ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : کورونا قہر میں لاشوں کو اسپتال سے قبرستان و شمشان لے جانے کیلئے بھی نہیں مل رہی گاڑیاں

بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود کا کہنا ہے مجھ سے عوامی فلاح کے لئے جو ہوسکتا ہے وہ کر رہا ہوں ۔ حکومت کو مکر و فریب سے فرصت نہیں ہے ۔ ہر قدم پر وزیر اعلی اور وزیر صحت جھوٹ بول رہے ہیں ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : کورونا قہر میں لاشوں کو اسپتال سے قبرستان و شمشان لے جانے کیلئے بھی نہیں مل رہی گاڑیاں
کورونا قہر میں لاشوں کو اسپتال سے قبرستان و شمشان لے جانے کیلئے بھی نہیں مل رہی گاڑیاں

بھوپال : کورونا قہر میں راجدھانی بھوپال کے اسپتالوں میں آکسیجن اور ریمڈیسور انجیکشن کی قلت سے تو سبھی واقف ہیں ، مگر اس قہر میں کورونا سے ہونے والی اموات اور میت کو اسپتالوں سے قبرستان اور شمشان گھاٹ تک لے جانے کے لئے گاڑیوں کی عدم موجودگی نے عوامی مشکلات میں اور اضافہ کردیا ہے ۔ یومیہ طور پر بھوپال کے شمشان گھاٹ اور قبرستان میں سوا سو سے زیادہ لاشوں کی آخری رسومات کورونا پروٹوکال کے تحت کی جاتی ہیں ۔ اتنی بڑی تعداد میں کورونا سے ہونے والی اموات اور آخری رسومات کے لئے ہونے والی مشکلات کے سبب بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود نے بڑا قدم اٹھاتے ہوئے نئے اور پرانے بھوپال کے کئی گاڑیوں کا عطیہ کیا ہے ۔


بھوپال جھدا قبرستان کو کورونا سے ہونے والی اموات کی تدفین کے لئے ریزرو کیا گیا ہے۔ قبرستان کمیٹی کے صدر ریحان گولڈن کہتے ہیں کہ مقامی ایم ایل اے کے ذریعہ گاڑیوں کا عطیہ کرکے جو فلاحی قدم اٹھایا گیا ہے ، وہ بہت اہم ہے۔ سبھی لوگ دیکھتے تھے کہ میت کو اسپتال سے قبرستان تک لانے کے لئے کتنی مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔ کوئی آٹو میں تو کوئی ٹھیلے میں اور کوئی لوڈنگ آٹو میں رکھ کر جب اپنوں کی میت کو لاتا تھا تو اسے دیکھ کر بڑی تکلیف ہوتی تھی ۔


عارف مسعود نے نہ صرف جھدا قبرستان کمیٹی کو بلکہ بڑا باغ قبرستان کمیٹی کو اورشمشان گھاٹ کو بھی گاڑیوں کا یکساں طور پر عطیہ کیا ہے ۔ اللہ انہیں جزائے خیر عطا فرمائے اور ہم سب مل کر دعا کریں کہ اس وبائی بیماری کا خاتمہ ہو ۔ اب یہ منظر خدارا نہیں دیکھے جاتے ۔


وہیں بھوپال ایم ایل اے عارف مسعود کا کہنا ہے مجھ سے عوامی فلاح کے لئے جو ہوسکتا ہے وہ کر رہا ہوں ۔ حکومت کو مکر و فریب سے فرصت نہیں ہے ۔ ہر قدم پر وزیر اعلی اور وزیر صحت جھوٹ بول رہے ہیں ۔ اسپتالوں میں آکسیجن نہیں ، ریمڈیسور انجیکشن نہیں ہیں ، حد تو یہ ہے کہ لاشوں کو اسپتال سے قبرستان اور شمشان گھاٹ تک لے جانے کے لئے سرکار گاڑیاں تک مہیا نہیں کر پا رہی ہے ۔

میں نے وزیر اعلی چھتیس گڑھ کو بھی خط لکھ کر ایک ٹینکر آکسیجن یومیہ طور پر بھوپال کے عوام کے لئے دینے کا مطالبہ کیا ہے اور اس کی قیمت میں  خود ادا کروں گا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Apr 24, 2021 11:22 PM IST