உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوم عاشورہ پر ملک بھر میں امام بارگاہوں اور عزاخانوں میں مجالس کا انعقاد

    Youtube Video

    یوم عاشورہ آج پورے مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جا رہا ہے۔اس مناسبت سے مساجد، امام باگارہوں اور دیگر مقدس مقامات پر مجالس عزا کا انعقاد عمل میں لایا جارہا ہے

    • Share this:
      ملک بھر میں آج یو م عاشورہ بڑے ہی عقیدت و احترام سے منایا جا رہا ہے۔ حضرت امام حسین رضی اللہ تعالیٰ عنہ اور ان کے ساتھیوں نے اسلام کی سربلندی اور حق وصداقت کی بالا دستی کے لئے میدان کربلا میں اپنی جانوں کا نذرانہ پیش کر کے عظیم قربانی دی تھی جس کی یاد میں یوم عاشورہ آج پورے مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جا رہا ہے۔ اس مناسبت سے مساجد، امام باگارہوں اور دیگر مقدس مقامات پر مجالس عزا کا انعقاد عمل میں لایا جارہا ہے، جہاں علمائے کرام اور ذاکرین عظام حضرت امام حسین کی سیرت طیبہ پر روشنی ڈال رہے ہیں اور آپ کے فضائل و مصائب بیان کر رہے ہیں۔ حالانکہ دہلی ، یوپی ،بھوپال سمیت کئی ریاستوں میں کووڈ نائنٹین گائیڈلائنس کے تحت یوم عاشورہ کے جلوسوں پرپابندی لگائی گئی ہے۔ تاہم تلنگانہ حکومت نے عاشورہ کے جلوس پر کسی بھی طرح کی پابندی عائد نہیں کی ہے۔ وہیں ،مہاراشٹر حکومت نے بھی ممبئی میں عاشورہ کے جلوس کی کچھ پابندیوں کے ساتھ اجازت دی ہے۔

      مدھیہ پردیش میں یوم عاشورہ پر روایتی ماتمی جلوس نہیں نکلے گا۔ حکومت کی جانب سے کورونا کے سبب ریاست کے سبھی اضلاع میں جلوس اور چل سمارہ پر پابندی کا نفاذ کئے جانے کے سبب انجمن عباسیہ کی جانب سے روایتی جلوس نہیں نکالنے کا فیصلہ کیاگیا ہے۔ ریاست کے تین سترہ مقامات پر عاشورہ کے دن بھی مجالس کا انعقاد کیا جائے گا ۔حکومت کی جانب سے علم اور تعزیہ کو جلوس کی شکل میں لے جانے کی اجازت تو نہیں دی گئی ہے لیکن انفرادی طور پر کربلا تک تعزیہ لے جانے کی اجازت دی گئی ہے ۔حالانکہ حکومت کی جانب سے عاشورہ کے موقعہ پر تعطیل کا اعلان کیاگیا ہے۔

      مدھیہ پردیش حکومت نے یوم عاشورہ پر تعطیل کا اعلان کرکے جہاں لوگوں کو خوشی کا موقع فراہم کیا تھا وہیں عاشورہ پر نکلنے والے روایتی جلوس پر پابندی کا نفاذ کرنے سے کافور ہوگئیں ہیں۔

      مدھیہ پردیش میں گزشتہ سال کی طرح امسال بھی محرم کی مجالس کا انعقاد کووڈ 19 کی حکومت کی گائیڈ لائن کے بیچ کیا جارہا ہے ۔ راجدھانی بھوپال کے 22 مقامات سمیت ریاست کے 317 مقامات پر محرم کی مجالس کا انعقاد کیا جا رہا ہے ۔ محرم کی مجلس صرف شہدائے کربلا کی عظیم قربانیوں کو قریب سے جاننے کا ہی موقع نہیں ملتا ہے بلکہ محرم کی مجالس کے ذریعہ اسلام کی حقیقی تعلیمات کو جس طرح سے عام کیا جاتا ہے اس کی نظیر کہیں اور نہیں ملتی ہے ۔

      نوابوں کی نگری بھوپال میں امسال کووڈ 19 کی پابندیوں کے سبب امام بارگاہوں اور اعزا خانوں میں محرم کی مجالس کا انعقاد روایتی انداز میں کئے جانے کے ساتھ آن لائن مجلس سننے کا بھی اہتمام کیا گیا ہے ۔ بھوپال فتح گڑھ امام باڑہ کے امام مولانا سید رضی الحسین حیدری کہتے ہیں کہ محرم کی مجالس میں صرف امام حسین علیہ السلام ، اہل بیت اور کربلا کے واقعات کو ہی بیان نہیں کیا جاتا ہے بلکہ اس کے ذریعہ اسلام کی وہ حقیقی تعلیم بیان کی جاتی ہے ، جس سے آج کی نئی نسل دور ہوتی جا رہی ہے ۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: