ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

بھوپال میں متنازعہ زمین پر ایم پی وقف ٹریبونل 27 جنوری کو سنائے گا فیصلہ

بھوپال میں متنازعہ زمین پر تعمیر کئے جانے کو لیکرایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل میں فوری سماعت کے لئے داخل کی گئی عرضی پر فریقین کی دلیل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔ ایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل کے ذریعہ ستائیس جنوری کو فیصلہ سنایا جائے گا جس پر سبھی کی نگاہیں ٹکی ہوئی ہیں ۔

  • Share this:
بھوپال میں متنازعہ زمین پر ایم پی وقف ٹریبونل 27 جنوری کو سنائے گا فیصلہ
بھوپال میں متنازعہ زمین پر تعمیر کئے جانے کو لیکرایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل میں فوری سماعت کے لئے داخل کی گئی عرضی پر فریقین کی دلیل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔ ایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل کے ذریعہ ستائیس جنوری کو فیصلہ سنایا جائے گا جس پر سبھی کی نگاہیں ٹکی ہوئی ہیں ۔

بھوپال میں متنازعہ زمین پر تعمیر کئے جانے کو لیکرایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل میں فوری سماعت کے لئے داخل کی گئی عرضی پر فریقین کی دلیل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا ہے۔ ایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل کے ذریعہ ستائیس جنوری کو فیصلہ سنایا جائے گا جس پر سبھی کی نگاہیں ٹکی ہوئی ہیں۔ واضح رہے کہ بھوپال کباڑخانہ میں سینتس ہزار اسکوائر فٹ زمین پر سترہ جنوری کو جب ضلع انتظامیہ کے ذریعہ کرفیو کا نفاذ کر کے راج دیوٹرسٹ کو تعمیر کی اجازت دی گئی تو راج دیو ٹرسٹ کے ذریعہ تعمیر کئے جانے اور انتظامیہ کے فیصلہ کو لیکر محمد سلیمان کے ذریعہ ضلع انتظامیہ کے فیصلہ کو چیلنج کرتے ہوئے فوری سماعت کی عرضی ایم پی اسٹیٹ وقف ٹریبونل میں انیس جنوری کو داخل کی گئی تھی جس پر ٹریبونل نے اکیس جنوری کو سماعت کی تاریخ مقرر کی تھی مگر اکیس جنوری کی سماعت میں دستاویز پیش کرنے کے لئے راج دیو ٹرسٹ کی جانب سے مزید وقت مانگا گیاتھاجس پر ٹریبونل نے سماعت کی تاریخ میں دو دن کی توسیع کرتے ہوئے تیئس جنوری کو سماعت مقرر کی تھی۔ آج سبھی فریقین نے متنازعہ زمین کو لیکر اپنا اپنا دعوی پیش کیا۔ ٹریبونل نے سبھی فریقین کو سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیاہے۔

متنازعہ زمین پر فوری سماعت کی عرصی دائر کرنے والے محمد سلیمان کے وکیل رفیع زبیری کہتے ہیں کہ عدالت نے سبھی فریقین کی دلیل کو سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا ہے ۔ ستائیس جنوری کو فیصلہ سنایا جائے گا اوراس میں دیکھنا ہوگا کہ عدالت کا جو فیصلہ آتا ہے اس کی بنیاد کیا ہے۔ ہمیں ستائیس جنوری کے فیصلے کا انتظار ہے۔ وہیں مدھیہ پردیش وقف بورڈ کے وکیل ثروت شریف کہتے ہیں کہ متعلقہ زمین کو لیکر ہم نے ٹریبونل کے سامنے سارے دستاویز پیش کئے ہیں ۔ یہ زمین وقف کی ہے اور یہ پوری زمین چھ ایکڑ اکیاون ڈسمل ہے۔ عدالت نے ہماری بات کو سنجیدگی سے سنا ہے اب ستائس کے فیصلہ کا انتظار ہے ۔


وہیں راج دیو ٹرسٹ کے وکیل جگدیش چھاوانی کہتے ہیں کہ کباڑخانہ علاقہ میں جس زمین کو لیکر تنازعہ ہے آج وقف ٹریبونل نے سبھی فریقوں کو سنجیدگی سے سنا ہے ۔ عدالت نے اپنا فیصلہ محفوظ کیا ہے ۔ ستائیس کو فیصلہ آئے گا ۔ ہم فیصلہ کا بے صبری سے انتظار کررہے ہیں ۔ واضح رہے کہ راج دیو ٹرسٹ کے وکیل جگدیش چھاوانی کے ذریعہ کل بھوپال کوہ فضا تھانہ میں رپورٹ درج کرائی تھی کہ نا معلوم لوگوں نے انہیں کلکٹریٹ سے تھوڑی دوری پر روک کر اس مقدمہ سے دور رہنے کی دھمکی دی تھی جس کے سبب آج اسٹیٹ وقف ٹریبونل کے پاس سماعت کے وقت سخت حفاظتی انتظامات کئے گئے تھے ۔ستائیس جنوری کو فیصلہ کو لیکر نہ صرف فریقین بلکہ انتظامیہ اور سرکار کی بھی نگاہیں لگی ہوئی ہیں ۔

Published by: Sana Naeem
First published: Jan 23, 2021 07:42 PM IST