اپنا ضلع منتخب کریں۔

    فلم دی کشمیر فائلز پر تبصرہ کرنا IFFI جیوری ہیڈ کو پڑا بھاری، سپریم کورٹ کے وکیل نے کی پولیس میں شکایت

    سپریم کورٹ کی فائل فوٹو

    سپریم کورٹ کی فائل فوٹو

    گوا میں منعقد ہونے والے انٹرنیشنل فلم فیسٹول آف انڈیا کے جیوری ہیڈ نادو لاپڈ کے خلاف گوا پولیس میں شکایت درج کرائی گئی ہے ۔ اس درخواست میں کئی طرح کے الزامات لگائے گئے ہیں ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | New Delhi
    • Share this:
      نئی دہلی : گوا میں منعقد ہونے والے انٹرنیشنل فلم فیسٹول آف انڈیا کے جیوری ہیڈ نادو لاپڈ کے خلاف گوا پولیس میں شکایت درج کرائی گئی ہے ۔ اس درخواست میں کئی طرح کے الزامات لگائے گئے ہیں ۔ اس سلسلہ میں سپریم کورٹ کے ایک پریکٹسنگ ایڈووکیٹ ونیت جندل نے منگل کو ایک عرضی داخل کی ۔ انہوں نے نادو لاپڈ کے خلاف گوا پولیس میں شکایت کی ہے ۔ شکایت میں کہا گیا ہے کہ نادو نے مبینہ طور پر کشمیر میں ہندو کمیونٹی کی قربانی کو گالی دی ہے ۔

      نادو لاپڈ نے فلم دی کشمیر فائلز کو 'ولگر' اور 'پروپیگنڈہ' کہا تھا ۔ ایڈووکیٹ ونیت جندل نے نادو لاپڈ کے خلاف معاملہ درج کرنے کی مانگ کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ لاپڈ نے کشمیر فائلز فلم کو لے کر جو تبصرہ کیا ہے، اس کیلئے آئی پی سی کی دفعہ 121، 153، 153 اے اور بی ، 295، 298 اور 505 کے تحت کیس درج ہونا چاہئے ۔

      شکایت میں کہا گیا ہے کہ فلم دی کشمیر فائلز کشمیر میں ہندو قتل عام کی سچی کہانی پر مبنی ہے ۔ فلم دی کشمیر فائلز 1990 کی دہائی میں کشمیری پنڈتوں کے نقل مکانی اور قتل پر مبنی ہے ۔ شکایت میں کہا گیا ہے کہ اسلامی دہشت گردوں کے ذریعہ ہندووں کے قتل عام پر ایک سچی کہانی پر مبنی فلم کا حوالہ دے کر کشمیر میں جو ہوا اس کو 'تشہیر' اور 'فحش' بتاکر وہ کشمیر میں ہندووں کی قربانی کو گالی دے رہے ہیں ۔

      یہ بھی پڑھئے: اسمبلی انتخابات:سمبت پاترا نے کہا، کھڑگے نےPM Modiکو کہا 'راون'، گجرات کےلوگ سکھائیں گےسبق


      یہ بھی پڑھئے: نظام الدین مرکز اب مستقل طور پر کھلے گا،ہائی کورٹ نے کہا: مولانا سعد کو سونپیں چابی



      عرضی میں مزید کہا گیا ہے کہ نادو لاپڈ توہین آمیز الفاظ کا استعمال کرکے ہندو کمیونٹی کو نشانہ بنا رہے ہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: