உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    شہنشاہ امیر الدین شاہ کے آستانہ عالیہ کی زیارت کرنے والوں سے ایم وی ایم کالج اسٹاف و طلبا کو سادھوی پرگیہ نے بتایا خطرہ

     اپنے متنازعہ بیان کو لیکر سادھوی پرگیہ سرخیوں میں  رہتی ہیں،  پہلے لاؤڈ اسپیکر سے ہونے والی اذان کو سادھنا  میں خلل پیدا کرنے کاحوالہ دیکر اعتراض کیا تھا۔ اب انہوں نے بھوپال ایم وی ایم کالج کیمپس کے واقع قدیم درگاہ پر زیارت کے لئے آنے جانے والوں سے کالج اسٹاف و طلبا کو خطرہ بتا کر اسے بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

    اپنے متنازعہ بیان کو لیکر سادھوی پرگیہ سرخیوں میں رہتی ہیں، پہلے لاؤڈ اسپیکر سے ہونے والی اذان کو سادھنا میں خلل پیدا کرنے کاحوالہ دیکر اعتراض کیا تھا۔ اب انہوں نے بھوپال ایم وی ایم کالج کیمپس کے واقع قدیم درگاہ پر زیارت کے لئے آنے جانے والوں سے کالج اسٹاف و طلبا کو خطرہ بتا کر اسے بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

    اپنے متنازعہ بیان کو لیکر سادھوی پرگیہ سرخیوں میں رہتی ہیں، پہلے لاؤڈ اسپیکر سے ہونے والی اذان کو سادھنا میں خلل پیدا کرنے کاحوالہ دیکر اعتراض کیا تھا۔ اب انہوں نے بھوپال ایم وی ایم کالج کیمپس کے واقع قدیم درگاہ پر زیارت کے لئے آنے جانے والوں سے کالج اسٹاف و طلبا کو خطرہ بتا کر اسے بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

    • Share this:
    بھوپال رکن پارلیمنٹ سادھوی پرگیہ اپنے فلاحی کاموں کو لیکر اتنی سرخیوں میں نہیں رہتی ہیں جتنا اپنا متنازعہ بیان کو لیکر رہتی ہیں  پہلے لاؤڈ اسپیکر سے ہونے والی اذان کو سادھنا  میں خلل پیدا کرنے کاحوالہ دیکر اعتراض کیا تھا۔ اب انہوں نے بھوپال ایم وی ایم کالج کیمپس کے واقع قدیم درگاہ پر زیارت کے لئے آنے جانے والوں سے کالج اسٹاف و طلبا کو خطرہ بتا کر اسے بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ وہیں سادھوی کے بیان کو مسلم تنظیموں نے نئے فتہ سے تعبیر کیا ہے۔ واضح رہے کہ بھوپال میں موتی لال نہرو وگیان مہا ودھیالیہ ایم وی ایم کالج کا قیام انیس سو چھپن میں عمل میں آیاتھا لیکن یہاں پر قائم قدیم قبرستان اٹھارہ سو پچاسی سے قائم ہے ۔ قدیم قبرستان کالج کیمپس میں بھی نہیں ہے بلکہ کالج کے باہر کیمپس کی دیوار سے متصل ہے ۔ بھوپال رکن پارلیمنٹ سادھوی پرگیہ نے قبرستان کے پاس جاکر معائنہ کیا اور کالج انتظامیہ کو بلاکر کلکٹر کو خط لکھنے اور یہاں قبرستان اور اس میں قائم نقشبندیہ سلسلہ کے بزرگ شہنشاہ امیر الدین شاہ کے آستانہ عالیہ پر زیارت کے لئے آنے والوں پر روک لگانے کی ہدایت دی ۔

    سادھوی نے اس معاملے کو لیکر بھوپال کمشنر کو بھی خط لکھا ہے ۔ سادھوی اپنے بیان میں موجودہ قبرستتان اور اس میں مزارات کو انیس سو پچاسی کے بعد کا ہونا بتا رہی ہیں مگر انہوں نے کمشنر بھوپال اور کلکٹر کو جو خط لکھا ہے اس میں انہوں نے اس کا ذکر نہیں کیا ہے ۔ سادھوی پرگیہ کےکہتی ہیں کہ  یہاں انسو سو پچاسی تک مزار نہیں تھا،کس سن میں یہ مزار بن گئی اور ایکڑوں زمین کو ایکوائر کر لیاگیا۔ میری جانکاری میں آیا ہے کہ کالج کے پاس کہیں باؤنڈری وال ٹوٹی ہے اور توڑکر راستے کو چوڑا کرلیاگیا ہے ۔تو ہم اس کو تورنت بنانے کے لئے لکھ رہے ہیں ۔کیونکہ یہاں پر کالج میں لڑکیاں بھی پڑھتی ہیں اور انکی سیکوریٹی سب سے بڑا سوال ہے ۔لڑکیوں کا تحفظ ہماری پہلی ترجیح ہے ۔یہاں تو کوئی بھی زیارت کے نام پر آرہا ہے ۔اسے کیسا روکا جائے گا۔آپ کالج کے لوگ بھی کلکٹر صاحب سے بات کی جیئے اور میں بھی کلکٹر صاحب سے بات کرتی ہوں ۔زیارت کے نام پر ایسےکسی کو بھی اجازت نہیں دی جا سکتی ہے ۔


    وہیں مد ھیہ پردیش جمعیت علما کے صدر حاجی محمد ہارون نے بھوپال رکن پارلیمنٹ سادھوی پرگیہ کے بیان پر اپنے سخت رد عمل کا اظہار کیا ہے ۔ ایم پی جمیعت علما کے صدر حاجی محمد ہارون کہتے ہیں کہ قبرستان قدیم ہے اور کالج کی تعمیر بعد میں ہوئی ہے ۔ جب کالج کی تعمیر انیس سو چھپن میں ہو رہی تھی اس وقت بھی مسلم سماج کے لوگوں نے تعاون کیا تھا ۔مسلمان امن پسند ہیں اور ہمیشہ امن کے لئے کام کرتےہیں ۔ سادھوی پرگیہ انیس سو پچاسی میں قبرستان میں وجود میں آنے کی بات کر رہی ہیں مگر انہیں اس کی تاریخ نہیں معلوم ہے ۔



    قبرستان سو سال سے زیادہ قدیم ہے اور میں وقف بورڈ سے گزارش کرونگا کہ وہ قبرستان جو پانچ ایکڑ سے زیادہ زمین پر تھا اس کی پیمائیش کی جائے تاکہ دنیا کو معلوم ہو سکے کہ اس کی کتنی زمین پر کالج پھیلا ہوا ہے۔میں سادھوی پرگیہ کو بتانا چاہتا ہوں کہ میل کے پتھر بدلنے سے ترقی نہیں ہوتی ہے ۔ تاریخ میں نام درج کروانا ہے تو کچھ تعمیر کام کریں فتنہ پیدا کرنے سے تاریخ میں نام رقم نہیں ہوتا ہے ۔
    بھوپال سے مہتاب عالم کی رپورٹ
    Published by:Sana Naeem
    First published: