உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مدھیہ پردیش میں اٹھارہ ماہ بعد کھلے پرائمری اسکول ، ریاستی وزیر نے کیا طلبہ کیا استقبال

    مدھیہ پردیش میں اٹھارہ ماہ بعد کھلے پرائمری اسکول ، ریاستی وزیر نے کیا طلبہ کیا استقبال

    مدھیہ پردیش میں اٹھارہ ماہ بعد کھلے پرائمری اسکول ، ریاستی وزیر نے کیا طلبہ کیا استقبال

    مدھیہ پردیش کے وزیر برائے میڈیکل ایجوکیشن وشواس سارنگ نے پرائمری اسکول جاکر نہ صرف طلبہ کا استقبال کیا بلکہ انہیں چاکلیٹ اور ٹافی بھی تقسیم کی۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:
    بھوپال : مدھیہ پردیش میں اٹھارہ ماہ بعد آج سے پرائمری اسکول کھول دئے گئے ہیں ۔ حکومت کی جانب سے حالانکہ پرائمری اسکول کھولنے کو لے کر ہفتہ بھر قبل فیصلہ لیا گیا تھا ، اس کے باوجود جبلپور اور اندور میں پرائمری اسکول نہیں کھولے جا سکے ۔ راجدھانی بھوپا ل اور دوسرے شہروں میں حکومت کی گائیڈ لائن کے تحت پچاس فیصد طلبہ کے ساتھ پرائمری اسکول تو کھولے گئے ، لیکن اسکولوں میں بمشکل پانچ فیصد طلبہ ہی پہلے دن حاضر ہوسکے ۔ حکومت نے اسکول کھولنے کے فیصلہ کو وقت کی ضرورت سے جہاں تعبیرکیا ہے وہیں کانگریس نے اسے جلد بازی کا فیصلہ قرار دیا ہے ۔

    واضح رہے کہ مدھیہ پردیش میں حکومت کے ذریعہ اسکول، کالج اور یونیورسٹی کو پچاس فیصد طلبہ کے ساتھ کھولنے کا فیصلہ پہلے ہی کیا جا چکا ہے اور کووڈ 19 ضابطہ کے درمیان ریاست گیر سطح پر اسکول، کالج اور یونیورسٹیوں کو کھولا بھی جا رہا ہے ۔ حکومت کے ذریعہ آج سے ریاست گیر سطح پر پرائمری اسکولوں میں تعلیمی سلسلہ شروع کیا گیا ہے ۔ جبلپور میں سرکاری اسکولوں کی خستہ حالی اور صفائی نہیں ہونے کے سبب پرائمری اسکول نہیں کھولے جا سکے وہیں اندور میں لوکل ہالی ڈے ہونے کے سبب آج پرائمری اسکول نہیں کھل سکے ۔ دوسری جگہ اسکول تو کھولے گئے مگر کورونا کے خوف کے سبب زیادہ تر والدین اپنے بچوں کو اسکول بھیجنے کی ہمت نہیں کر سکے ۔

    ایم پی کانگریس کے سکریٹری عبد النفیس کہتے ہیں کہ حکومت کے ذریعہ ابھی تک ریاست گیر سطح پر اٹھارہ سال سے اوپر کے لوگوں کو پہلا ڈوز ہی نہیں لگایا جا سکا ہے۔ دوسرا ڈوز مکمل کرنے کے لئے حکومت نے دسمبر تک کا وقت مقرر کیا ہے ، ایسے میں وہ معصوم بچے جن کو ویکسین بھی نہیں لگائی جانی ہے ، انہیں اسکول بلانا جلد بازی کا فیصلہ ہے ۔ حکومت نے جہاں اتنا انتظار کیا تھا کچھ اور ماہ رک کر پرائمری اسکولوں کو تب کھولا جاتا جب ریاست میں سبھی لوگوں کو دونوں ڈوز لگا دئے جاتے تو زیادہ بہتر ہوتا۔

    وہیں مدھیہ پردیش کے وزیر برائے میڈیکل ایجوکیشن وشواس سارنگ نے پرائمری اسکول جاکر نہ صرف طلبہ کا استقبال کیا بلکہ انہیں چاکلیٹ اور ٹافی بھی تقسیم کی۔ وزیر برائے میڈیکل ایجوکیشن وشواس سارنگ کہتے ہیں کہ حکومت کے ذریعہ کووڈ 19 ضابطہ کے تحت اسکول کھولنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ پچاس فیصد طلبہ کے ساتھ ہی اسکول کھولے جا رہے ہیں اور طلبہ والدین کی تحریری رضا مندی کے بعد ہی اسکول میں داخل ہو سکیں گے ۔ ہم نے اسکولوں کا جائزہ لیا اور کووڈ 19 کے ضابطہ کے تحت اسکولوں کو کھولا گیا ہے ۔

    انہوں نے مزید کہا کہ کانگریس کو تو ہر اچھے کام سے دقت ہوتی ہے ۔ کبھی آپ نے انہیں کورونا قہر میں عوام کی خدمت کرتے ہوئے نہیں دیکھا ہوگا۔ جب ویکسین آئی تو یہی لوگ تھے جو ویکسین کی مخالفت کر رہے تھے ۔ ان کی باتوں پر دھیان دے کر آپ اپنا بھی وقت ضائع کرتے ہیں ۔
    Published by:Imtiyaz Saqibe
    First published: