ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مسلم خاتون نے خود کو بتایا ہندو اور پجاری کے ساتھ کر لیا یہ کام، اڑ جائیں گے ہوش

راج گڑھ ضلع میں ایک لٹیری دلہن پکڑی گئی۔ اس لٹیری دلہن نے خود کو ہندو بتایا اور دھوکہ دیکر ہندو پجاری سے شادی کرلی۔

  • Share this:
مسلم خاتون نے خود کو بتایا ہندو اور پجاری کے ساتھ کر لیا یہ کام، اڑ جائیں گے ہوش
لڑکی کے والد نے باہر کمرے کا دروازہ بند کرکے گاؤں والوں کو موقع پر بلالیا۔ گاؤں نے پنچایت بلاکر دونوں کی شادی بڈگاؤں کے مندر میں کرادی۔

راج گڑھ ضلع میں ایک لٹیری دلہن پکڑی گئی۔ اس لٹیری دلہن نے خود کو ہندو بتایا اور دھوکہ دیکر ہندو پجاری سے شادی کرلی۔ شادی کے اگلے دن ہی وہ خاموشی سے فرار ہونے کی فراق میں تھی کہ اس کو پولیس کے حوالے کر دیا گیا۔

معاملہ راج گڑھ کے کھلچی پور کا ہے۔ یہاں گادیا کلا گاؤں میں رہنے والے پجاری اشوک نے گاں کے ہی نارائن سنگھ سے اپنا رشتہ کرانے کی بات کہی۔ نارائن گاؤں کے لوگوں کیلئے رشتے بتاتا ہے۔ لوگ اسے دلال کہتے ہیں۔ نارائن نے اشوک کی مجبوری کا فائدہ اٹھایا اور حنا خان نام کی خاتون کو پجاری سے ملوایا۔ حنا کا نام گیتا اور ہندو مذہب کا بتایا گیا۔ نارائن نے دونوں کا رشتہ طے کردیا اور راج گڑھ میں دونوں کی شادی کرادی۔ اس رشتے کے بدلے نارائن نے سوا لاکھ روپئے پجاری اشوک سے اینٹھ لئے اور رفوچکر ہوگیا۔

شادی کے بعد حنا عرف گیتا اپنے شوہر کے ساتھ اس کے گاؤں گادیا کلا تو چلی گئی لیکن اگلے ہی دن بیماری کا بہانہ بنا کر کھلچی پور چلنے کیلئے کہا۔ وہاں پہنچتے ہی حنا نے بھاگنے کی کوشش کی۔ پجاری اشوک نے اسے روکنے کی کوشش کی تو ہنگامہ ہوگیا۔ بات پولیس تک پہنچ گئی۔ پولیس نے پوچھ۔گچھ کی تو لٹیری دلہن نے سچ اگل دیا۔ اس نے بتایا کہ وہ دراصل گیتا نہیں حنا ہے اور پہلے سے شادی شدہ ہے۔ وہ چھندواڑہ کی رہنے والی ہے۔

First published: Jul 16, 2019 02:38 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading