ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کورونا وبا کے دوران ہوسکوٹے مسلم جماعت کی مثالی خدمت، کامیاب طریقہ سے چلایا کووڈ سینٹر، تعلقہ انتظامیہ نے کی ستائش

مقامی انتظامیہ کی منظوری اور محکمہ صحت کے گائڈ لائنس کے مطابق الامین ہائی اسکول کی عمارت میں جولائی 2020 میں کووڈ کیئر سینٹر شروع کیا گیا۔ محکمہ صحت نے دو ماہ کے دوران231 کورونا کے مریضوں کو اس سینٹر میں بھرتی کیا۔ تمام متاثرین کو مفت علاج اور طبی سہولیات کے ساتھ ساتھ صبح کا ناشتہ، دوپہر اور رات کا کھانا( ویج اور نان ویج کھانا) گرم پانی، انرجی اور ایمونیٹی بوسٹر کی اشیاء یہاں فراہم کی گئیں۔

  • Share this:
کورونا وبا کے دوران ہوسکوٹے مسلم جماعت کی مثالی خدمت، کامیاب طریقہ سے چلایا کووڈ سینٹر، تعلقہ انتظامیہ نے کی ستائش
کورونا وبا کے دوران ہوسکوٹے مسلم جماعت کی مثالی خدمت، کامیاب طریقہ سے چلایا کووڈ سینٹر

بنگلورو سے 30 کیلو میٹر کی دوری پر واقع ہوسکوٹے شہر میں مسلم جماعت نے خدمت خلق کی بہترین مثال پیش کی ہے۔ الامین ہائی اسکول کے وسیع کیمپس کی ایک عمارت میں مسلم جماعت نے 2 ماہ تک کووڈ سینٹر قائم کرتے ہوئے کورونا کے متاثرین کا مفت علاج، قیام وطعام کا مفت انتظام کیا۔ کورونا کی وبا تیزی کے ساتھ پھیلنے کے بعد جیسے جیسے مریضوں کی تعداد بڑھنے لگی ہوسکوٹے کی مختلف مسلم جماعتوں اور تنظیموں نے مل کر ایک اہم میٹنگ منعقد کی۔ یہاں کورونا کے مریضوں کو دور دراز کے کووڈ سینٹروں میں بھرتی کیا جارہا تھا۔ لہذا مقامی مسلمانوں نے مل کر یہ فیصلہ لیا کہ ملت کی جانب سے کووڈ کیئر سینٹر شروع کیا جائے۔ اس کیلئے تعلقہ انتظامیہ اور مقامی محکمہ صحت سے رجوع ہوکر کووڈ کیئر سینٹر کے قیام کیلئے اجازت حاصل کی گئی۔


مقامی انتظامیہ کی منظوری اور محکمہ صحت کے گائڈ لائنس کے مطابق الامین ہائی اسکول کی عمارت میں جولائی 2020 میں کووڈ کیئر سینٹر شروع کیا گیا۔ محکمہ صحت نے دو ماہ کے دوران231 کورونا کے مریضوں کو اس سینٹر میں بھرتی کیا۔ تمام متاثرین کو مفت علاج اور طبی سہولیات کے ساتھ ساتھ  صبح کا ناشتہ، دوپہر اور رات کا کھانا( ویج اور نان ویج کھانا) گرم پانی، انرجی اور ایمونیٹی بوسٹر کی اشیاء یہاں فراہم کی گئیں۔ اس کووڈ سینٹر کے تمام اخراجات ہوسکوٹے مسلم فورم نے برداشت کئے۔


سینٹر کے خازن ڈاکٹر سید مزمل احمد نے کہا کہ ہوسکوٹے شہر کی پوری مسلم جماعت نے مل کر تن، من، دھن سے اس سینٹر کو چلایا اور متاثرین کی ایسی خدمت کی گئی کہ سب کے سب صحت یاب ہو کر اپنے اپنے گھروں کو لوٹ گئے ہیں۔میڈیکل انچارج ڈاکٹر نور خان نے کہا کہ بلا لحاظ مذہب و ملت خدمت کی گئی ہے۔ اس سینٹر میں بھرتی کئے گئے مریضوں میں ہندو، مسلم سبھی مذاہب کے افراد شامل تھے۔ دو ماہ تک یہاں محکمہ صحت کے عملہ اور مقامی رضاکاروں نے دن اور رات محنت کی ہے۔ کووڈ کیئر سینٹر کے انتظامات کیلئے بنائی گئی کمیٹی کے رکن شہرت خان نے کہا کہ چونکہ یہ سینٹر ہائی اسکول کی عمارت میں بنایا گیا تھا، اب دوبارہ تعلیمی ادارے کھلنے والے ہیں اور کورونا کی وبا بھی قابو میں آرہی ہے اس لئے اس سینٹر کے اختتام کا اعلان کیا گیا ہے۔


مولانا شاہد ندوی نے کہا کہ مسلم فورم نے جو خدمت انجام دی ہے وہ خدا کو راضی کرنے کیلئے تھی۔ خلوص اور خدمت خلق کے جذبہ کے ساتھ سب نے مل کر کام کیا اور یہاں داخل ہوئے تمام مریضوں کو شفایابی حاصل ہوئی ہے، اس کیلئے تمام منتظمین اللہ تعالٰی کا شکریہ بجا لاتے ہیں۔ کورونا سینٹر کے اختتام پر مسلم فورم نے الامین ہائی اسکول کے احاطے میں تقریب منعقد کی۔ اس موقع پر مقامی تحصیلدار گیتا کی موجودگی میں کووڈ سینٹر میں دن اور رات خدمت انجام دینے والے ڈاکٹروں، نرسوں اور ہیلتھ ورکروں کو تہنیت پیش کی گئی۔ ہوسکوٹے تعلقہ کی تحصیلدار گیتا نے کہا کہ کووڈ 19 وبا کے دوران مسلم فورم نے ہماری بہت مدد کی ہے۔ حکومت کا ہاتھ بٹایا ہے۔ دو ماہ تک  کورونا کے مریضوں کی یہاں بہترین طریقہ سے خدمت انجام دی گئی ہے۔ اس کیلئے تعلقہ انتظامیہ مسلم فورم کا شکریہ ادا کرتی ہے۔تعلقہ ہیلتھ افسر ڈاکٹر  منجوناتھ،  ڈاکٹر زلیخا نے بھی مسلم فورم کی خدمات کی ستائش کی۔ ڈاکٹر سید مزمل نے کووڈ سینٹر کیلئے جگہ فراہم کرنے پر الامین ایجوکیشنل سوسائٹی کے بانی اور چیرمین ڈاکٹر ممتاز احمد خان، سکریٹری سبحان شریف کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا۔

یہ بات بار بار کہی گئی ہے کہ کورونا وائرس کی بیماری کے خلاف سب کو مل جل کر لڑنے کی ضرورت ہے۔ حکومت کے ساتھ ساتھ عوام کو بھی اپنا رول ادا کرنے کی ضرورت ہے۔ اس بات کا عملی مظاہرہ ہوسکوٹے شہر میں مسلم جماعت کے تحت دیکھنے کو ملا ہے۔
Published by: Nadeem Ahmad
First published: Sep 03, 2020 09:36 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading