اپنا ضلع منتخب کریں۔

    مدھیہ پردییش میں بڑا حادثہ، مرینا کے پاس سکھوئی ۔30 اور میراج 2000 گر کر تباہ، ریسکیو آپریشن جاری

    Youtube Video

    ریسکیو آپریشن جاری ہے۔ دونوں طیاروں نے گوالیار ایئربیس سے اڑان بھری تھی۔ یہاں فضائیہ کی مشقیں جاری تھیں۔ فوج کے ذرائع کے مطابق ہندوستانی فضائیہ اس بات کی تحقیقات کرے گی کہ کیا دونوں طیارے آپس میں ٹکرا ئے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Madhya Pradesh | Morena
    • Share this:
      مدھیہ پردیش کے مرینا ضلع میں فضائیہ کے سکھوئی 30 اور میراج 2000  گر کر تباہ ہو گئے ہیں۔ ریسکیو آپریشن جاری ہے۔ دونوں طیاروں نے گوالیار ایئربیس سے اڑان بھری تھی۔ یہاں فضائیہ کی مشقیں جاری تھیں۔ فوج کے ذرائع کے مطابق ہندوستانی فضائیہ اس بات کی تحقیقات کرے گی کہ کیا دونوں طیارے آپس میں ٹکرا ئے۔ سکھوئی میں 2 پائلٹ اور میراج میں ایک پائلٹ موجود تھا۔ مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے اس حادثے پر اظہار افسوس کیا ہے۔

      بتایا جا رہا ہے کہ دو پائلٹ مکمل طور پر محفوظ ہیں۔ فضائیہ کا ہیلی کاپٹر تیسرے پائلٹ کے مقام پر جلد ہی پہنچ رہا ہے۔ مرینا ضلع کے پہاڑ گڑھ ترقیاتی بلاک کے جنگل میں ایک جنگی طیارہ گرا۔ لوگوں نے جہاز میں آسمان پر آگ لگتے ہوئے دیکھا۔ اس کے بعد طیارہ تیز رفتاری سے زمین کی طرف آتے دیکھا گیا۔ اس وقت طیارہ واپسی کی پرواز پر تھا۔ پائلٹ نے کیلارس اور پہاڑ گڑھ کے قصبوں کو حادثے سے بچا لیا۔

       

      میرے قتل کیلئے دہشت گردوں کو دیا پیسہ، عمران خان کا زرداری پر بڑا الزام، جہاد چھیڑنے کا۔۔۔

      ہازرا اسپتال میں لگی آگ، ڈاکٹر جوڑے سمیت 6 افراد ہلاک، بال بال بچے مریض

      سی ایم شیوراج نے غم کا اظہار کیا۔
      فوج کے ذرائع کے مطابق فوج نے وزیر دفاع راج ناتھ سنگھ کو حادثے کے بارے میں آگاہ کر دیا ہے۔ انہوں نے پائلٹس کی حفاظت کے بارے میں معلومات مانگی ہیں۔ وزیر دفاع اس معاملے کی ہر لمحہ کی معلومات لے رہے ہیں۔ دوسری جانب ایم پی کے وزیر اعلی شیوراج سنگھ چوہان نے  جنگی طیاروں کے حادثے پر دکھ کا اظہار کیا ہے۔ انہوں نے ٹویٹ کیا، 'مرینا میں کولاراس کے قریب فضائیہ کے سکھوئی-30 اور میراج-2000 طیاروں کے گرنے کی خبر انتہائی افسوسناک ہے۔ میں نے مقامی انتظامیہ کو ہدایت کی ہے کہ وہ فوری بچاؤ اور راحت کے کاموں میں فضائیہ کے ساتھ تعاون کریں۔ پائلٹ کے تحفظ اور سلامتی کی خدا سے دعا کرتا ہوں ۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: