உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    پینشن میں اضافے کے مطالبے کو لیکر بزرگوں نے ہاتھوں میں سوکھی روٹی لیکر کیا احتجاج

    عالمی یوم بزرگ پر بھوپال میں انوکھے انداز میں بزرگوں نے کیا احتجاج

    عالمی یوم بزرگ پر بھوپال میں انوکھے انداز میں بزرگوں نے کیا احتجاج

    بزرگ خواتین کا کہنا ہے کہ جب سے کورونا کی وبا آئی ہے تب سے نہ صرف انکی پینشن متاثر ہوئی ہے بلکہ گذشتہ آٹھ سالوں میں حکومتِ نے بزرگ پینشن میں ایک روپیہ کا بھی اضافہ نہیں کیا ہے۔

    • Share this:
    عالمی يوم بزرگ کے موقعہ پر بھوپال میں بزرگ خواتین نے ہاتھوں میں سو کھی روٹی لے کر احتجاج کیا۔ بھوپال نیلم پارک میں بھوپال گیس پیڑت نراشت پینشن بھوگی مورچہ کے زیر اہتمام منعقدہ پروگرام میں بزرگ خواتین نے احتجاج کرتے ہوئے مرکزی اور صوبائی حکومت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے بزرگ پینشن میں اضافہ کا مطالبہ کیا۔ بزرگ خواتین کا کہنا ہے کہ جب سے کورونا کی وبا آئی ہے تب سے نہ صرف انکی پینشن متاثر ہوئی ہے بلکہ گذشتہ آٹھ سالوں میں حکومتِ نے بزرگ پینشن میں ایک روپیہ کا بھی اضافہ نہیں کیا ہے۔
    بھوپال بزرگ پینشن بھوگی مورچہ کے صدر بالکرشن نامدیو کہتے ہیں کہ جمہوری ملک میں سیاست دانوں نےاپنی پینشن اور دوسری مراعات میں گذشتہ آٹھ سالوں میں کئی بار اضافہ کیا ہے لیکن بزرگوں کی پینشن میں گذشتہ آٹھ سالوں میں نہ غور کیا گیا اور نہ ہی بزرگوں کو وقت پر پینشن جاری کی گئی ہے ۔ مرکزاور ریاست میں ایک ہی پارٹی کی حکومتِ ہونے کےباجود بزرگ مرد و خواتین معمولی سی پینشن کے لئے در در کی ٹھوکریں کھانے کو مجبور ہیں۔کورونا قہر میں بھی وقت پر پینشن جاری نہیں کی گئی اور اب یہی صورتحال ہے۔
    بزرگ خاتون شبستاں بیگم کہتی ہیں کہ حکومتِ چھ سو روپیہ ماہانہ پینشن دینے کی بات کرتی ہے مگر یہ معمولی رقم بھی ہم بزرگوں کے لئے مشکل ہے۔چھ سو روپیہ میں ہوتا کیا ہے۔مہنگائی اتنی ہے کہ چاۓ پینے کی خواہش بھی میں گئی ہے۔آج ہاتھوں میں سوکھی روٹی لے کر ہم بزرگ خاتون اس لئے آئے ہیں تاکہ حکومتِ کو بتا سکیں کہ تمہارے و عدے کے انتظار میں روٹی سوکھ چکی ہے۔حکومتِ سے بس اتنی گزارش ہے کہ ہم بزرگوں پر بھی ایک محبت کی نظر ڈال دی جائے ۔ہماری پینشن چھ سو سے بڑھا کر کم از کم ایک ہزار کردی جائے اور اسے وقت پر جاری کیا جائے۔۔

    وہیں مدھیہ پردیش کے وزیر میڈیکل ایجوکیشن وشواس سارنگ کہتے ہیں کہ ہماری حکومتِ سبھی طبقات کو اس کا حق دینے کے لئے کوشاں ہے۔گیس متاثر ہ بیو ہ خواتین جن کی پینشن کو کمل ناتھ حکومتِ نے روکنے کا کام کیا تھا اسے گزشتہ ماہ جاری کیا گیا ہے۔بزرگوں کی پینشن بھی جاری ہے۔جہاں تک اس میں اضافہ کا تعلق ہے یہ پالیسی میٹر ہے اس پر بھی وزیرِ اعلیٰ سے بات کر کے بہتر حل نکالا جائے گا۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: