உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    امن کے قیام میں صوفیانہ موسیقی ادا کرتی ہے بنیاد کا کردار، سپتک فائن آرٹ سوسائٹی کے زیر اہتمام Bhopal میں رنگ صوفیانہ کا انعقاد

    واضح رہے کہ بھوپال میں سپتک فائن آرٹ سو سائٹی کا قیام انیس سو پنچانوے میں بیگم خورشید سکندر بخت کے ذریعہ اس لئے کیا گیاتھا تاکہ نئی نسل کے بچوں کو موسیقی کی تربیت دی جا سکے اور یہ بچے صوفیانہ کلام کے ذریعہ سماج میں آپسی بھائی چارہ کی فضا کو فروغ دے سکیں ۔

    واضح رہے کہ بھوپال میں سپتک فائن آرٹ سو سائٹی کا قیام انیس سو پنچانوے میں بیگم خورشید سکندر بخت کے ذریعہ اس لئے کیا گیاتھا تاکہ نئی نسل کے بچوں کو موسیقی کی تربیت دی جا سکے اور یہ بچے صوفیانہ کلام کے ذریعہ سماج میں آپسی بھائی چارہ کی فضا کو فروغ دے سکیں ۔

    واضح رہے کہ بھوپال میں سپتک فائن آرٹ سو سائٹی کا قیام انیس سو پنچانوے میں بیگم خورشید سکندر بخت کے ذریعہ اس لئے کیا گیاتھا تاکہ نئی نسل کے بچوں کو موسیقی کی تربیت دی جا سکے اور یہ بچے صوفیانہ کلام کے ذریعہ سماج میں آپسی بھائی چارہ کی فضا کو فروغ دے سکیں ۔

    • Share this:
    اکیسویں صدی میں جہاں سائنسی انقلابات سے دنیا کی تعمیر و ترقی میں چار چاند لگے ہیں وہیں معدی خواہشات کی تکمیل میں انسان بارود کے ڈھیر پر بیٹھ گئے ہیں ۔ایسے میں دنیا کو نہ صرف صوفیاکی تعلیم کی ضرورت ہے بلکہ صوفیانہ موسیقی سے روحانی علاج کے ساتھ قیام امن کو فروغ دیا جا سکتا ہے ۔ ان خیالات کا اظہار بھوپال میں منعقدہ سپتک فائن آرٹ سو سائٹی رنگ صوفیانہ کی محفل میں ماہرین موسیقی نے کیا۔ واضح رہے کہ بھوپال میں سپتک فائن آرٹ سو سائٹی کا قیام انیس سو پنچانوے میں بیگم خورشید سکندر بخت کے ذریعہ اس لئے کیا گیاتھا تاکہ نئی نسل کے بچوں کو موسیقی کی تربیت دی جا سکے اور یہ بچے صوفیانہ کلام کے ذریعہ سماج میں آپسی بھائی چارہ کی فضا کو فروغ دے سکیں ۔ بیگم خورشید سکندر بخت کے انتقال کے بعد بھی سو سائٹی اپنے مقاصد پر گامزن ہے اور یہ بھوپال کی واحد تنظیم ہے جہاں بچوں کو موسیقی کی تعلیم پروفیشنل انداز میں دی جاتی ہے ۔سو سائٹی کے پروگرام میں موسیقی،زبان وادب ،سماجی خدمت،ڈرامہ و فلم اور محکمہ پولیس میں نمایاں خدمات انجام دینے کے لئے چھ شخصیات کو اعزاز سے سرفراز کیاگیا۔
    سپتک فائن آرٹ سو سائٹی کے ذریعہ چھ شخصیات کو بیگم خورشید سکندر بخت قومی ایوارڈ سے سرفراز کیاگیا۔ شاعری و ادب کے میدان میں نمایاں خدمات کے لئے ڈاکٹر نصرت مہدی،محکمہ پولیس میں کورونا قہر میں نمایاں حدمات کے لئے بھوپال سی ایس پی بٹو شرما،ڈرامہ و فلم میں نماں کارکردگی کے لئے سرفراز حسن،صحافت اور تحقیق کے میدان میں نمایاں حدمات کے لئے نیو زایٹین اردو کے اسپیشل کریسپانڈنٹ ڈاکٹر مہتاب عالم ،سماجی خدمات کے لئے مدھیہ پردیش ہومیو پیتھی کونسل کی ڈائریکٹر ڈاکٹر عائشہ علی اور غریب بچوں کو مفت تعلیمی مواقع فراہم کرنے کے لئے موہن سنگھ کالرا کو ایوارڈ سے سرفراز کیاگیا۔
    سپتک فائن آرٹ سو سائٹی کے سکریٹری شجاعت حسین ندید کہتے ہیں کہ بیگم خورشید سکندر بخت کے خوابوں کی تکیمل ہمارے فرائص میں شامل ہے ۔انہوں نے ایک ایسے وقت میں بھوپال میں موسیقی کو سیکھنے کے لئے مفت انتظام کیاتھا جب لوگ اس کا تصور بھی نہیں کرتے ہیں ۔آج سپتک فائن آرٹ سو سائٹی کے تربیت یافتہ طلبا ملک و بیرون ملک میں موسیقی کے میدان میں نام روشن کر رہے ہیں ۔ہمارے لئے خوشی کہ بات ہے کہ آج سو سائٹی نے ان چھ لوگوں کا اعزازکیا ہے جو سماج کے لئے مارگ درشی ہے ۔ ان سے نوجوانوں کو سماج کی خدمت کرنے اور آگے بڑھنے کا موقع ملتا ہے۔
    سماجی کارکن اور فن موسیقی کے دلداہ موہن سنگھ کالراکہتے ہیں کہ موسیقی تو در اصل روح کی غذا ہے۔ میرا یہاں پر آنا کامیاب رہا ۔یہاں پر موسیقی کے طلبا نے حضرت امیر خسرو اور دوسرے عظیم لوگوں کے صوفیانہ کلام کو جس طرح سے پیش کیا ہے اس نے روح خوش کردیا ہے ۔ہم تو یہ چاہتے ہیں کہ اس طرح کے پروگرام کا کثرت سے انعقاد کیا جانا چاہیئے تاکہ روح کی تسکین ہو سکے۔

    وہیں معروف ڈرامہ و فلم آرٹسٹ سرفراز حسن کہتے ہیں کہ صوفیا کی تعلیم ہو یا رنگ صوفیانہ کی محفل ۔یہاں پر صلح کل کا پیغام دیا جاتا ہے ۔ یہاں آکر مذہب کا بندھن ختم ہوجاتا ہے اور سبھی ایک محبت کے بندھن میں بدھتے ہیں ۔اور سچ پوچھیے تو اسی کی سماج کو ضرورت ہے۔ پروگرام کے مہمان خصوصی و بھوپال کے سابق رکن پارلیمنٹ آلوک سنجر کہتے ہیں کہ سپتک سب تک انسانییت کے پیغام کو عام کرنے کا جس طرح سے کام کر رہی ہے وہ قابل ستائیش ہے ۔بھارت صوفی سنتوں کا دیش ہے اور صوفی سنتوں نے بھارت کو جو سندیش ہے اسی میں بھارت کی ہمہ جہت ترقی کا راز پوشیدہ ہے ۔
    بھوپال رنگ شری میں منعقدہ سپتک فائن آرٹ سو سائٹی کی رنگ صوفیانہ کی محفل میں آر ایس اوبیجا، شجاعت حسین،علی راشد،مظہرخان،اروشی کنڈارے،نوید حسن،ریحان انصاری ،ریتو جین اور ساتھیوں نے اپنے فن سے رنگ صوفیانہ کی محفل کا رنگ دوبالا کیا۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: