உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پنچایت و بلدیاتی انتخابات میں OBC ریزرویشن کے معاملہ میں سپریم کورٹ کے فیصلہ کے بعد مدھیہ پردیش میں چھڑا سیاسی گھمسان

    OBC ریزرویشن کے معاملہ میں سپریم کورٹ کے فیصلہ کے بعد مدھیہ پردیش میں چھڑا سیاسی گھمسان

    OBC ریزرویشن کے معاملہ میں سپریم کورٹ کے فیصلہ کے بعد مدھیہ پردیش میں چھڑا سیاسی گھمسان

    Bhopal News: سپریم کورٹ کے فیصلہ کے بعد وزیر اعلی شیوراج سنگھ عدالت کے فیصلہ کا باریکی سے مطالعہ کرنے اور ریویو پٹیشن دائر کرنے کا جہاں اعلان کیا ہے ، وہیں کانگریس نے سپریم کورٹ کے ذریعہ اوبی سی ریزرویشن کے بغیر پنچایت و بلدیاتی اداروں کے انتخاب کرانے کے فیصلہ کو حکومت کی ناکامی سے تعبیر کیا ہے۔

    • Share this:
    بھوپال : مدھیہ پردیش کے پنچایت اور بلدیاتی اداروں میں اوبی سی ریزرویشن کے بغیرانتخابات کرانے کے سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد مدھیہ پردیش میں بی جے پی اور کانگریس کے درمیان سیاسی گھمسان چھڑ گیا ہے۔ اوبی سی ووٹرس کو لیکر دونوں پارٹیوں کے ذریعہ جہاں خود کو اوبی سی کا سب سے بڑا ہمدرد بتانے کی ہوڑ سی لگ گئی ہے ۔ سپریم کورٹ کے فیصلہ کے بعد وزیر اعلی شیوراج سنگھ عدالت کے فیصلہ کا باریکی سے مطالعہ کرنے اور ریویو پٹیشن دائر کرنے کا جہاں اعلان کیا ہے ، وہیں کانگریس نے سپریم کورٹ کے ذریعہ اوبی سی ریزرویشن کے بغیر پنچایت و بلدیاتی اداروں کے انتخاب کرانے کے فیصلہ کو حکومت کی ناکامی سے تعبیر کیا ہے۔

     

    یہ بھی پڑھئے : حج قرعہ میں نام آنے کے بعد مدھیہ پردیش میں  19 عازمین نے واپس لیا نام، جانئے کیوں


    مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ نے پنچایت و بلدیاتی اداروں میں اوبی سی ریزرویشن کے بغیر انتخابات کرانے کے سپریم کورٹ کے فیصلہ پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ ابھی آیا ہے ۔ فیصلہ کا ابھی ہم نے باریک بینی سے مطالعہ نہیں کیا ہے ۔لیکن اوبی سی ریزرویشن کے ساتھ پنچایت کے انتخابات ہوں ، اس کے لئے ریویو پٹیشن ہم دائر کریں گے اور ہم عدالت سے رجوع کریں گے کہ مقامی بلدیاتی اور پنچایت کے انتخابات اوبی سی ریزرویشن کے ساتھ ہوں ۔

     

    یہ بھی پڑھئے: اسلام میں مردوخواتین کو یکساں حقوق، مساجد میں خواتین کی امامت کو یقینی بنایا جائے


    وہیں مدھیہ پردیش کانگریس کے ترجمان و اوبی سی معاملہ کو لیکر سپریم کورٹ میں عرضی گزار سید جعفر نے نیوز18 اردو سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ پنچایت اور بلدیاتی اداروں کے انتخابات  پندرہ دن میں ہوں یہ احکام آج سپریم کورٹ نے دیا ہے ۔ سپریم کورٹ کا یہ فیصلہ ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر کے بنائے ہوئے آئین کی جیت ہے ۔ سپریم کورٹ کا یہ فیصلہ ان سرکاروں کے منھ پر طماچہ ہے ، جو ہندوستان کے آئین کے خلاف کام کرتے ہیں ۔ مسلسل دو بار سپریم کورٹ نے پنچایت انتخابات کو لے کر ایم پی حکومت کو پھٹکار لگائی ہے ۔ جہاں تک اوبی سی ریزرویش کا معاملہ ہے ، اس میں صوبہ کی بی جے پی سرکار کی بڑی ایڈمنسٹریٹو چوک ہے یا سازش ہے ، اس کا خلاصہ ہم جلد کریں گے ۔

    واضح رہے کہ سپریم کورٹ کے احکام کے بعد اسٹیٹ الیکشن کمیشن نے مقامی بلدیاتی اور پنچایت انتخابات کو لیکر اپنی تیاریاں تیز کردی ہیں ، مگر اوبی سی ریزرویشن کو لے کر صوبہ کی سیاست میں سیاسی گھمسان اپنے شباب پر ہے ۔ مدھیہ پردیش کی دو سو تیس اسمبلی سیٹوں میں سے ایک سو بیس سیٹیں ایسی ہیں جن کافیصلہ اوبی سی ووٹرس کے ذریعہ کیا جاتا ہے ۔ یہی وجہ ہے کہ اوبی سی ووٹرس کو دونوں ہی پارٹیاں اپنے دامن سے لگائے رکھنا چاہتی ہیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: