ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

دوفریقوں کے درمیان کشیدگی کے بعد سیونی میں دفعہ 144 کا نفاذ

سیونی۔ مدھیہ پردیش کے سیونی میں دو فریقوں کے درمیان پرانے تنازعہ کی وجہ سے ایک بار پھر کشیدگی پیدا ہوگئی ہے جس کی وجہ سے سیونی ضلع ہیڈکوارٹر اور برگھاٹ کے گاؤں بوری میں دفعہ 144 کا نفاذ کر دیا گیا ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jan 14, 2016 11:53 AM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
دوفریقوں کے درمیان کشیدگی کے بعد سیونی میں دفعہ 144 کا نفاذ
سیونی۔ مدھیہ پردیش کے سیونی میں دو فریقوں کے درمیان پرانے تنازعہ کی وجہ سے ایک بار پھر کشیدگی پیدا ہوگئی ہے جس کی وجہ سے سیونی ضلع ہیڈکوارٹر اور برگھاٹ کے گاؤں بوری میں دفعہ 144 کا نفاذ کر دیا گیا ہے۔

سیونی۔ مدھیہ پردیش کے سیونی میں دو فریقوں کے درمیان پرانے تنازعہ کی وجہ سے ایک بار پھر کشیدگی پیدا ہوگئی ہے جس کی وجہ سے سیونی ضلع ہیڈکوارٹر اور برگھاٹ کے گاؤں بوری میں دفعہ 144 کا نفاذ کر دیا گیا ہے۔ پولیس سپرنٹنڈنٹ اے کے پانڈے نے يواین آئی کو بتایا کہ برگھاٹ بلاک میں گزشتہ سال اکتوبر کےمہینے میں دو فریقوں کے درمیان تنازعہ کی وجہ سے برگھاٹ کے کچھ علاقوں میں کرفیو لگا تھا۔ اس کیس کے ملزمان کو کل ضمانت ملی تھی جس کے بعد کچھ لوگوں نے کل ریلی نکالنے کی کوشش کی۔ ریلی کے بعد دونوں فریقوں کے درمیان پھر سے تنازعہ بڑھنے لگا۔


مسٹر پانڈے نے بتایا کہ امن میں خلل پڑنے کے خدشے کی وجہ سے کل رات سے بوری گاؤں اور سیونی ضلع ہیڈکوارٹر میں دفعہ 144 نافذ کر دیاگیاہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ سال اکتوبر میں گاڑی کی ٹکر سے پیدا ہوئے تنازعہ کے بعد کچھ نوجوانوں نے بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر كپورچند ٹھاکرے کی بری طرح پٹائی کی تھی۔ حملے میں بری طرح زخمی مسٹر ٹھاکرے کی علاج کے دوران ناگپور میں موت ہو گئی تھی۔ اس کے بعد برگھاٹ میں کشیدگی پھیل گئی تھی، جس کی وجہ سے وہاں بہت دن تک کرفیو لگا رہا۔ تازہ معاملہ اسی تنازعہ سے منسلک ہے۔

First published: Jan 14, 2016 11:53 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading