ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

بھوپال یونیورسیٹی کے طلبہ نے پرگیا ٹھاکر کے خلاف ’ دہشت گرد واپس جاؤ‘ کے لگائے نعرے، ایم پی کی قانونی کارروائی کی دھمکی

بدھ کو مدھیہ پردیش کے دارالحکومت بھوپال میں خود کو دہشت گرد کہے جانے پر پرگیا ٹھاکر بوکھلا گئیں۔

  • Share this:
بھوپال یونیورسیٹی کے طلبہ نے پرگیا ٹھاکر کے خلاف ’ دہشت گرد واپس جاؤ‘ کے لگائے نعرے، ایم پی کی قانونی کارروائی کی دھمکی
پرگیا سنگھ ٹھاکر: فائل فوٹو

بھوپال۔ بھوپال سے بی جے پی رکن پارلیمنٹ پرگیا سنگھ ٹھاکر ہمیشہ سے تنازعات کی زد میں رہی ہیں۔ رکن پارلیمنٹ بننے کے بعد سے بھی وہ مسلسل تنازعات میں رہ رہی ہیں۔ ان کے ایک تبصرے پر وزیر اعظم مودی ان سے اتنے ناراض ہو گئے تھے کہ انہوں نے کہا تھا کہ وہ پرگیا ٹھاکر کو کبھی معاف نہیں کریں گے۔ اس کے بعد بھی تنازعہ ان کا پیچھا نہیں چھوڑ رہا ہے۔


متعدد تنازعات کے بعد بدھ کو مدھیہ پردیش کے دارالحکومت بھوپال میں خود کو دہشت گرد کہے جانے پر پرگیا ٹھاکر بوکھلا گئیں۔ انہوں نے کہا کہ ماکھن لال چترویدی نیشنل یونیورسیٹی میں کانگریس کی طلبہ ونگ نیشنل اسٹوڈنٹس یونین آف انڈیا کے کارکنان نے بدھ کے روز انہیں دہشت گرد کہا، یہ لفظ غیر قانونی اور نا شائستہ ہے۔ انہوں نے ایک خاتون رکن پارلیمنٹ کو گالی دی جو ایک آئینی عہدے پر ہے۔ وہ سبھی غدار ہیں۔ میں یقینی طور پر کارروائی کروں گی۔



پرگیا کے حوالے سے اے این آئی نے یہ ٹویٹ کیا ہے

رکن پارلیمنٹ دہشت گرد ہے،  یہ لفظ غیر قانونی اور نا شائستہ ہے۔ انہوں نے ایک خاتون رکن پارلیمنٹ کو گالی دی جو ایک آئینی عہدے پر ہے۔ وہ سبھی غدار ہیں۔ میں یقینی طور پر کارروائی کروں گی‘۔

 
First published: Dec 26, 2019 12:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading