உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا- پارٹی جہاں سے کہے گی، وہاں سے لڑوں گا 2022 اسمبلی الیکشن

    یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا- پارٹی جہاں سے کہے گی، وہاں سے لڑوں گا 2022 اسمبلی الیکشن

    یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا- پارٹی جہاں سے کہے گی، وہاں سے لڑوں گا 2022 اسمبلی الیکشن

    UP Assembly Election 2022: وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ (CM Yogi Adityanath) نے 2022 کا یوپی اسمبلی انتخابات (UP Assembly Election 2022) لڑنے سے متعلق پہلی بار کوئی بات کہی ہے۔ انہوں نے کہا ’پارٹی جہاں سے کہے گی، وہ وہاں سے اسمبلی انتخابات لڑیں گے۔ اس کے لئے پارٹی کا پارلیمانی بورڈ ہے۔ کسے کہاں سے الیکشن لڑنا ہے، اس کا فیصلہ بی جے پی پارلیمانی بورڈ میں ہی ہوتا ہے‘۔

    • Share this:
      گورکھپور: وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ (CM Yogi Adityanath) نے 2022 کے اسمبلی انتخابات (UP Assembly Election 2022) لڑنے کو لے کر پہلی بار کوئی بات کہی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ پارٹی جہاں سے کہے گی، وہ وہاں سے اسمبلی انتخابات لڑیں گے۔ اس کے لئے پارٹی کا پارلیمانی بورڈ ہے۔ کسے کہاں سے الیکشن لڑنا ہے، اس کا فیصلہ بی جے پی پارلیمانی بورڈ (BJP Parliamentary Board) میں ہی ہوتا ہے۔ وزیر اعلیٰ جمعہ کے روز دیر شام گورکھ ناتھ مندر میں میڈیا اہلکاروں کے ساتھ ملاقات میں غیر رسمی بات چیت کے دوران ایک سوال کا جواب دے رہے تھے۔ جواب کے ضمن میں انہوں نے کہا، ’میں تو ہمیشہ الیکشن لڑا ہوں‘۔ انہوں نے ساڑھے چار سال کی اپنی مدت کار میں ہوئے کئی اہم کاموں کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ ریاست میں کئی مثبت تبدیلیاں آئی ہیں۔

      یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا کہ گزشتہ اسمبلی انتخابات میں بی جے پی نے جو کچھ کہا تھا، حکومت بننے کے ان ساڑھے چار سالوں میں ہر ایک حلقے میں اسے کرکے دکھا دیا ہے۔ وزیر اعلیٰ نے کہا کہ سال 2017 میں جب ہم حکومت میں آئے تو لااینڈ آرڈر کی صورتحال سب سے بدتر تھی، لیکن آج اترپردیش کی لا اینڈ آرڈر پورے ملک میں نظیر ہے۔ ساڑھے چار سالوں میں کوئی فساد نہیں ہوا۔ دیوالی سمیت سبھی تہوار پُرامن طریقے سے منعقد ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ ایودھیا میں دیپ اتسو کا انعقاد عالمی اسٹیج پر چھا گیا ہے۔ دیوالی تو ہمارے آنے کے پہلے سے منائی جاتی رہی ہے، پریاگ راج میں کمبھ بھی پہلی بار نہیں ہوا تھا، لیکن تب یوپی کے سامنے شناخت کا بحران تھا۔

      وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ نے کہا، ایودھیا کے دیپ اتسو، پریاگ راج کے شاندار کمبھ جیسے انعقاد، بہتر لا اینڈ آرڈر، سرمایہ کاری اور روزگار کے بھر پور مواقع اور عوامی فلاحی اسکیموں اور معاشرے کے آخری مقام پر کھڑے شخص تک ان کے نفاذ سے ہم نے اترپردیش کو شناخت کے بحران سے آزادی دلائی ہے۔ آج اترپردیش کا شخص کہیں بھی جائے، اسے احترام کی نگاہ سے دیکھا جائے گا۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: