چندریان -2: لانچنگ کے لئے تیارچندریان 2، کچھ ہی دیرمیں شروع ہوگی الٹی گنتی

ہندوستان کا دوسرا چاند مشن پیردوپہرشری ہری کوٹی کے ستیش دھون اسپیس سینٹرسے لانچ ہوگا۔ آج شام سے چندریان -2 کے لانچ کی الٹی گنتی شروع ہوجائے گی۔

Jul 21, 2019 09:11 PM IST | Updated on: Jul 21, 2019 09:15 PM IST
چندریان -2: لانچنگ کے لئے تیارچندریان 2، کچھ ہی دیرمیں شروع ہوگی الٹی گنتی

اسرونےبتایا لانچنگ کےلئےتیارچندریان -2، سبھی پریشانیاں دور کی گئیں۔

ہندوستانی خلائی ریسرچ انسٹی ٹیوٹ (اسرو) نے جی ایس ایل وی مارک تین ایم ون، چندریان -2 کے لانچ وہیکل کی ریہرسل پوری کرلی ہے۔ اسرونے بتایا کہ چندریان -2 کی سبھی طرح کی تکنیکی پریشانیوں کو دور کرلیا گیا ہے۔ آج شام 06:43 بجے سے چندریان -2 کے لانچ کی الٹی گنتی شروع ہوگئی۔ ہندوستان کا دوسرا چاند مشن کل (پیر) شریہری کوٹہ کے ستیش دھون اسپیس سینٹرسے لانچ ہوگا۔ 20 گھنٹے چلنے والی الٹی گنتی کے بعد پیرکی دوپہر 02:43 بجے اس مشن کو لانچ کیا جائے گا۔ اسے جی ایس ایل وی مارک 3 ایم -1 راکٹ سے لانچ کیا جانا ہے۔

اسرو کے چیف ڈاکٹر کے سون نے بتایا کہ چندریان -2 لانچ کی سبھی تیاریاں پوری کرلی گئی ہیں۔ پہلی کوشش میں جو بھی تکنیکی خامیاں دیکھی گئی تھیں، اسے ٹھیک کرلیا گیا ہے۔ انہو نے بتایا کہ اتوارشام سے چندریان -2 کی الٹی گنتی شروع ہوجائے گی۔ چندریان -2 آنے والے دنوں میں 15 اہم مشن پرکام کرے گا۔

Loading...

چندریان -2 کا لانچ ، چندریان جنوبی قطب پرایک روور کو اتارنے کے مقصد سے کیا جائے گا۔ راکٹ میں ایک 'تکنیکی پریشانی' کے سبب 15 جولائی کی صبح اسے لانچ ہونے سے روک دیا گیا تھا۔ پریشانی تب ہوئی تھی، جب لکوڈ پروپیلنٹ کو راکٹ کے ملکی کرایوجینک اپراسٹیج انجن میں لوڈ کیا جارہا تھا۔

لانچنگ سے پہلے کیا ہوا تھا اسرو میں؟

دراصل لانچنگ سے تقریباً 56.24 منٹ پہلے اسرو نے میڈیا سینٹراوروزیٹرگیلری میں لائیو اسکریننگ روک دی۔ جس وقت لانچنگ روکی گئی، اس وقت کاونٹ ڈاون آخری مرحلہ میں تھا۔ اسرو سے منسلک ذرائع کے مطابق کچھ منٹ پہلے ہی راکٹ کے کرایوجینک انجن میں لکوڈ ہائیڈروزون بھرا گیا تھا۔ اس کی وجہ سے کرایوجینک انجن اورچندریان -2 کوجوڑنے والے لانچ وہیکل میں پریشرلیکیج ہوگیا۔ اسرو کے ذرائع نے بتایا کہ یہ لیکیج طے سرحد پر مستحکم نہیں ہورہا تھا۔ لانچ کے لئے جتنا پریشرہونا چاہئے، اتنا نہیں تھا۔ یہ پریشرمسلسل گھٹتا جارہا تھا۔ اس لئے اس اسرو کے چاند مشن چندریان -2 کی لانچنگ کوعین وقت پرملتوی کردیا۔

Chandrayaan-2-1-1

سائنسدانوں کی 11 سال کی محنت کو لگا جھٹکا

چندریان -2 کی لانچنگ عین وقت پررکنے سے اسرو سائنسدانوں کی 11 سال کی محنت کو چھوٹا سا جھٹکا لگا ہے۔ حالانکہ اسرو سائنسدانوں کے ذریعہ آخری لمحوں میں اس بڑی تکنیکی خامی کی تلاش بڑا قدم ہے۔ اگراس کمی کے ساتھ راکٹ چھوٹتا، توبڑا حادثہ ہوسکتا تھا۔ یہ سائنسدانوں کی مہارت ہے کہ انہوں نے غلطی تلاش کرلی۔

chandrayan-1-1

چندریان-1 کا سیکنڈ ایڈیشن ہے چندریان-2 

چندریان -2 حقیقت میں چندریان-1 مشن کا ہی نیا ایڈیشن ہے۔ اس میں آربرٹر، لینڈر(وکرم) اورروورو(پرگیان) شامل ہیں۔ چندریان -1 میں صرف آربٹرتھا، جو چندرما کی کلاس میں گھومتا تھا۔ چندریان -2 کے ذریعہ ہندوستان پہلی بارچاندکی سطح پرلینڈراتارے گا۔ یہ لینڈنگ چاند کے جنوبی قطب پرہوگی۔ اس کے ساتھ ہی ہندوستان چاند کے جنوبی قطب پراسپیس کرافٹ اتارنے والا پہلا ملک بن جائے گا۔

Chandrayaan-21-2-1

چندریان -2 کی خاصیت

چندریان -2 کا وزن 3.8 ٹن ہے، جو8 ہاتھیوں کے وزن کے تقریباً برابرہے۔ اس میں 13 ہندوستانی پیلوڈ میں 8 آربیٹر، تین لینڈراور2 روور ہوں گے۔ اس کے علاوہ این اے ایس اے کا ایک غیر فعال تجربہ ہوگا۔ چندریان -2  چندرما کے ایسے حصے پرپہنچے گا، جہاں آج تک کسی مہم میں نہیں جایا گیا۔ یہ مستقبل کے مشن کے لئے سافٹ لینڈنگ کا مثال بنے گا۔ بھارت چندرکے جنوبی قطب حصے پرپہنچنے جارہا ہے، جہاں پہنچنے کی کوشش آج تک کبھی کسی ملک نے نہیں کی۔ چندریان -2 کل 13 ہندوستانی سائنسداں آلات کو لے جارہا ہے۔

Loading...