ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

باغی ارکان اسمبلی کو منانے بنگلورو گئے وزیر جیتو پٹواری اور لکھن سنگھ کے ساتھ مار پیٹ

کانگریس لیڈروں نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ بھوپال سے جیتو پٹواری کے علاوہ ایک اور وزیر لاكھن سنگھ اور ایک رکن اسمبلی کے والد بنگلورو گئے ہوئے ہیں جہاں پولیس نے تینوں کو گرفتار کر لیا۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 12, 2020 05:20 PM IST
  • Share this:
باغی ارکان اسمبلی کو منانے بنگلورو گئے وزیر جیتو پٹواری اور لکھن سنگھ کے ساتھ مار پیٹ
بنگلورو میں جیتو پٹواری اور لکھن سنگھ گرفتار

بھوپال۔ سیاسی اتھل پتھل کے درمیان مدھیہ پردیش میں حکمراں پارٹی کانگریس نے آج سنگین الزام لگاتے ہوئے کہا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے زیر انتظام کرناٹک کے دارالحکومت بنگلورو کی پولیس نے وہاں پہنچے مدھیہ پردیش کے وزیر جیتو پٹواری کے ساتھ مارپیٹ کی اور انہیں گرفتار کر لیا۔ پردیش کانگریس کے دفتر میں منعقد پریس کانفرنس میں راجیہ سبھا ممبر پارلیمنٹ اور سینئر وکیل وویک تنكھا، سینئر لیڈر دگ وجے سنگھ اور ریاستی کانگریس میڈیا ڈپارٹمنٹ کی صدر شوبھا اوجھا نے یہ الزام عائد کئے۔ کانگریس لیڈروں نے اس سلسلہ میں دو ويڈيو بھی دکھائے جس میں ایک پولیس افسر اور جیتو پٹواری کے درمیان تیز تیز آواز میں باتیں کرتے دیکھے جا رہے ہیں۔ ایک اور ویڈیو میں پولیس جیتو پٹواری کو ایک بس میں بٹھاتی ہوئی نظر آ رہی ہے۔



کانگریس لیڈروں نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ بھوپال سے جیتو پٹواری کے علاوہ ایک اور وزیر لاكھن سنگھ اور ایک رکن اسمبلی کے والد بنگلورو گئے ہوئے ہیں جہاں پولیس نے تینوں کو گرفتار کر لیا۔

 
First published: Mar 12, 2020 05:19 PM IST