உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کانگریس کی قومی ترجمان کے ذریعے مغل کو اچھا کہنے پر چھڑا سیاسی گھماسان

    بی جے پی نے کانگریس ترجما ن کے بیان کو چال چرترسے تعبیر کرتے ہوئے قراردیا ذہنی دیوالیہ پن

    بی جے پی نے کانگریس ترجما ن کے بیان کو چال چرترسے تعبیر کرتے ہوئے قراردیا ذہنی دیوالیہ پن

    ۔کانگریس ترجمان سپریا شری نیت کا کہنا ہے کہ سبھی مغل حکمراں برے نہیں تھے ،ان میں سے کچھ اچھے بھی تھے جنہوں نے ملک میں اچھے کام کئے اور تاریخی عمارتیں تعمیر کروائیں اور ان کے عہد میں ملک کی جی ڈی پی بہت اچھی تھی ۔

    • Share this:
    کانگریس کی قومی ترجمان سپریا شری نیت کے ذریعہ مغل حکمرانوں کو اچھا بتائے جانے کے بعد مدھیہ پردیش میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان سیا سی گھسمان چھڑ گیا ہے ۔کانگریس ترجمان سپریا شری نیت کا کہنا ہے کہ سبھی مغل حکمراں برے نہیں تھے ،ان میں سے کچھ اچھے بھی تھے جنہوں نے ملک میں اچھے کام کئے اور تاریخی عمارتیں تعمیر کروائیں اور ان کے عہد میں ملک کی جی ڈی پی بہت اچھی تھی ۔وہیں کانگریس ترجمان کے ذریعہ مغلوں کو اچھا بتانے پر بی جے پی نے کانگریس ترجمان پر جوابی حملہ کیا ہے ۔ مدھیہ پردیش بی جے پی ترجمان نیہا بگا نے کانگریس ترجمان سپریا شری نیت نے کے بیان پر اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ سپریا کے بان پر حیرت نہیں ہوتی ہے بلکہ انہوں نے وہی کہا ہے جو کانگریس کا چال اور چرتر ہے ۔یہ وہی کانگریس ہے جس کے رہنما دہشت گردوں کو جی، جناب اور صاحب لگا کر بات کرتےہیں اور ہندتو کا تقابل آئی ایس آئی ایس جیسی دہشت گرد تنظیم سے کرتے ہیں۔
    واضح رہے کہ کانگریس کی قومی ترجمان سپریا شری نیت نے بھوپال پی سی سی میں منعقد ہ پریس کانفرنس میں صحافیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جن مغل حکمرانوں نے حملہ کیا اور زور زبردستی کی انکا نام کوئی نہیں لیتا ہے لیکن اکبر کا نام تو ہم سب لیتے ہیں اس میں کیا خرابی ہے۔م غل ہونا خراب ہے کیا ،میں پوچھتی ہوں آپ سے؟مغل ہونا خرا ب نہیں ہے۔جن لوگوں نے ظلم زیادتی کی،لوٹ کھسوٹ کی ان کے بارے میں تاریخ بھی انہیں اچھا نہیں بتاتی ہے۔تو ایک برش سے سب کو پینٹ کردینا کہ مغل سب خراب تھے ۔یہ اچھی بات نہیں۔مغل سب خراب بالکل نہیں تھے یہ میں آپ کو بتانا چاہتی ہوں ۔بہت اچھے مغل حکمراں ہوئے ہیں جنہوں نے اس ملک کو بڑی بڑی جی ڈی پی دی ہے ۔بڑی بڑی عمارتیں دی ہیں۔ایک بہت اچھا سسٹم دیاہے ان کے بارے میں کیا کہنا ہے۔

    وہیں کانگریس ترجمان سپریا شری نیت کے ذریعہ مغل کی تعریف میں قصیدہ پڑھنے پر بی جے پی نے جوابی حملہ کیا ہے۔ مدھیہ پردیش بی جے پی ترجمان نیہابگا کہتی ہیں کہ کانگریس کی قومی ترجمان سپریا شری نیت آج مغَلوں کی تعریف کر رہی ہیں جس پر بہت حیرانی نہیں ہوتی ۔جس کانگریس پارٹی کے گرو دگ وجے سنگھ دہشت گردوں کا سمان کرتے ہیں اوسامہ جی،حافظ صاحب،اس میں سلمان خورشید ہندو اور ہندتو کا تقابل آئی ایس آئی ایس جیسی دہشت گرد تنظیم سے کرتے ہوں،بوکوحرم سے کرتے ہوں اگر ان کی ماننے والی بھوپال آکر مغلوں کی تعریف کریں اور ان کی شان میں قصیدے پڑھیں تو عوام ان کا چال چرتر پہلےبھی دیکھ چکی ہے اور آج بھی ان کی ذہنیت کی پستی کو سمجھ رہی ہے ۔عوام نے کانگریس کے چرتر کو دیکھتے ہوئے ہی سبق سکھایا ہے اور جلد ہی اس کا وجود بھی ختم ہو جائے گا۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: