உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    سر سید کے تعلیمی نظریہ سے ہوگی ہندستان کی سربلندی، یوم ولادت پر بھوپال میں ہوگا قومی سمینار کا انعقاد

    سر سید کے تعلیمی نظریہ سے ہوگی ہندستان کی سربلندی، یوم ولادت پر بھوپال میں ہوگا قومی سمینار کا انعقاد

    سر سید کے تعلیمی نظریہ سے ہوگی ہندستان کی سربلندی، یوم ولادت پر بھوپال میں ہوگا قومی سمینار کا انعقاد

    چھتیس گڑھ کے سابق ڈی جی پی ایم ڈبلیو انصاری کہتے ہیں کہ سر سید احمد خان نے ایک ایسے وقت میں ملک کو سائنسی علوم کو حاصل کرنے کا فلسفہ دیا تھا جب ملک کی بڑی آبادی فرسودہ نظام تعلیم سے وابستہ تھی ۔

    • Share this:
    بھوپال : سر سید احمد خان ایک عظیم مفکر، مدبر، مصلح قوم، انشا پرداز اور ہندستانیوں کی تعلیمی سر بلندی کے ایسے معمار تھے ، جس کا اب تک کوئی ثانی پیدا نہیں ہو سکا۔ سر سید احمد خان نے ہندستانیوں کی سر بلندی کے لئے جدید علوم کا جو خاکہ صدی قبل تیار کیا تھا ، اس کی معنویت میں وقت کے ساتھ نہ صرف اضافہ ہو تا جا رہا ہے بلکہ اس کے روشن نقوش میں ملک کی یکجہتی و سالمتی کے ساتھ ہندستانیوں کی تعلیمی ترقی کا راز بھی پوشیدہ ہے ۔ اے ایم یو اولڈ بوائز ایسوسی ایشن نے سر سید احمد خان کی دو سو چارویں یوم ولادت کے موقع پربھوپال میں قومی سمینارکے انعقاد کا فیصلہ کیا ہے ۔ قومی سمینار کا انعقاد سترہ اکتوبر کو بھوپال میں ہوگا اور اس میں ملک بھرکے ممتاز دانشور شرکت کریں گے۔ قومی سمینار کی تیاریوں کولے کر بھوپال میں اے ایم یو اولڈ بوائز ایسوسی ایشن کی کور گروپ کی میٹنگ کا انعقاد کیا گیا۔

    سینئر علیگیرین اور چھتیس گڑھ کے سابق ڈی جی پی ایم ڈبلیو انصاری کہتے ہیں کہ سر سید احمد خان نے ایک ایسے وقت میں ملک کو سائنسی علوم کو حاصل کرنے کا فلسفہ دیا تھا جب ملک کی بڑی آبادی فرسودہ نظام تعلیم سے وابستہ تھی ۔ ملک کے نوجوانوں میں سائنسی مزاج پیدا کرنا اور یکجہتی کے جذبہ کو وقت کے ساتھ فروغ دینے یہ وقت کی سب سے بڑی ضرورت ہے ۔

    اے ایم یو اولڈ بوائزایسوسی ایشن بھوپال کے صدر قاضی اقبال کہتے ہیں کہ سر سید کے افکار و نظریات کی معنویت پہلے سے زیادہ بڑھ گئی ہے ، ایسے میں علی گڑھ کے طلبہ کی ذمہ داریاں بھی بڑھ جاتی ہیں کہ وہ سر سید کے نظریہ تعلیم کو ملک و بیرون ملک میں پھیلائیں تاکہ دنیا اس کی روشنی میں اپنا سفر طے کر سکے ۔ سترہ اکتوبر کو بھوپال میں قومی سمینار کا انعقاد ہوگا ۔ سمینار میں سر سید کے افکار ونظریات کے ساتھ سر سید کی حب الوطنی،سر سید اور تعلیم نسواں،سرسید اور سائنسی علوم کے موضوعات پر دانشور اپنا مقالہ پیش کریں گے ۔

    اے ایم یو اولڈ بوائز ایسوسی ایشن کے اہم رکن بھوپال شفاخانہ کے ڈائریکٹر ڈاکٹر محمد اعظم کہتے ہیں کہ سر سید کا نظریہ تعلیم ایک ایسا نسخہ  کیمیا ہے ، جس پر چلنے والا کبھی ناکام نہیں ہوتا ہے ۔ جس نے بھی اس نسخہ کیمیا سے اپنا رشتہ استوار کیا وہ سرخرو ہو گیا ۔ نسخہ کیمیا کے ساتھ سر سید کا بڑا احسان اردو زبان پر بھی ہے ۔ سر سید نے اس زمانے میں ہندو اور مسلمان کو ایک خوبصورت دلہن کی دو خوبصورت آنکھوں سے تعبیر کیا تھا ۔اب جبکہ ملک میں کچھ ایسی ہوائیں چل رہی ہیں ایسے میں دلہن کی خوبصورتی کو بچانا ہمارا فرض اولین ہے۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: