وياپم گھوٹالہ: سی بی آئی نے درج کی آٹھ نئی ایف آئی آر

بھوپال۔ مدھیہ پردیش وياپم گھوٹالے میں سی بی آئی نے پہلی بار ایک ساتھ آٹھ ایف آئی آر درج کی ہیں۔

Aug 02, 2015 11:55 AM IST | Updated on: Aug 02, 2015 11:55 AM IST
وياپم گھوٹالہ: سی بی آئی نے درج کی آٹھ نئی ایف آئی آر

بھوپال۔ مدھیہ پردیش وياپم گھوٹالے میں سی بی آئی نے پہلی بار ایک ساتھ آٹھ ایف آئی آر درج کی ہیں۔ ان میں سے چار کیس پی ایم ٹی فرضی واڑہ  سے جبکہ چار دیگر کانسٹیبل بھرتی امتحان میں ہوئی بدعنوانیوں سے جڑے ہیں۔ پی ایم ٹی سے جڑے معاملات میں امیدواروں کی جگہ منا بھائیوں کے امتحان دینے کے معاملے میں ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔

وياپم کی طرف سے منعقد پری میڈیکل ٹیسٹ (پی ایم ٹی ) 2011 کے دوران پانچ امیدواروں کی جگہ کسی اور نے امتحان دیا تھا۔ ریوا کے سول لائنس تھانے میں مقدمہ درج تھا۔ جعل سازی کے الزام میں 22 لوگوں کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا تھا۔

Loading...

پی ایم ٹی -2012 میں 10 امیدواروں کی جگہ کسی اور نے امتحان دیا تھا۔ ریوا کے سول لائنس تھانے میں مقدمہ درج تھا۔ سی بی آئی نے اس کیس میں 28 لوگوں کو ملزم بنایا ہے۔

تیسرا معاملہ کانسٹیبل بھرتی امتحان 2013 میں دو کی جگہ کسی اور نے امتحان دیا تھا۔ بھوپال کے جہانگیرآباد تھانے پولیس نے اس معاملے میں مقدمہ درج کیا تھا۔

پی ایم ٹی-2009 میں مبینہ دھوکہ دہی کے معاملے میں چھ ملزمان کے خلاف چوتھا معاملہ درج کیا گیا ہے۔ ملزمان میں سے پانچ کا داخلہ بھوپال کے میڈیکل کالج میں بھی ہوا تھا۔ دارالحکومت کے كوہ فضا تھانے میں اس معاملے سے منسلک کیس درج کیا گیا تھا۔

گوالیار کے جھانسی روڈ تھانے میں درج پی ایم ٹی -2009 جعلسازی میں بھی سی بی آئی نے ایف آئی آر درج کی۔ اس میں دو لوگوں کو ملزم بنایا گیا ہے۔

گوالیار کے ہی جھانسی روڈ تھانے میں پی ایم ٹی -2009 سے منسلک ایک معاملے میں سی بی آئی نے نئی ایف آئی آر درج کی۔ اس معاملے میں صرف ایک شخص کو ملزم بنایا گیا ہے۔

پولیس کانسٹیبل بھرتی-2012 میں ہوئے امتحان میں مبینہ دھوکہ دہی کے سلسلے میں ایک ملزم کے خلاف کیس درج کیا گیا ہے۔

آخری ایف آئی آر بھی پولیس کانسٹیبل بھرتی-2012 میں ہوئے امتحان میں مبینہ دھوکہ دہی سے منسلک ہے۔ بھنڈ کے جھانسی روڈ تھانے میں درج اس معاملے میں سی بی آئی نے دو لوگوں کو ملزم بنایا ہے۔

 

 

Loading...