ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

کانگریس صدرکا بی جے پی حکومت پربڑا سوال، محکمہ صحت خود بیمارہےتو پھرکیسے ہوگا علاج

مدھیہ پردیش کے سابق وزیراعلیٰ کمل ناتھ نے پریس کانفرنس میں کہا کہ مدھیہ پردیش واحد ایسی ریاست ہے، جہاں اس مشکل حالات میں بھی وزیرصحت نہیں ہے۔

  • Share this:
کانگریس صدرکا بی جے پی حکومت پربڑا سوال، محکمہ صحت خود بیمارہےتو پھرکیسے ہوگا علاج
مدھیہ پردیش کانگریس صدر کمل ناتھ نے بی جے پی حکومت پر بڑا سوال اٹھایا ہے۔

بھوپال: مدھیہ پردیش میں ایک جانب کورونا وائرس کا قہرجاری ہے تو دوسری جانب حکومت اور اپوزیشن جماعت کے بیچ ایک دوسرے پر سیاسی حملے بھی جاری ہیں۔ ایم پی میں کورونا وائرس کےلئےبی جے پی جہاں کمل ناتھ حکومت کی ناقص کارکردگی کو ذمہ دار ٹھہرا رہی ہے۔ وہیں کانگریس نےجوابی حملہ کرتے ہوئے برسر اقتدار جماعت کو آئینہ دکھایا ہے۔ مدھیہ پردیش کانگریس صدر اور سابق وزیر اعلی کمل ناتھ نے مدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے بڑھتے قہرکے بیچ آج ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ میڈیا سےخطاب کیا۔


کمل ناتھ نے شیوراج سنگھ حکومت کو تنقیدکا نشانہ بناتے ہوئےکہا کہ انہوں نے کورونا وائرس کی روم تھام کےلئےجو تدابیراختیار کی تھی، اس کو آنے والی حکومت نےتبادلہ انڈسٹری قائم کرکے نہ صرف تباہ کیا بلکہ سرکارکی ناقص کارکردگی کے سبب محکمہ صحت کے45 ملازم و افسرکورونا وائرس کی زد میں ہیں بلکہ خود ہیلتھ ڈائریکٹوریٹ کی پرنسپل سکریٹری میں کورونا وائرس پازیٹو پایا گیا ہے۔ کمل ناتھ یہیں پرخاموش نہیں ہوئےبلکہ انہوں نے یہ بھی کہاکہ مدھیہ پردیش ہندوستان کا واحد ایسا صوبہ ہے، جہاں پر وزیر اعلی تو ہے،لیکن نہ تو کوئی وزیر صحت ہے اور نہ ہی کوئی وزیر داخلہ اور بغیرکسی کابینہ کےفیصلے پرفیصلے کئےجا رہے ہیں۔


سابق وزیر اعلی کمل ناتھ نےمدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے بڑھتے قہرکے بیچ آج ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعہ میڈیا سےخطاب کیا۔
سابق وزیر اعلی کمل ناتھ نےمدھیہ پردیش میں کورونا وائرس کے بڑھتے قہرکے بیچ آج ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعہ میڈیا سےخطاب کیا۔


کمل ناتھ نےجہاں شیوراج سنگھ حکومت کو تنقید کا نشانہ بنایا۔ وہیں مرکزی حکومت کو بھی آڑے ہاتھوں لیا۔ انہوں نے ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ میڈیا سے خطاب کرتے ہوئےکہا کہ فروری میں جب راہل گاندھی نے کورونا وائرس کی وبائی بیماری کو لےکرحکومت کو بیدار کرنےکا کام کیا تھا، تب یہی لوگ انکا مذاق اڑا رہے تھے۔ اگر اس وقت مرکزی حکومت نے سنجیدہ قدم اٹھایا ہوتا تو آج ملک میں کورونا وائرس کو لےکر یہ قہر دیکھنے کو نہیں ملتا۔ مارچ میں بھی جب مدھیہ پردیش  سرکار نے اسکول، سنیما ہال اور شاپنگ مال پر پابندی لگائی تھی، تب بی جے پی اور مرکزی حکومت ہارس ٹریڈنگ کو فروغ دینے میں مصروف تھے۔ کمل ناتھ نے یہ بھی کہا کہ جب ان کی حکومت نے 16 مارچ کو بجٹ سیشن شروع کیا تھا اورکورونا وائرس کے بڑھتے خطرات کو دیکھتے ہوئے 26 مارچ تک کےلئے اسمبلی سیشن کو ملتوی کیا تھا تب بھی یہی لوگ مذاق اڑا رہے تھے اورکہتے تھےکہ کون سا کورونا۔
سابق وزیراعلیٰ کمل ناتھ  مرکزی اور صوبائی حکومت سے کورونا وائرس کی ٹیسٹنگ کٹ بڑھانےکے ساتھ کسانوں کی فصل کی خریدی کرنے کے عمل کو بھی جاری کئےجانےکا مطالبہ کیا۔ کمل ناتھ نے منریگا کےکام کو شروع کئے اور طلبا ومزدوروں کےلئےسینٹر قائم کرنےکا بھی حکومت سے مطالبہ کیا۔ کمل ناتھ پرائیویٹ میڈیکل پریکٹشنرکو بھی پی پی ای کٹ مہیاکرانے کا مطالبہ کیا تاکہ وہ محفوظ طریقے سے اپنی طبی خدمات انجام دے سکیں اور ڈاکٹرس کے ساتھ ان کے مریض بھی محفوظ رہیں۔
First published: Apr 12, 2020 07:20 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading