ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : کورونا ٹیکہ کاری مہم میں مسلم سماج نے بڑھ چڑھ کر لیا حصہ

بھوپال تاج المساجد کیمپس میں منعقدہ کورونا ٹیکہ کاری کیمپ کے انچارج ڈاکٹر ظفر حسن کہتے ہیں کہ یہ بیماری کے تئیں عوامی بیداری کا اثر ہے کہ ہمیں کورونا ٹیکہ لگوانے والوں کی بڑی تعداد دیکھنے کو مل رہی ہے ۔ تاج المساجد میں یہ تیسری مرتبہ کورونا ٹیکہ کیمپ کا انعقاد کیا گیا ہے ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : کورونا ٹیکہ کاری مہم میں مسلم سماج نے بڑھ چڑھ کر لیا حصہ
مدھیہ پردیش : کورونا ٹیکہ کاری مہم میں مسلم سماج نے بڑھ چڑھ کر لیا حصہ

بھوپال : اکیس جون کو یوں تو پورے ملک میں سب کو مفت ویکسین فراہم کرنے کےلئے ٹیکہ کاری کا اہتمام کیا گیا تھا ، مگر مدھیہ پردیش ملک کا واحد صوبہ تھا جہاں کورونا ٹیکہ کاری کو لیکر مہا ابھیان چلایا گیا ۔ کورونا ٹیکہ کاری مہا ابھیان کے لئے ریاست کے باون اضلاع میں حکومت کی جانب سے سات ہزار سینٹر بنائے گئے تھے ۔ حکومت کی جانب سے مہا ابھیان میں دس لاکھ لوگوں کو ٹیکہ لگانے کا ہدف مقرر کیا گیا تھا ۔ اس کے لئے نہ صرف حکومت کی سطح پر بلکہ انتظامیہ اور سماجی تنظیموں نے بیداری میں کلیدی کردار ادا کیا ۔ مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں بھی کورونا ٹیکہ کاری کے لئے ساڑھے آٹھ سو سینٹر بنائے گئے ۔ مسلم تنظیموں کی جانب سے بھی  ٹیکہ کاری کے لئے شہر کے مختلف حصوں میں مراکز بنائے گئے ، جہاں صبح سے شام تک لوگوں ٹیکہ لگوانے کے لئے لوگوں کی لمبی لمبی قطار دیکھنے کو ملی ۔


بھوپال تاج المساجد کیمپس میں منعقدہ کورونا ٹیکہ کاری کیمپ کے انچارج ڈاکٹر ظفر حسن کہتے ہیں کہ یہ بیماری کے تئیں عوامی بیداری کا اثر ہے کہ ہمیں کورونا ٹیکہ لگوانے والوں کی بڑی تعداد دیکھنے کو مل رہی ہے ۔ تاج المساجد میں یہ تیسری مرتبہ کورونا ٹیکہ کیمپ کا انعقاد کیا گیا ہے ۔ عوام کی بیداری سے ہم کورونا کو شکست دینے میں کامیاب ہوں گے ۔ جس طرح سے کورونا کی تیسری لہر کی بات کی جا رہی ہے ، اگر اسی طرح سے عوام نے اپنی بیداری کا ثبوت دیا اور حکومت کے احکام پر عمل کیا تو ہم کورونا کے سبھی ویریئنٹ کو شکست دینے میں کامیاب ہوئ گے اور پھر خوشگوار زندگی ہمارے سامنے ہوگی ۔


بھوپال کی عطیہ فردوس کہتی ہیں کہ سوشل میڈیا پر خبریں سن کر پہلے تو ڈر لگ رہا تھا ، لیکن جب سوشل میڈیا کو بند کر کے ڈاکٹر سے مشورہ کیا تو ہمیں ایک نیا حوصلہ ملا ۔ یہ وہی حوصلہ ہے جو مجھے اپنے شوہر اور بچوں کے ساتھ یہاں تک لایا ہے ۔ یہاں جب ٹیکہ لگوانے والوں کی بڑی تعداد دیکھی تو بہت اچھا لگا ۔ سبھی کو آگے بڑھ کر ٹیکہ لگوانا چاہئے ۔ کیونکہ بیماری مذہب پوچھ کر نہیں آئے گی ۔ ماشا اللہ میں نے بھی ، میرے شوہر نے اور بچوں نے سبھی نے ٹیکہ لگوایا ہے ۔ انشا اللہ سبھی کی بیداری سے اس وبائی بیماری کا خاتمہ ہوگا ۔


معروف صحافی نظر محمود کہتے ہیں کہ کورونا کی وبائی بیماری سے تحفظ کے لئے ضروری ہے کہ سبھی لوگ ٹیکہ لگوائیں ۔ میں نے بھی تاج المساجد میں منعقدہ کیمپ میں آکر ٹیکہ لگوایا ہے ۔ میں شہر کے مختلف مقامات پر لگے کیمپ میں گیا ، لیکن تاج المساجد میں منعقدہ کیمپ میں جو خوبیاں دیکھیں ، وہ کہیں اور نہیں تھی ۔ یہاں کے کیمپ میں ویکسین لگانے سے پہلے بلڈ پریشر، آکسیجن لیول کو چیک کرنا اور آنے والے کی کاؤنسلنگ کرنا اور جب وہ ہر طرح سے مطمئن ہو جائے ، تب ٹیکہ لگانے کا اہتمام کرنے کا انتظام اچھا لگا ۔ اس فارمولے کو دوسرے مقامات پر بھی نافذ کرنا چاہئے ۔ تاکہ لوگوں کے من میں کورونا ٹیکہ کاری کو لیکر جو گمراہی یا خوف ہے وہ دور ہوسکے۔

واضح رہے کہ مدھیہ پردیش حکومت  کی جانب سے کورونا ٹیکہ کاری کےلئے شروع کی گئی خصوصی مہم تیس جون تک جاری رہے گی ۔ یکم جولائی سے تین جولائی تک سبھی وزرا اپنے اپنے اسمبلی حلقے میں کورونا ٹیکہ کاری کو لیکر خصوصی مہم شروع کریں گے تاکہ وبائی بیماری کا مدھیہ پردیش سے خاتمہ ہو سکے۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jun 21, 2021 06:25 PM IST