உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    لڑکی کو اغوا کرکے لے گئے جنگل ، پھر کی اجتماعی آبروریزی اور ننگا کرکے پیڑ پر لٹکا دیا ، علاقہ میں سنسنی

    علامتی تصویر

    علامتی تصویر

    چھتیس گڑھ کے کوریا ضلع میں انسانیت کو شرمسار کردینے والا ایک معاملہ سامنے آیا ہے ۔ ضلع کے جھگرکھنڈ پولیس تھانہ حلقہ کے ایک گاوں میں دو نوجوانوں پر ایک لڑکی کا اغوا ، آبروریزی ، مارپیٹ اور جان سے مارنے کی کوشش کا الزام عائد کیا گیا ہے ۔

    • Share this:
      چھتیس گڑھ کے کوریا ضلع میں انسانیت کو شرمسار کردینے والا ایک معاملہ سامنے آیا ہے ۔ ضلع کے جھگرکھنڈ پولیس تھانہ حلقہ کے ایک گاوں میں دو نوجوانوں پر ایک لڑکی کا اغوا ، آبروریزی ، مارپیٹ اور جان سے مارنے کی کوشش کا الزام عائد کیا گیا ہے ۔ درج شکایت کے مطابق ملزمین نے لڑکی کو اس کے گھر سے اغوا کیا اور پھر جنگل میں لے گئے ۔ جنگل میں ملزمین نے لڑکی کی اجتماعی آبروریزی کی ۔ مخالفت کرنے پر ملزمین نے لڑکی کے ساتھ مار پیٹ کی اور پھر جرم کو چھپانے کیلئے درندگی بھی کی ۔

      کوریا پولیس سے ملی معلومات کے مطابق ملزمین نے اپنی کرتوت کو چھپانے کیلئے آبروریزی کے بعد لڑکی کو ننگا کردیا ۔ اس کے بعد لڑکی کے کپڑوں کا ہی پھانسی کا پھندہ بنایا اور پھر ملزمین نے لڑکی کو پیڑ پر لٹکا دیا ۔ پھانسی کا پھندہ کمزور ہونے کی وجہ سے لڑکی نیچے گر گئی اور کسی طرح اپنی جان بچانے میں کامیاب ہوئی ۔ متاثرہ کا ضلع کے ایک کمیونٹی ہیلتھ سینٹر میں علاج کیا جارہا ہے ۔

      پولیس سے موصولہ معلومات کے مطابق کوریا ضلع کے ایک گاوں کی 19 سالہ لڑکی اپنے گھر پراکیلی تھی ۔ اسی دوران ملزمین ونود اراوں اور سورج پنکی نے اس کا گھر سے اغوا کرلیا ۔ اس کے بعد لڑکی کو جنگل لے گئے اور اس گھنونی واردات کو انجام دیا ۔ لڑکی کے کپڑے پھاڑ کر ملزمین نے اس کا پھندہ بنایا اور پھر اس پھندہ پر اس کو لٹکا کر فرار ہوگئے ۔

      کوریا ایس پی وویک شکلا نے بتایا کہ شکایت کے بعد اسپیشل ٹیم بناکر ملزمین کی تلاش کی گئی ۔ کچھ دیر بعد پولیس کی ٹیم نے دونوں ہی ملزمین کو گرفتار کرلیا ۔ فی الحال متاثرہ کا کمیونٹی ہیلتھ سینٹر میں علاج کیا جارہا ہے ۔ متاثرہ کے والد نے بتایا کہ ملزم نے دو سال پہلے بھی اس کی بیٹی کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کی تھی ، جس پر اس کو تین ماہ کی جیل بھی ہوئی تھی ۔
      First published: