உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    25 سال کی لڑکی سے Gang rape، رسی سے باندھ کر دوسری منزل سے پھینکا، بجلی کے کھمبے پر لٹکی

    25 سال کی لڑکی سے Gang rape، رسی سے باندھ کر دوسری منزل سے پھینکا

    25 سال کی لڑکی سے Gang rape، رسی سے باندھ کر دوسری منزل سے پھینکا

    ضلع ہیڈکوارٹر کے دھرمستوپا پولس چوکی سے چند قدم کے فاصلے پر 4 افراد نے دہلی کی ایک 25 سالہ لڑکی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری (Gang rape) کی۔ بعد ازاں ملزم نے نشے کی حالت میں ظلم کی حدیں پارر کرتے ہوئے اسے رسی سے باندھ کر دوسری منزل کی کھڑکی سے باہر پھینک دیا۔ غنیمت رہی کہ رسی بجلی کے کھمبے میں پھنس گئی، جس کی وجہ سے لڑکی تقریباً دو گھنٹے تک بجلی کے کھمبے سے لٹکی رہی۔

    • Share this:
      چورو: ضلع ہیڈکوارٹر کے دھرمستوپا پولس چوکی سے چند قدم کے فاصلے پر 4 افراد نے دہلی کی ایک 25 سالہ لڑکی کے ساتھ اجتماعی عصمت دری (Gang rape) کی۔ بعد ازاں ملزم نے نشے کی حالت میں ظلم کی حدیں پارر کرتے ہوئے اسے رسی سے باندھ کر دوسری منزل کی کھڑکی سے باہر پھینک دیا۔ غنیمت رہی کہ رسی بجلی کے کھمبے میں پھنس گئی، جس کی وجہ سے لڑکی تقریباً دو گھنٹے تک بجلی کے کھمبے سے لٹکی رہی۔ بعد ازاں اطلاع ملنے پر پولیس موقع پر پہنچی اور لڑکی کو نیچے اتارا۔ انہیں مقامی بھارتیہ اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے، وہاں اس کا علاج چل رہا ہے۔

      خاتون تھانہ پولیس نے اس سے متعلق چورو کے اندر پورہ باشندہ وکرم سنگھ، بھوانی سنگھ، دیویندر سنگھ اور چین پورہ کے بلّا عرف سنیل کے خلاف آئی پی سی کی سنگین دفعات میں معاملہ درج کیا ہے۔ بتایا جا رہا ہے کہ ملزم بھوانی سنگھ سرکاری اسکول میں ٹیچر ہے۔ پولیس نے متاثرہ کا میڈیکل معائنہ کرالیا ہے۔ وہ ملزمین کی تلاش کر رہی ہے۔

      آسام کی رہنے والی ہے متاثرہ

      پولیس سپرنٹنڈنٹ ممتا سارسوت نے بتایا کہ متاثرہ 25 سالہ لڑکی بنیادی طور پر آسام کی رہنے والی ہے۔ موجودہ وقت میں وہ دہلی میں رہتی ہے۔ اس کے ماں اور بھائی آسام میں رہتے ہیں۔ وہ دہلی میں چھوٹا موٹا کام کرکے گھر چلاتی ہے۔ متاثرہ نے بتایا کہ چورو باشندہ سنیل عرف راجو نے اسے کام دلانے کی یقین دہانی کراکر چورو بلایا تھا۔ اس پر وہ جمعہ کو چورو آگئی تھی۔ بس اسٹینڈ پر اسے کار سوال ایک نوجوان لینے آیا۔ اس نے بتایا کہ راجو نے اسے لینے کے لئے بھیجا ہے۔ اس پر لڑکی کار میں سوار ہوکر اس کے ساتھ چلی گئی۔ نوجوان اسے ایک کمرے میں لے گیا اور کہا کہ صبح اسے کام دلوا دیں گے۔

      باری باری سے کی آبروریزی

      متاثرہ نے بتایا کہ کمرے میں وکرم راجپوت، بھوانی، دیویندر سنگھ عرف بلّا اور سنیل راجپوت چین پورہ بڑا نے شراب پینا شروع کردیا۔ متاثرہ نے کہا کہ نوجوانوں سے کام دلانے کے لئے کہنے پر ملزم دیویندر سنگھ نے دھمکاتے ہوئے کاہ کہ تجھے کام نہیں دلائیں گے۔ اس کے بعد اس نے اس سے آبروریزی کی۔ اس کے بعد وکرم راجپوت اور دیگر نوجوانوں نے بھی اس کے ساتھ آبروریزی کی۔ آبروریزی کرنے کے بعد چاروں نوجوان آپس میں جھگڑا کرنا شروع کردیا۔

      کافی دیر تک بجلی کے کھمبے سے لٹکی رہی

      اس کے بعد ملزمین نے رسی سے اس کے ہاتھ پیر باندھ کر مکان کی دوسری منزل کی کھڑکی سے دھکا دے دیا، لیکن ہاتھ میں بندھی رسی بجلی کے کھمبے میں پھنس جانے سے وہ اسی میں لٹک گئی اور بچ گئی۔ وہ کافی دیر تک کھمبے پر اسی حالت میں لٹکی رہی۔ بعد میں کسی طرح سے اس نے پولیس کو اطلاع دی۔ اس پر پولیس وہاں پہنچی اور اسے وہاں سے نیچے اتارا۔

       
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: