உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    نیوز چینلز کی ریٹنگ پر لگی روک ہٹی ، وزارت اطلاعات و نشریات نے BARC کو دیا حکم

    ٹی وی ریٹنگ میں ہیرا پھیری کا معاملہ سامنے آنے کے بعد ٹیلی ویزن نگرانی ایجنسی براڈ کاسٹ آڈینس ریسرچ کاونسل (BARC) نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے نیوز چینلز کی ریٹنگ پر روک لگادی تھی ، تاہم اب اس روک کو ہٹادیا گیا ہے

    ٹی وی ریٹنگ میں ہیرا پھیری کا معاملہ سامنے آنے کے بعد ٹیلی ویزن نگرانی ایجنسی براڈ کاسٹ آڈینس ریسرچ کاونسل (BARC) نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے نیوز چینلز کی ریٹنگ پر روک لگادی تھی ، تاہم اب اس روک کو ہٹادیا گیا ہے

    ٹی وی ریٹنگ میں ہیرا پھیری کا معاملہ سامنے آنے کے بعد ٹیلی ویزن نگرانی ایجنسی براڈ کاسٹ آڈینس ریسرچ کاونسل (BARC) نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے نیوز چینلز کی ریٹنگ پر روک لگادی تھی ، تاہم اب اس روک کو ہٹادیا گیا ہے

    • Share this:
      نئی دہلی : ٹی وی ریٹنگ میں ہیرا پھیری کا معاملہ سامنے آنے کے بعد ٹیلی ویزن نگرانی ایجنسی براڈ کاسٹ آڈینس ریسرچ کاونسل (BARC) نے بڑا فیصلہ کرتے ہوئے نیوز چینلز کی ریٹنگ پر روک لگادی تھی ، تاہم اب اس روک کو ہٹادیا گیا ہے ۔ سرکار  نے اب پھر سے اس کو شروع کرنے کیلئے کہا ہے ۔ اطلاعات و نشریات کی وزارت نے BARC سے نیوز چینلوں کیلئے ٹی وی ریٹنگ پھر سے شروع کرنے کیلئے کہا ہے ۔

      اطلاعات و نشریات کی وزارت نے ٹیلی ویزن نگرانی ایجنسی BARC سے کہا ہے کہ وہ گزشتہ تین مہینوں کے ڈیٹا کے ساتھ ساتھ نیوز چینلوں کی ریٹنگ فوری اثر سے جاری کریں ، تاکہ صحیح اور غیرجانبدارانہ نمائندگی ہوسکے ۔ نظر ثانی شدہ طریقہ کار کے مطابق خبروں اور مخصوص انواع کی رپورٹنگ اب چار ہفتوں کے رولنگ ایوریج کانسپیٹ پر ہوگی ۔


      وزارت نے ایک بیان میں کہا کہ ٹی آر پی کمیٹی کی رپورٹ اور ٹرائی کی سفارشات کے مطابق BARC نے اپنے پروسیس ، پروٹوکول اور مانیٹرنگ سسٹم میں ترمیم کیا ہے اور گورننس اسٹریکچر میں بدلاو شروع کیا ہے ۔

      وزارت نے  کہا کہ بورڈ اور تکنیکی کمیٹی کی تشکیل نو کیلئے آزاد اراکین کو شامل کرنے کی اجازت بھی BARC کے ذریعہ شروع کی گئی ہے ۔ پرماننٹ انسپیکشن کمیٹی بھی تشکیل دے دی گئی ہے۔ ڈیٹا تک رسائی کے پروٹوکول کو بہتر اور سخت کیا گیا ہے۔

      بیان میں کہا گیا ہے کہ BARC نے اشارہ دیا ہے کہ کی گئی تبدیلیوں کے تناظر میں وہ نئی تجاویز کی وضاحت کے لئے متعلقہ حلقوں تک پہنچ رہا ہے اور نئے پروٹوکول کے مطابق حقیقت میں ریلیز شروع کرنے کیلئے تیار ہے۔ وزارت نے پرسار بھارتی کے سی ای او کی سربراہی میں ایک ورکنگ گروپ بھی قائم کیا ہے ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: