ہندو دہشت گرد نہیں ہو سکتا، ہندو مذہب اور ہندوتو میں بہت بڑا فرق ہے: دگ وجے سنگھ

مدھیہ پردیش کے دو بار وزیر اعلیٰ رہے دگ وجے سنگھ نے بی جے پی کے اس الزام کو مسترد کیا ہے کہ انہوں نے ’ ہندو دہشت گردی‘ کا لفظ وضع کیا تھا

Apr 22, 2019 12:08 PM IST | Updated on: Apr 22, 2019 12:08 PM IST
ہندو دہشت گرد نہیں ہو سکتا، ہندو مذہب اور ہندوتو میں بہت بڑا فرق ہے: دگ وجے سنگھ

کانگریس لیڈر دگ وجے سنگھ: فائل فوٹو

بھوپال لوک سبھا سیٹ سے انتخابی میدان میں اترے سینئر کانگریس لیڈر دگ وجے سنگھ نے کہا ہے کہ ہندو لوگ کبھی دہشت گرد نہیں ہو سکتے ہیں۔ ایک نیوز چینل کو دئیے اپنے انٹرویو میں کانگریس لیڈر نے کہا کہ دہشت گردی ہندو مذہب کی فطرت ہی نہیں ہے۔

مدھیہ پردیش کے دو بار وزیر اعلیٰ رہے دگ وجے سنگھ نے بی جے پی کے اس الزام کو مسترد کیا ہے کہ انہوں نے ’ ہندو دہشت گردی‘ کا لفظ وضع کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہندو مذہب اور ہندوتو میں بڑا فرق ہے۔

Loading...

یہ پوچھے جانے پر کہ آپ دہشت گردی پر خاموش کیوں ہیں؟ دگ وجے سنگھ نے جواب دیا کہ ’ ایسا نہیں ہے۔ مجھے لگتا ہے کہ پہلے میں زیادہ باتیں کرتا تھا۔ نرمدا پریکرما کرتے ہوئے چھ مہینے دس دن کی مدت میں میں نے خود کو بدل لیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اب میں ضرورت پڑنے پر ہی بولتا ہوں۔

 

Loading...