உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Madhya Pradesh: اے پی جےکلام کی تعلیمات میں ہندستان کی ترقی کا راز ہے مضمر

    Madhya Pradesh: اے پی جےکلام کی تعلیمات میں ہندستان کی ترقی کا راز ہے مضمر

    Madhya Pradesh: اے پی جےکلام کی تعلیمات میں ہندستان کی ترقی کا راز ہے مضمر

    مدھیہ پردیش سرو دھرم سدبھاؤنا منچ اور ایم پی جمعیت علما کے مشترکہ بینر تلے سابق صدر جمہوریہ ہند و ممتاز سانئنس داں ڈاکٹر اے پی جے ابوالکلام کی برسی کے موقع پر بھوپال میں شجرکاری کرتے ہوئے خراج عقیدت پیش کیا گیا ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Madhya Pradesh | Bhopal | Bhopal
    • Share this:
    بھوپال : سابق صدر جمہوریہ ہند و ممتاز اسپیس سائنسداں ڈاکٹر اے پی جے کلام کی برسی کے موقع پر بھوپال کی سماجی تنظیموں نے خراج عقیدت پیش کیا۔ مدھیہ پردیش سرو دھرم سدبھاؤنا منچ اور ایم پی جمعیت علما کے مشترکہ بینر تلے سابق صدر جمہوریہ ہند و ممتاز سانئنس داں ڈاکٹر اے پی جے ابوالکلام کی برسی کے موقع پر بھوپال میں شجرکاری کرتے ہوئے خراج عقیدت پیش کیا گیا ۔ دونوں تنظیموں کے ذریعہ بھوپال اقبال میدان میں ڈاکٹر اے پی جے کلام کی یاد میں شجرکاری کی گئی اور ان کے تعلیمی افکار و نظریات کو عام کرنے کا عہد کیا گیا۔ شجر کاری مہم سے قبل جمعیت علما کےاراکین نے اے پی جے کلام کے ایصال ثواب کے لئے قران خوانی بھی کی ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: شاعر فطرت کیف بھوپالی کی ادبی خدمات کو نصاب کا حصہ بنانے کا مطالبہ 


    مدھیہ پردیش جمعیت علما کے پریس سکریٹری حاجی محمد عمران کہتے ہیں کہ ہمارے لئے یہ فخر کی بات ہے کہ ڈاکٹر اے پی جے کلام جیسا عظیم سائنسداں ہندستان میں پیدا ہوا، جس نے اپنے علم کی مہارت سے ہندستان کا نام دنیا میں روشن کیا ۔ وہ صدر جمہوریہ ہند بھی رہے ہیں ۔ انہوں نے سائنس اور علم کے میدان میں جو کارہائے نمایاں انجام دئے ہیں ، ان کو آگے بڑھانے اور نئی کو اس سے جوڑنے کی ضرورت ہے تاکہ ہندستان کے ہر گھر میں اے پی جے کلام جیسا سائنسداں پیدا ہواور علم کے میدان میں ہندستان کا نام روشن کرے ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: سی بی ایس ای کی طرز پر MP syllabus سے بھی مغل تاریخ کو کیا جائے گا باہر


    وہیں سرودھرم سدبھاؤنا منچ کے رکن مانگی لال سینی نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن ہم سبھی لوگوں نے شجرکاری کرکے عظیم سائنسداں ڈاکٹر اے پی جے کلام کو یاد کیا ہے۔ ڈاکٹر اے پی جے کلام بھوپال بھی آئے تھے اور انہوں نے تعلیم کے میدان میں جو ہمیں نسخہ کیمیا دیا ہے اس پر کام کرنے کی ضرورت ہے۔

    سرو دھرم سدبھاؤنا منچ اور جمعیت علما کے ذریعہ مشترکہ طور پر شجرکاری کرکے انہیں یاد کیا گیا اور ان کی تعلیمات کو عام کرنے کا عہد کیا گیا ہے۔ ہم سبھی لوگوں نے ان کے درجات بلند ہونے دعائیں بھی کیں ہیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: