال میں گرانٹ کو لیکر جو دشواریاں تھیں ، وہی اب بھی ہیں ۔ حالانکہ محکمہ اقلیتی فلاح و بہبود کو مساجد کمیٹی اور آئمہ وموذنین کی تقرری کو لیکر جو دستاویزات مطلوب تھے ، انہیں جمع کیا جاچکا ہے ۔

    • Share this:
    بھوپال : مالی سال دوہزار اکیس و بائیس کو شروع ہوئے ڈھائی مہینہ کا عرصہ گزر چکا ہے ، لیکن مدھیہ پردیش محکمہ اقلیتی فلاح وبہبود نے مساجد کمیٹی کو نئے مالی سال کی ابھی تک گرانٹ جاری نہیں کی ہے ۔ گرانٹ جاری نہیں کئے جانے سے نہ صرف مساجد کمیٹی ، آئمہ وموذنین بلکہ دارالقضا و دارالافتاء کے ملازمین بھی اپریل سے اب تک تنخواہ سے محروم ہیں ۔

    مساجد کمیٹی کے مہتمم یاسر عرفات کہتے ہیں کہ سابقہ مالی سال میں گرانٹ کو لیکر جو دشواریاں تھیں ، وہی اب بھی ہیں ۔ حالانکہ محکمہ اقلیتی فلاح و بہبود کو مساجد کمیٹی اور آئمہ وموذنین کی تقرری کو لیکر جو دستاویزات مطلوب تھے ، انہیں جمع کیا جاچکا ہے ۔ یہ دشواریاں ونڈر سسٹم کے نفاذ کے سبب پیدا ہوئی ہیں ۔ امید ہے جلد ہی گرانٹ جاری ہو جائے گا اور جیسے ہی گرانٹ جاری ہوتا ہے آئمہ وموذنین ، مساجد کمیٹی اسٹاف، دارالقضا اور دارالافتا کے ملازمین کی تنخواہ ان کے اکاؤنٹ میں ڈال دی جائے گی ۔

    وہیں مدھیہ پردیش کے وزیر برائے اقلیتی فلاح و بہبود رام کھلاون پٹیل کہتے ہیں کہ آپ کے ذریعہ گرانٹ نہیں جاری ہونے کی اطلاع ابھی ملی ہے ۔ متعلقہ محکمہ سے معلومات حاصل کر کے جلد سے جلد گرانٹ جاری کرنے کا کام کیا جائے گا ۔ اگر گرانٹ جاری ہونے میں کسی سبب اتنی تاخیر ہو رہی تھی ، تو مساجد کمیٹی کے ذمہ داران کو ملاقات کرکے بتانا چاہئے تھا ۔ مجھے مساجد کمیٹی کے ذریعہ اس سلسلے میں کوئی اطلاع اب تک نہیں دی گئی ہے ۔

    انہوں نے مزید کہا کہ کسی کے ساتھ نا انصافی نہیں ہوگی ۔ سبھی کو ان کا حق ملے گا ۔ گرانٹ بھی جاری ہوگا اور ضرورت پڑی تو اس میں اضافہ بھی کیا جائے گا ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: