உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Vikas Dubey Encounter: مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا نے کہا۔ پولیس نے اپنا کام کیا

    مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا

    مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا

    نروتم مشرا نے کہا کہ در اصل پورے معاملے میں مدھیہ پردیش پولیس نے اپنا کام بہتر ڈھنگ سے کیا۔ انہوں نے اس بات سے انکار کیا کہ وہ دو دن سے اجین میں تھا۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      بھوپال۔ مدھیہ پردیش کے وزیر داخلہ نروتم مشرا نے آج کہا کہ جمعرات کی صبح اجین پولیس کی گرفت میں آئے وکاس دوبے کو دیر شام اترپردیش پولیس کو سونپنے کے بعد ایم پی پولیس نے پورے قافلے کو بہ حفاظت مدھیہ پردیش سے اترپردیش کی سرحد تک پہنچایا تھا۔ مشرا نے یہاں میڈیا کے سوالوں کے جواب میں یہ اطلاع دی۔ وکاس دوبے کے مڈبھیڑ میں مارے جانے پر کانگریس کے رہنماؤٔں کے سوال اٹھانے سے متعلق مشرا نے کہا کہ یہی لوگ گذشتہ روز اسے زندہ پکڑے جانے پر سوال اٹھا رہے تھے اور اب اس کے مرنے پر سوال اٹھا رہے ہیں۔

      نروتم مشرا نے کہا کہ در اصل پورے معاملے میں مدھیہ پردیش پولیس نے اپنا کام بہتر ڈھنگ سے کیا۔ انہوں نے اس بات سے انکار کیا کہ وہ دو دن سے اجین میں تھا۔ ایم پی کے وزیر داخلہ نے کہا کہ کانگریس کے رہنما دگوجے سنگھ کا کام محض ٹویٹ کرنا رہ گیا ہے۔ انھیں اب کوئی عوامی ریلی میں مدعو نہیں کرتا ہے تو ٹویٹ کرکے اپنا کام کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وکاس سماج وادی پارٹی (ایس پی) سے منسلک تھا اور اس سلسلے میں اس کے پاس پوسٹر بھی ہیں۔ مشرا نے کہا کہ کانگریس کو اپنی ذہنیت تبدیل کرنی چاہیے۔ ہر چیز پر ماتم کرنا ٹھیک نہیں ہے۔


      وکاس دوبے کو گذشتہ روز کی صبح اجین مہاکال مندر میں سکیورٹی اہلکاروں کے ذریعے ڈرامائی انداز میں پہچانا گیا اور پھر پولیس نے اسے اپنی گرفت میں لے لیا۔ پولیس نے اپنی گرفت میں لے کر اتر پردیش پولیس کو مطلع کر دیا تھا۔ دیر شام یوپی پولیس کی ٹیم اجین پہنچی اور ضروری کاروائی کے بعد وکاس کو اترپردیش پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔ پولیس ٹیم شام کے وقت وکاس دوبے کو لے کر اترپردیش روانہ ہو گئی تھی اور آج صبح کانپور علاقے میں اس کے مڈبھیڑ میں مارے جانے کی خبر آ گئی ہے۔
      Published by:Nadeem Ahmad
      First published: