உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لو جہاد کے شک میں مسلم نوجوان کے مکان و دکان میں کی گئی توڑ پھوڑ

    کھنڈوا میں ہوئے تشدد کے خلاف مسلم تنظیموں میں سخت ناراضگی

    کھنڈوا میں ہوئے تشدد کے خلاف مسلم تنظیموں میں سخت ناراضگی

    بائیس جنوری کو کھنڈوا کے گنیش تلائی علاقہ میں شوکت علی اور سلیم بیگ کا گھر اور آٹو جلانے کا معاملہ ابھی سرد بھی نہیں پڑا تھا کہ اسی کھنڈوا کے تھانہ کھالول کے گلائی مال گاؤں میں لو جہاد کے شک میں شر پسند عناصر نے ایک طبقہ کے شخص کا گھر اور دکان میں جم کر توڑ پھوڑ کردی ہے۔

    • Share this:
    مدھیہ پردیش میں حکومت کے تمام دعوؤں کے باؤجود شرپسند عناصر بے لگام ہوتے جا رہے ہیں ۔بائیس جنوری کو کھنڈوا کے گنیش تلائی علاقہ میں شوکت علی اور سلیم بیگ کا گھر اور آٹو جلانے کا معاملہ ابھی سرد بھی نہیں پڑا تھا کہ اسی کھنڈوا کے تھانہ کھالول کے گلائی مال گاؤں میں لو جہاد کے شک میں شر پسند عناصر نے ایک طبقہ کے شخص کا گھر اور دکان میں جم کر توڑ پھوڑ کردی ہے۔ خود پولیس کا ماننا ہے کہ گولو اور شاہ رخ پر شک ہے کہ انہوں نے لڑکی کو بھگانے کا کام کیا ہے۔ موقعہ پر پولیس کو تعینات کردیا گیا اور حالات پرامن ہیں ۔پولیس نے دونوں فریق کی رپورٹ کی بنیاد پر گمشدہ لڑکی کی تلاش شروع کردی ہے۔وہیں کانگریس نے پورے معاملے کو مدھیہ پردیش حکومت کی ناکامی سے تعبیر کیا ہے۔

    مدھیہ پردیش کانگریس کے سکریٹری عبدالنفیس کہتے ہیں کہ موجودہ حکومت کی تنگ نظری سب پر عیاں ہوگئی ہے ۔ حکومت سب کا ساتھ اور سب کا وکاس کی باتیں تو کرتی ہے لیکن اس کی ساری عنایتیں ایک مخصوص طبقہ کے ساتھ ہی ہیں ۔ ریاست میں لا اینڈ آرڈر نام کی کوئی چیزنہیں ہے یہی وجہ ہے کہ شرپسندوں کے حوصلے بلند ہیں ۔جس کھنڈوا میں لو جہاد کے شک میں مسلم نوجوان کا گھر اور دکان توڑی گئی ہے اسی کھنڈوا میں بائیس جنوری کو شوکت اور سلیم بیگ کا گھر اور آٹو جلایا گیا تو بھی پولیس نے رٹا رٹایا جواب دیا اور پولیس خود اپنے بیان میں یہ تسلیم کرتی ہے کہ بنٹی اپادھیائے ایک نگرانی شدہ بد معاش ہے اس کے باؤجود آج تک اس کی گرفتاری نہیں کی گئی ۔یہی سب کچھ کھالول تھانہ کے گلائی مال گاؤں میں ہوا ہے۔ ہماری پولیس سے مانگ ہے کہ شر پسند عناصر کے خلاف سخت کاروائی کی جائے اور گمشدہ لڑکی کو تلاش کیا جائے ۔

    وہیں ہرسود ایس ڈی اوپی رویندر واسکلے کہتے ہیں کہ گلائی مال کے ایک لڑکی کے گمشدہ ہونے کی خبر ملی تھی جس میں انہوں نے گولو اور شاہ رخ پر شک کیا ہےاور لڑکی کے گمشدہ ہونے باعث گاؤں والوں میں ناراضگی ہے اور یہاں پر توڑپھوڑکیے جانے کی اطلاع ملتے ہی ایس پی صاحب کے احکام پر تھانہ کھالول اور تھانہ پپلود اور چوکی روشنی کی پولیس کو تعینتا کردیا گیا ہے۔حالات پر امن ہیں اور گمشدہ کی تلاش کے لئے دو ٹیمیں بھی روانہ کی گئی ہیں۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: