راجناتھ سنگھ نے پاکستان کو دی وارننگ ، 1965 اور 71 کی غلطی دوہرائی تو کردیں گے برباد

پٹنہ میں منعقدہ ایک پروگرام میں لوگوں کو خطاب کرتے ہوئے وزیر دفاع نے کہا کہ دیکھتے ہیں کہ پاکستان کتنے دہشت گرد پیدا کرتا ہے ، جو بھی دہشت گرد ہندوستان میں آئے گا ، وہ واپس لوٹ کر پاکستان نہیں جا پائے گا ۔

Sep 22, 2019 07:12 PM IST | Updated on: Sep 22, 2019 07:12 PM IST
راجناتھ سنگھ نے پاکستان کو دی وارننگ ، 1965 اور 71 کی غلطی دوہرائی تو کردیں گے برباد

راجناتھ سنگھ نے پاکستان کو دی وارننگ ، 1965 اور 71 کی غلطی دوہرائی تو کردیں گے برباد

وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے واضح کردیا ہے کہ پاکستان سے اب بات چیت صرف پاکستان مقبوضہ کشمیر کے معاملہ پر ہی ہوگی ۔ پٹنہ میں منعقدہ ایک پروگرام میں لوگوں کو خطاب کرتے ہوئے وزیر دفاع نے کہا کہ دیکھتے ہیں کہ پاکستان کتنے دہشت گرد پیدا کرتا ہے ، جو بھی دہشت گرد ہندوستان میں آئے گا ، وہ واپس لوٹ کر پاکستان نہیں جا پائے گا ۔ راجناتھ سنگھ نے پاکستان کو وارننگ دیتے ہوئے کہا کہ 1965 اور 1971 کو دوہرانے پر پاکستان پی او کے سے تو ہاتھ دھوئے گا ہی ، اس کا حال بھی برا ہوجائے گا ۔ اگر پاکستان نے ایسا کیا تو اس کو برباد ہونے سے کوئی نہیں بچا سکتا ہے ۔

راجناتھ سنگھ نے کہا کہ ہندوستان نے پاکستان سے واضح طور پر کہا ہے کہ پہلے دہشت گردی ختم کرو ، لیکن اب بات چیت صرف پی او کے پر ہی ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان دہشت گردوں کو فریڈم فائٹر بتاتا ہے ۔

Loading...

کانگریس پر نشانہ سادھتے ہوئے راجناتھ سنگھ نے کہا کہ کانگریس نے ایوان کے اندر کیسے کیسے سوالات کئے تھے ، پانچ سال بعد جموں و کشمیر جنگ کے طور پر دنیا میں جانا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ 370 رہتے ہوئے وہاں معذوروں کیلئے بھی قانون نہیں نافذ ہوسکتا تھا ۔

راجناتھ سنگھ نے کہا کہ افسوس اس بات کا ہے کہ کانگریس آج بھی ہمارے فیصلے پر سوالات کھڑے کررہی ہے ۔ کانگریس کے ذریعہ 371 کو لے کر بھی نارتھ ایسٹ کے لوگوں کو گمراہ کرنے کی کوشش کی گئی ہے ۔ کانگریس کے لوگوں نے بی جے پی کو فرقہ پرست پارٹی کہا ، لیکن ہم نے کبھی بھی ذات اور مذہب کی سیاست نہیں کی ۔ انہوں نے کہا کہ جب بھی ملک پر کوئی بحران آیا ہے ، جن سنگھ سے لے کر آج تک بی جے پی نے اس کا مقابلہ کیا ہے ۔

راجناتھ سنگھ نے کہا کہ آرٹیکل 370 ملک کیلئے ایک ناسور تھا ، جس نے جموں و کشمیر کو لہولہان کر رکھا تھا ۔ وزیر دفاع نے کہا کہ خواب سب دیکھتے ہیں ، لیکن بند آنکھوں کے ان کے خواب پورے نہیں ہوتے ۔ بی جے پی کے لوگ آنکھ کھول کر خواب دیکھتے ہیں اور پورا بھی کرتے ہیں ۔

Loading...