ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

ناچتی گرل فرینڈ کے ساتھ بند کمرے میں ایسا کام کرنے کا شوقین ہے یہ شخص ، جان کر پولیس بھی رہ گئی دنگ

راجو جوا اور لڑکیوں کے ڈانس کا شوقین ہے ۔ اس کو گرل فرینڈ پر نوٹوں کی بارش کرنی تھی تو اس نے ایس بی آئی سے کرارے نوٹ چوری کرلئے ۔ پولیس نے جب اس کو گرفتار کیا تو اس کی کہانی سن کر سب چکرا گئے ۔

  • Share this:
ناچتی گرل فرینڈ کے ساتھ بند کمرے میں ایسا کام کرنے کا شوقین ہے یہ شخص ، جان کر پولیس بھی رہ گئی دنگ
ناچتی گرل فرینڈ کے ساتھ بند کمرے میں ایسا کام کرنے کا شوقین ہے یہ شخص ، جان کر پولیس بھی رہ گئی دنگ

رائے پور : رائے پور کے جے استمبھ میں واقع ایس بی آئی کے کیش کاونٹر سے چور نے ڈھائی لاکھ روپے اس لئے چوری کرلئے تھے ، کیونکہ اس کو ان کرارے نوٹوں کی بارش گرل فرینڈ پر کرنی تھی ۔ پولیس نے جب اس عیاش چوڑ کو گرفتار کیا تو اس کی باتیں سن کر اس کا بھی سر چکرا گیا ۔ چور نے پولیس کو بتایا کہ وہ جوا کھیلنے کا شوقین ہے ۔ رائے پور میں اس کی معشوقہ رہتی ہے ۔ معشوقہ بند کمرے میں اس کے سامنے ناچتی ہے اور وہ اس پر روپے لٹاتا ہے ۔ چور نے اپنا نام این کرشنا راجو ریڈی بتایا ہے ۔


غور طلب ہے کہ تقریبا چھ دن پہلے راجو ایس بی آئی کی برانچ گیا تھا ۔ اس نے کیشیئر پر نظر رکھی ہوئی تھی ۔ جیسے ہی کیشیئر کا دھیان دوسری طرف گیا ، راجو نے ڈھائی لاکھ روپے پار کرلئے ۔ اے ایس پی لکھن پٹیل نے بتایا کہ یہ چوری سے پہلے پوری ریکی کرلیتا تھا۔ ساری جانکاری ملنے کے بعد ہی واردات کو انجام دیتا تھا ۔


رائے پور کے اسٹیٹ بینک میں بھی کئی مرتبہ آکر سب کچھ دیکھ چکا تھا ۔ جانکاری ملی ہے کہ سال 2011 میں اس نے بھلائی کی ایک جیولری شاپ میں چوری کی تھی ۔ تب یہ جیل بھی گیا تھا ۔ اس کے بعد سال 2019 میں اس نے راج نند گاوں کے بینک کے کیش کاونٹر سے بھی روپے چوری کئے تھے ۔ ان سلسلہ میں بھی پوچھ گچھ کی جارہی ہے ۔


پولیس نے بتایا کہ چوری کرنے کے دوران وہ فرضی سم لگا کر موبائل کا استعمال کرتا تھا ۔ یہاں تک کہ بائیک بھی دوسرے کی ہی ہوتی تھی ۔  جانکاری مطابق سال 2019 میں راج نندگاوں پولیس نے اس کے خلاف کیس درج کیا تھا ، جو آخری مرتبہ تھا ۔ حیران کرنے والی بات یہ ہے کہ یہ اتنا شاطر ہے کہ اس دوران سیوک سینٹر میں واقع کمپیوٹر ہارڈ ویئر دکان میں نوکری کرکے فرار کی زندگی گزار رہا تھا ۔

پولیس کو اندیشہ ہے کہ ملزم رائے پور ، راج نند گاوں اور درگ میں کئی دیگر وارداتوں میں شامل ہے ۔ اس کی گرفتاری کے بعد ممکنہ طور پر چوری کے دیگر معاملات کا بھی انکشاف ہوگا ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Feb 26, 2021 09:54 AM IST