உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    زانی کو عمر قید کی سزا، 16 سال کی نابالغ سے آبروریزی کرکے اسے بنادیا تھا غیر شادی شدہ ماں

    Rapist sentenced to life imprisonment in Churu: راجستھان کی چورو پوکسو کورٹ نے تقریباً پانچ سال پرانے آبروریزی (Rape) کے ایک معاملے میں زانی (ریپسٹ) کو عمر قید کی سزا سنائی ہے۔ ملزم کی اس گھناونی حرکت کے سبب نابالغ لڑکی حاملہ (Pregnant) ہوگئی تھی اور اس نے بعد میں ایک بچی کو جنم دیا تھا۔

    Rapist sentenced to life imprisonment in Churu: راجستھان کی چورو پوکسو کورٹ نے تقریباً پانچ سال پرانے آبروریزی (Rape) کے ایک معاملے میں زانی (ریپسٹ) کو عمر قید کی سزا سنائی ہے۔ ملزم کی اس گھناونی حرکت کے سبب نابالغ لڑکی حاملہ (Pregnant) ہوگئی تھی اور اس نے بعد میں ایک بچی کو جنم دیا تھا۔

    Rapist sentenced to life imprisonment in Churu: راجستھان کی چورو پوکسو کورٹ نے تقریباً پانچ سال پرانے آبروریزی (Rape) کے ایک معاملے میں زانی (ریپسٹ) کو عمر قید کی سزا سنائی ہے۔ ملزم کی اس گھناونی حرکت کے سبب نابالغ لڑکی حاملہ (Pregnant) ہوگئی تھی اور اس نے بعد میں ایک بچی کو جنم دیا تھا۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Churu, India
    • Share this:
      چورو: راجستھان کی چورو پوکسو کورٹ نے تقریباً پانچ سال پرانے آبروریزی (Rape) کے ایک معاملے میں منگل کے روز اپنا فیصلہ سنایا۔ عدالت نے 16 سال کی نابالغ لڑکی سے آبروریزی کرنے والے 50 سال کے زانی (ریپسٹ) کو عمر قید کی سزا (Life sentence) سنائی ہے۔

      آبروریزی کی اس واردات کے بعد متاثرہ حاملہ ہوگئی تھی۔ اس کے بعد اس نے ایک بچی کو جنم دیا تھا۔ عدالت نے 13 گواہوں کے بیان اور دستیاب ثبوتوں کی بنیاد پر اپنا فیصلہ سنایا۔ دل کو دہلا دینے والا یہ معاملہ چورو ضلع کے رتن گڑھ تھانہ علاقے سے جڑا ہے۔

      پوکسو کورٹ کے اسپیشل پبلک پراسیکیوٹر ورون سینی نے بتایا کہ آبروریزی کی یہ واردات سال 2017 میں رتن گڑھ تھانہ علاقے کے ایک گاوں میں پیش آیا تھا۔ واردات کے دن متاثرہ وہاں اپنے گھر پر اکیلی تھی۔ اسی دوران اس کا کھیت پڑوسی ہرلال جاٹ وہاں آیا۔ اس نے نابالغ کو اکیلا پاکر اس سے آبروریزی کی۔ ملزم نے اسے جان سے مارنے کی دھمکی بھی دی۔ اس سے متاثرہ ڈرگئی اور اس نے کسی کو کچھ نہیں بتایا۔

      متاثرہ کے پیٹ درد ہونے پر حاملہ ہونے کا پتہ چلا

      اسپیشل پبلک پراسیکیوٹر ورون سینی کے مطابق، اس کے بعد متاثرہ کے والد نے اس سے متعلق اکتوبر 2017 میں رتن گڑھ تھانے میں ملزم کے خلاف معاملہ درج کروایا تھا۔ متاثرہ کے والد نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ اس کی 16 سالہ بیٹی کے پیٹ میں درد ہونے پر اسے گاوں میں رتن گڑھ اسپتال لے جایا گیا تھا۔ وہاں ڈاکٹروں نے اس کی نابالغ بیٹی کو حاملہ بتایا اور چورو ریفر کردیا۔ یہ سن کر اہل خانہ کے پیروں تلے زمین کھسک گئی۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      راجستھان: ٹیچر نے کی 11ویں کی طالبہ کے ساتھ درندگی، نوٹ بُک لینے کے بہانےگھر بلاکرکی آبروریزی

      یہ بھی پڑھیں۔

      نابالغ بیٹی سے بار بار آبروریزی کرتا رہا والد، تھانہ بھاگ کر بولی- پاپا کرتے ہیں گندہ کام

      26 ستمبر 2017 کو متاثرہ نے بچی کو جنم دیا تھا

      اس کے بعد نابالغ نے اپنی ماں کو بتایا کہ ایک دن جب وہ اپنے گھر میں اکیلی تھی تو ان کے کھیت کا پڑوسی ہرلال جاٹ وہاں آتیا تھا۔ ہرلال نے اس کے ساتھ آبروریزی کی تھی۔ اس نے ماں کو یہ بھی بتایاکہ ملزم ہرلال جاٹ نے یہ بات کسی کو بتانے پر جان سے مارنے کی دھمکی بھی دی تھی۔ اس لئے وہ ڈرگئی اور خاموش رہی۔ اس کے بعد 26 ستمبر 2017 کو متاثرہ نے ضلع اسپتال میں ایک بچی کو جنم دیا تھا۔

      عدالت میں 13 گواہوں کے بیان درج کرائے گئے

      اس پر پولیس نے ملزم کے خلاف معاملہ درج کرکے اسے گرفتار کرلیا۔ پولیس نے بعد میں پورے معاملے کی جانچ کرکے ملزم کے خلاف عدالت میں چالان پیش کیا۔ پوکسو کورٹ میں سماعت کے دوران 13 گواہوں کے بیان درج کرائے گئے۔ عدالت نے گواہوں کے بیان اور دستیاب ثبوتوں کی بنیاد پر ہرلال کو آبروریزی کا قصوروار قرار دیا۔ عدالت نے ملزم ہرلال کو عمر قید کی سزا سنائی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: