ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : زمین تنازع کیس میں ارجینٹ ہیرنگ کی پہلی سماعت میں ہی دستاویز نہیں ہوئے پیش

بھوپال کباڑ خانہ علاقہ میں واقع زمین پر مالکانہ حق کولے کرشروع ہوئی ارجینٹ ہیئرنگ کی پہلی سماعت میں ہی راج دیو ٹرسٹ ٹریبونل کے سامنے کوئی دستاویز نہیں پیش کرسکا۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : زمین تنازع کیس میں ارجینٹ ہیرنگ کی پہلی سماعت میں ہی دستاویز نہیں ہوئے پیش
مدھیہ پردیش : زمین تنازع کیس میں ارجینٹ ہیرنگ کی پہلی سماعت میں ہی دستاویز نہیں ہوئے پیش

بھوپال کباڑ خانہ علاقہ میں واقع زمین پر مالکانہ حق کولے کرشروع ہوئی ارجینٹ ہیئرنگ کی پہلی سماعت میں ہی راج دیو ٹرسٹ ٹریبونل کے سامنے کوئی دستاویز نہیں پیش کرسکا۔ دستاویز پیش کرنے کے لئے مزید وقت مانگے جانے پر ایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل نے سماعت کے لئے 23 جنوری کی تاریخ مقرر کی ہے۔ اس بیچ متنازع زمین پر مالکانہ حق کو لیکر ایم پی وقف بورڈ نے بھی وقف ٹریبونل کے سامنے اپنا دعوی پیش کردیاہے۔ وقف ٹریبونل نے اس معاملے کو بھی سماعت کے لئے قبول کرلیا ہے۔


واضح رہے کہ 17 جنوری کو سندھی کالونی کے نزدیک کباڑ خانہ کی سینتس ہزار اسکوائز فٹ زمین پر مالکانہ حق دلانے کے لئے بھوپال ضلع انتظامیہ نے کرفیو کا نفاذ کر کے ایک فریق کو عدالت کے فیصلہ کا حوالہ دیکر متنازع زمین پر تعمیر کا حق دیا تھا۔ انتظامیہ کے ذریعہ کی گئی کارروائی کو وقف ٹریبونل میں محمد سلیمان نے چیلنج کیا اور ٹریبونل سے معاملہ میں ارجینٹ ہیئرنگ کی درخواست کی تھی ۔ ایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل نے عرضی گزار کی  درخواست پر اکیس جنوری کو سماعت کی تاریخ مقرر کی تھی ۔ جس میں عرضی گزار محمد سلیمان کے وکیل کے ساتھ راج دیو ٹرسٹ کے وکیل بھی ٹریبونل میں سماعت میں پہنچے تھے۔ مگر راج دیو ٹرسٹ کے وکیل کی جانب سے دستاویز پیش کرنے کے لئے ٹریبونل سے مزید وقت  دیئے جانے کی درخواست کی ۔ جس پر ٹریبونل نے سماعت کے لئے اگلی تاریخ تیئس جنوری مقرر کردی ۔


بھوپال متنازعہ زمین پر ارجینٹ ہیئر نگ کی سماعت کے موقع پر عرضی گزار کی جانب سے وکیل رفیع زبیری نے اپنا دستاویز پیش کیا جبکہ سرکاری وکیل کی طور پر این پی سنگھ راجپوت حاضر ہوئے تھے۔ بھوپال نگر نگم کی جانب سے معاملہ کی پیروی کرنے کے لئے وکیل ایچ ایل جھا ٹریبونل میں پیش ہوئے تو راج دیوٹرسٹ کی جانب سے وکیل جگدیش چھاوانی نے پیروی کی۔


دلچسپ بات یہ ہے کہ متنازع زمین جس پر لمبے عرصے سے مقدمہ جاری ہے مدھیہ پردیش وقف بورڈ اس معاملہ سے جہاں اپنی دوری  بنائے ہوا تھا اس نے مسلم سماج کے دباؤ کے بعد وقف ٹریبونل میں زمین کے مالکانہ حق  کو لے کر اپنا دعوی پیش کیا۔ وقف بورڈ کی جانب سے وکیل ثروت شریف نے معاملہ کی پیروی کی۔

متنازع زمین پر ایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل میں ارجینٹ ہیئرنگ ضرور شروع ہوگئی ہے ۔ تاہم متنازعہ زمین پر ایک فریق کی جانب سے تعمیر کا کام بھی جاری ہے ۔ عرضی گزار محمد سلیمان کا کہنا ہے کہ جب اس معاملہ میں اب تک کسی عدالت کا فیصلہ نہیں آیا ہے ، تو انتظامیہ نے کس احکام کے تحت تعمیرات کو جاری رکھنے کا حکم دیا ہے ۔ ہم نے ٹریبونل سے درخواست کی ہے کہ تعمیری کام کو روکا جائے اور وہاں پر پہلے کی حالت کو برقرار رکھا جائے۔

تیئس جنوری کو دن میں ساڑھے بارے بجے وقف ٹریبونل نے سماعت کا مقرر کیا ہے ۔ ٹریبونل کے حکم پر سبھی کی نگاہیں لگی ہوئیں ہیں۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jan 21, 2021 11:57 PM IST