உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    بھوپال لٹریری فورم کے سیمینار میں اردو کی نئی بستیوں میں اردو کی تحریکوں پر ڈالی گئی روشنی

    بھوپال۔ بھوپال لٹریری فورم کے زیر اہتمام مد ھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں سمینار کا انعقاد کیا گیا۔

    بھوپال۔ بھوپال لٹریری فورم کے زیر اہتمام مد ھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں سمینار کا انعقاد کیا گیا۔

    بھوپال۔ بھوپال لٹریری فورم کے زیر اہتمام مد ھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں سمینار کا انعقاد کیا گیا۔

    • ETV
    • Last Updated :
    • Share this:

      بھوپال۔ بھوپال لٹریری فورم کے زیر اہتمام مد ھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال میں سمینار کا انعقاد کیا گیا۔ اردو کی نئی بستی کے عنوان سے منعقدہ سمینار میں کویت اور قطر کے مقالہ نگاروں نے شرکت کی اور اردو کی نئی بستیوں میں اردو کے حوالے سے چلنے والی تحریکوں  پر اپنے خیالا ت کا اظہار کیا۔ سمینار میں اردو کی نئی بستیو ں میں ہونے والے کام سے ہندستان کے اردو قاری کو جوڑنے کے لئے ایک جوائنٹ ویب سائٹ شروع کر نے پر زور دیا گیا تاکہ دونوں مقامات پر لکھے جانے والے ادب سے ایک دوسری جگہ کے لوگ واقف ہو سکیں ۔

      ہندوستان کی آزادی کے بعد جہاں ملک میں اردو پر کاری ضرب کے حوالے سے بات کی جاتی ہے وہیں دیار غیر میں اردو کے حوالے سے ہونے والے کام کو بڑی امید کی نظر سے دیکھا جاتا ہے۔ ہندوستان اور پاکستان کے باہر اردو کے نہ صرف سمینار اور مشاعروں کا انعقاد کثرت سے ہو رہا ہے بلکہ اردو کی  کتابوں کی اشاعت بھی کثرت سے کی جارہی ہے ۔ بھوپال لٹریری فورم کے زیر اہتمام منشی حسین خان ٹیکنکل انسٹی ٹیوٹ کے نسیم انصاری ہال میں اردو کی نئی بستی  کے عنوان سے منعقدہ سمینار میں مقامی لوگوں کے علاوہ دوحہ قطر سے بزم اردو کے پیٹرن صبیح بخاری نے بھی شرکت کی ۔ صبیح بخاری کا ماننا ہے کہ اردو کی نئی بستی میں نہ صرف مشاعرے اور سمینار کا انعقاد ہو رہا ہے بلکہ نئی نسل کو بھی زبان سے جوڑنے کے لئے کام جاری ہے ۔

      سمینار میں کویت سے تشریف لائے عالم افروز عالم نے اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اردو کی نئی بستیوں میں ان کے سروے کے مطابق جو سنجیدہ ادب لکھنے والے لوگ ہیں ان کی تعداد تین ہزار سے زیادہ ہے ۔ افروزعالم کا ماننا ہے کہ عرب ممالک میں عربی زبان بھلے ہی ہے لیکن اردو وہاں پر دوسری عوامی زبان کی حیثیت سے مقبول ہے۔

      First published: