ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : الیکٹری سٹی ترمیمی بل 2021 کے خلاف احتجاج ، ملازمین نے دی یہ بڑی وارننگ

محکمہ بجلی ملازمین مہا گٹھ بندھن کے کارگزار صدر وی ڈی گپتا کہتے ہیں کہ حکومت سرمایہ کاروں کو فائدہ پہنچانے کے لئے محکمہ بجلی کو پرائیوٹ سیکٹر میں دینے جا رہی ہے ۔ محکمہ بجلی کی نجی کاری سے عام صارفین کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا ، بلکہ موجودہ شرح سے بجلی تین سے چار گنا مہنگی ہو جائے گی ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : الیکٹری سٹی ترمیمی بل 2021 کے خلاف احتجاج ، ملازمین نے دی یہ بڑی وارننگ
مدھیہ پردیش : الیکٹری سٹی ترمیمی بل 2021 کے خلاف احتجاج ، ملازمین نے دی یہ بڑی وارننگ

بھوپال : مدھیہ پردیش محکمہ بجلی کے ملازمین نے الیکٹری سٹی ترمیمی بل 2021 کے خلاف ریاست گیرسطح پر احتجاج شروع کردیا ہے۔ پانچ نکاتی مطالبات کو لے کر محکمہ بجلی کے ملازمین نے راجدھانی بھوپال سمیت ریاست کے سبھی شہروں میں بارش کے بیچ نہ صرف احتجاج کیا ۔ بلکہ ایم ڈی کے توسط سے وزیر اعلی شیوراج سنگھ کے نام  میمورنڈم پیش کرتے ہوئے محکمہ بجلی کی نجی کاری کے فیصلہ کو واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے ۔ ملازمین نے اپنے مطالبات کو لے کر سات اگست کو پورے دن کام بند کرکے جہاں احتجاج کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ وہیں تیرہ اگست سے الیکٹری سٹی ترمیمی بل کے خلاف ریاست گیر سطح پر کام بند کرکے  غیر معینہ مدت کی ہڑتال کا انتباہ دیا ہے ۔


واضح رہے کہ محکمہ بجلی میں ملازمین کے حقوق کے لئے ابھی تک سترہ الگ الگ تنظیمیں کام کرتی تھیں ، مگر یہ پہلا موقع ہے جب سبھی تنظیموں نے الیکٹری سٹی ترمیمی بل کے خلاف مہا گٹھ بندھن کو تشکیل دیا ہے اور اسی کے بینرتلے ریاست گیر سطح پر تحریک چلانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔


محکمہ بجلی ملازمین مہا گٹھ بندھن کے کارگزار صدر وی ڈی گپتا کہتے ہیں کہ حکومت سرمایہ کاروں کو فائدہ پہنچانے کے لئے محکمہ بجلی کو پرائیوٹ سیکٹر میں دینے جا رہی ہے ۔ محکمہ بجلی کی نجی کاری سے عام صارفین کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا ، بلکہ موجودہ شرح سے بجلی تین سے چار گنا مہنگی ہو جائے گی ۔ یہی نہیں محکمہ بجلی میں جو ملازمین برسوں سے کام کر رہے ہیں ، انہیں بھی باہر کا راستہ دکھادیا جائے گا ۔


انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے ایم ڈی پاور کارپوریشن کے توسط سے محکمہ توانائی کے وزیر پردیومن سنگھ تومر اور سی ایم شیوراج سنگھ کو میمورنڈم بھیج دیا ہے ۔ اگر مطالبات منظور نہیں کئے جاتے ہیں ، تو سات اگست کو ایک روزہ ہڑتال کام بند کر کے ہوگی ۔ اس کے بعد تیرہ اگست سے غیرمعینہ مدت کی ہڑتال ہوگی ۔ مدھیہ پردیش میں بلیک آؤٹ ہوگا تو اس کی ذمہ دار سرکار خود ہوگی ۔

وہیں مدھیہ پردیش کے وزیر توانائی پردیومن سنگھ تومر کہتے ہیں کہ ملازمین کی ہڑتال کا میمورنڈم ابھی نہیں ملا ہے ۔ ملازمین کیا چاہتے ہیں ان سے بات کی جائے ۔ ہماری سرکار جمہوری طریقے سے سبھی سے بات کرنے اور مسئلے کا حل نکالنے میں یقین رکھتی ہے۔ ملازمین کی مانگیں واجب ہوں گی ، تو انہیں حل کیا جائے گا۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 27, 2021 08:41 PM IST