ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

مدھیہ پردیش : شیوراج حکومت کا بڑا فیصلہ ، اس دن لاگو ہوگا ریاست بھر میں لاک ڈاون

وزیر اعلی شیوراج سنگھ کی صدارت میں کورونا کو لے کر ہونے والی جائزہ میٹنگ میں اتوار کے دن پورے مدھیہ پردیش میں ایک ساتھ لاک ڈاون نافذ کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔

  • Share this:
مدھیہ پردیش : شیوراج حکومت کا بڑا فیصلہ ، اس دن لاگو ہوگا ریاست بھر میں لاک ڈاون
مدھیہ پردیش : شیوراج حکومت کا بڑا فیصلہ ، اس دن لاگو ہوگا ریاست بھر میں لاک ڈاون

مدھیہ پردیش میں کورونا کا قہر جاری ہے ۔ کورونا کے بڑھتے معاملات کے پیش نظر شیوراج سنگھ حکومت نے اتوار کو پوری ریاست میں لاک ڈاؤن کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ سی ایم شیوراج سنگھ نے یہ فیصلہ افسرا ن کے ساتھ کورونا کو لیکر ہونے والی جائزہ میٹنگ میں کیا ۔ مدھیہ پردیش میں کورونا مریضوں کی مجموعی تعداد سولہ ہزار کے ہندسہ کو پار کرگئی ہے ۔ صوبہ میں کورونا کو لیکر سب سےزیادہ تشویشناک صورتحال اندور ، بھوپال ، اجین کے بعد گوالیار اور مرینہ کی ہے۔ صوبہ میں کورونا مریضوں کی مجموعی تعداد بڑھ کرسولہ ہزار ایک سو تین ہوگئی ہے۔ صوبہ میں کورونا سےابتک چھ سو بیس لوگوں کی موت ہوچکی ہے ، جبکہ کورونا کی وبائی بیماری سے ابتک  گیارہ ہزا رسات سو باسٹھ مریض صحتیاب ہوچکے ہیں ۔


مدھیہ پردیش کے وزیر صحت ڈاکٹر نروتم مشرا کہتے ہیں کہ صوبہ میں کورونا کے خاتمہ کے لئے چلائی جانے والی خصوصی مہم کل کورونا کے تحت صوبہ کے گھر گھر سروے کرنے کا بیالیس فیصد کام مکمل ہوچکا ہے ۔ سروے میں کورونا کے ساتھ ڈینگو اور ملیریا کے مریض بھی سامنے آئے ہیں ۔ آج سی ایم شیوراج سنگھ کی صدارت میں کورونا کو لے کر ہونے والی جائزہ میٹنگ میں اتوار کے دن پورے مدھیہ پردیش کو ایک ساتھ لاک ڈاون کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ بارڈر سے لوگوں کے مدھیہ پردیش میں داخل ہونے کی وجہ سے ایم پی میں حالات بدل رہے ہیں ۔ مرینہ ، دھولپور، جلگاوں اور بڑوانی سے لوگ مدھیہ پردیش میں داخل ہورہے ہیں ، جس کی وجہ سے مشکلات میں اضافہ ہو رہا ہے ۔ سی ایم نے اس کیلئے ایڈوائزری جاری کرکے بارڈر سے آنے والوں کی جانچ کرنے کی ہدایت دی ہے ۔ کل تک اس سلسلے میں ایڈوائزری جاری ہو جائے گی ۔ کورونا پر ہم تیزی سے کنٹرول کر رہے ہیں اور ایم پی میں کورونا ریکوری ریٹ  پچھہتر فیصد سے زیادہ ہوگیا ہے۔


وہیں کانگریس کورونا کو کنٹرول کرنے کے معاملہ میں ایم پی حکومت کے دعوی کو سرے سے خارج کرتی نظر آتی ہے ۔ ایم پی کانگریس کے سینئر لیڈر وسابق وزیر قانون پی سی شرما کہتے ہیں کہ حکومت کورونا کے معاملہ میں کتنی سنجیدہ ہے ، اس کا اندازہ اس بات سے لگا سکتے ہیں کہ کورونا مریض کی لاش اسپتال پارکنگ میں ملتی ہے اور دو دن گزرنے کے بعد بھی کسی پر کوئی کارروائی نہیں کی گئی ۔ سرکار کا فوکس کورونا اور جرائم کے کنٹرول پر نہیں ہے ، بلکہ سرکار میں بنے رہنے پر ہے ۔ خریدو فروخت سے سرکار بنی ہوئی ہے ، اس لئے انہیں ہر لمحہ اقتدار جانے کا ڈر ستاتا ہے ۔ کورونا پر کنٹرول اس وقت تک نہیں ہو سکتا ہے ، جب تک سرکار ٹیسٹنگ کی تعداد میں اضافہ نہیں کرے گی اور مریضوں کو اچھا علاج نہیں دے گی ۔


واضح رہے کہ مدھیہ پردیش حکومت نے صوبہ میں کورونا کے خاتمہ کیلئے کل کورونا کے نام سے یکم جولائی سے خصوصی مہم شروع کی تھی ۔ مہم کے تحت گھر گھر سروے کرنے کا کام ضرور جاری ہے ، لیکن کورونا کے معاملات کسی بھی صورت کم ہونے کا نام نہیں لے رہے ہیں ۔ اگر حکومت کا کورونا معاملہ پر کنٹرول ہوتا ، تو صوبہ میں لاک ڈاون کا اعلا ن کرنے کی کوئی ضرورت پیش نہیں آتی ۔ ان لاک میں راجدھانی میں کوئی ایسا دن نہیں جاتا جس دن پچاس ساٹھ سے کم نئے مریض سامنے نہ آتے ہوں ۔ یہی صورتحال مدھیہ پردیش کے دوسرے شہروں کی بھی ہے ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: Jul 08, 2020 09:48 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading