چندریان -2 کی لانچنگ کا کاونٹ ڈاون شروع، چاند کے جنوبی دھروکی پہلی بارہوگی پڑتال

چندریان -2 دنیا کا پہلا ایسا یان ہوگا، جوچاند کے جنوبی قطب پراترے گا۔ چاند کا یہ حصہ سائنسدانوں کے لئے اب تک انجام بنا ہوا ہے۔

Jul 14, 2019 01:02 PM IST | Updated on: Jul 14, 2019 02:00 PM IST
چندریان -2 کی لانچنگ کا کاونٹ ڈاون شروع، چاند کے جنوبی دھروکی پہلی بارہوگی پڑتال

اسرو کا مشن چندریان -2 لانچ ہونے کے لئے تیار ہے۔

اسروکا انتہائی اہم مشن چندریان -2 لانچ ہونےکےلئے تیارہے۔15 جولائی کی رات دو بج کر51 منٹ پرشری ہری کوٹہ کے ستیش دھون کیندرسےچندریان -2 کی لانچنگ ہوگی۔ قیاس آرائی کی جارہی ہےکہ 6 ستمبرکویہ چاند کی سطح پرلینڈ کرے گا۔ یہ پہلی بارہےکہ جب ہندوستان چندرما کی سطح پرسافٹ لینڈنگ کروائے گا۔

اس سے قبل ہندوستان نے چندریان -1 کے دوران چندرما پرمون امپیکٹ پروب (ایم آئی پی) اتارا تھا، لیکن اسےاتارنےکے لئےکنٹرول کرنےکےطریقے سے چندرما پرکریش کروایا گیا تھا۔ اس باروکرم (لینڈر) اوراس میں موجود پرگیان (6 پہیہ کا روور) چندرما کی سطح پرسافٹ لینڈنگ کروائیں گے۔

Loading...

جنوبی دھرو پرکرے گا لینڈ

چندریان -2 دنیا کا پہلا ایسا راکٹ ہوگا، جوچاند کے جنوبی دھروپراترے گا۔ چاند کا یہ حصہ سائنسدانوں کےلئےاب تک انجان بنا ہوا ہے۔ باقی حصےکے مقابلے زیادہ چھایہ ہونے کی وجہ سےاس خطے میں برف کےطورپرپانی ہونےکا امکان زیادہ ہے۔ سائنسدانوں کوامید ہےکہ اس حصے میں مستقبل میں بیس کیمپ بنائے جاسکیں گے، ایسے میں چندریان -2 کی اہمیت پوری دنیا کے لئے بڑھ جاتی ہے۔

واضح رہے کہ جنوبی قطب پرسورج کی کرنیں ترچھی پڑتی ہیں۔ چندرما پرہردن درجہ حرارت کم اورزیادہ ہوتا رہتا ہے، لیکن جنوبی قطب پردرجہ حرارت میں زیادہ تبدیلی نہیں ہوتی۔ یہی وجہ ہے کہ وہاں پانی ملنے کا امکان سب سے زیادہ ہے۔

چندریان -2 کا مقصد

چندریان -2 کا مقصد چندرما کی سطح میں موجوداشیا کا مطالعہ کرکے یہ پتہ لگانا ہے کہ اس کے چٹان اورمٹی کن اشیا سے بنی ہے۔ اس کےعلاوہ وہ وہاں موجود کھائیوں اورچوٹیوں کی ساخت کےمطالعہ کے ساتھ اس کی سطح کی کثافت اوراس میں ہونے والی تبدیلی کی بھی جانچ کرے گا۔ چندریان -2 چندرما کی سطح پرپانی، ہائی ڈراکسل کےنشان تلاش کرنےکے علاوہ چندرما کی سطح کی تھری ڈی تصویریں بھی لے گا۔

Bengaluru: ISRO personnel work on the orbiter vehicle of Chandrayaan-2, India's first moon lander and rover mission planned and developed by ISRO at ISRO Satellite Integration and test establishment (ISITE), in Bengaluru, Wednesday, June 12, 2019. (PTI Photo/Shailendra Bhojak)(PTI6_12_2019_000083B) Bengaluru: ISRO personnel work on the orbiter vehicle of Chandrayaan-2, India's first moon lander and rover mission planned and developed by ISRO at ISRO Satellite Integration and test establishment (ISITE), in Bengaluru, Wednesday, June 12, 2019. (PTI Photo/Shailendra Bhojak)(PTI6_12_2019_000083B)

اس طرح ہوگی لانچنگ

اسرو کے مطابق چندریان -2 کے لانچنگ کی ریہرسل پوری ہوچکی ہے۔ اب بس انتظاراس وقت کا ہے جب یہ اپنی یاترا کی شروعات کرے گا۔ آپ کوبتادیں کہ چندریان -2 کا وزن 3877 کلو گرام ہے اوراس کی لانچنگ چارحصوں میں ہوگی۔

پہلا: جی ایس ایل وی مارک -3، ہندوستان کا باہوبلی راکٹ پرتھوی کی کلاس تک جائے گا۔

دوسرا: آربیٹر، یہ چندرما کی کلاس میں سال بھرتک چکرلگائے گا۔ 

تیسرا: لینڈرکرتس، یہ آربیٹر سے الگ ہوکرچاند کی سطح پراتارے گا۔ 

چوتھا: روورپرگیان، یہ 6 پہیوں والا روبوٹ ہے، جو لینڈرسے باہرنکلے گا اور14 دن چاند کی سطح پرچلے گا۔

 

Loading...