ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

ودیشہ میں بجرنگ دل کے کنوینر کے قتل کے بعد تشدد، پورے شہر میں کرفیو نافذ

مدھیہ پردیش کے ودیشہ میں بجرنگ دل کنوینر کے قتل کے بعد تشدد بھڑک گئی ہے۔ آتش زنی اور توڑ پھوڑ کے واقعات کے بعد شہر میں حالات بے قابو ہو گئے ہیں ۔ صورتحال پر قابو پانے کے لئے پورے شہر میں کرفیو لگا دیا گیا ہے

  • Pradesh18
  • Last Updated: Nov 13, 2016 03:06 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ودیشہ میں بجرنگ دل کے کنوینر کے قتل کے بعد تشدد، پورے شہر میں کرفیو نافذ
مدھیہ پردیش کے ودیشہ میں بجرنگ دل کنوینر کے قتل کے بعد تشدد بھڑک گئی ہے۔ آتش زنی اور توڑ پھوڑ کے واقعات کے بعد شہر میں حالات بے قابو ہو گئے ہیں ۔ صورتحال پر قابو پانے کے لئے پورے شہر میں کرفیو لگا دیا گیا ہے

ودیشہ : مدھیہ پردیش کے ودیشہ میں بجرنگ دل کنوینر کے قتل کے بعد تشدد بھڑک گئی ہے۔ آتش زنی اور توڑ پھوڑ کے واقعات کے بعد شہر میں حالات بے قابو ہو گئے ہیں ۔ صورتحال پر قابو پانے کے لئے پورے شہر میں کرفیو لگا دیا گیا ہے۔

كلاري روڈ پر رہنے والے بجرنگ دل کے شہر کنوینر دیپک کشواہا (20) کو ہفتہ کی دوپہر چھ لوگوں نے گھیر لیا اور دھاردار ہتھیار سے کئی وار کئے۔اس حملے میں بری طرح سے زخمی دیپک کو لواحقین ضلع اسپتال لے کر پہنچے، لیکن گہرے زخم اور کافی خون بہنے کی وجہ سے دیپک کو بچایا نہیں جا سکا۔

دیپک پر حملے کے بعد بڑی تعداد میں وی ایچ پی کارکنان اسپتال پہنچ گئے اور دیپک کی موت کی اطلاع ملتے ہی وہ لوگ مشتعل ہوگئے ۔ پھر دیکھتے ہی دیکھتے مشتعل اہل خانہ اور حامیوں نے پتھراؤ شروع کر دیا، کئی مقامات پر دکانوں میں بھی آگ لگا دی گئی، جس کے بعد مارکیٹ بند ہو گئے۔

بتایا جاتا ہے کہ سبھی ملزمین اور مقتول ایک ہی محلہ کے رہنے والے ہیں۔ ملزموں سے کچھ وقت پہلے دیپک کا کسی بات کو لے کر تنازع ہوگیا تھا۔ سمجھا جا رہا ہے کہ پرانے تنازع کا بدلہ لینے کے لئے اس قتل کو انجام دیا گیا۔

First published: Nov 13, 2016 03:06 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading